محمد عنایت اللہ اسد

محمد عنایت اللہ اسد

ڈاکٹر محمد عنایت اللہ اسد معروف مصنف، دانش ور اور مفکر ہیں۔

پوری ملت کی ذہن سازی

آج پوری ملت اسلامیہ جس زبوں حالی کا شکار ہے،وہ محتاج بیان نہیں ہے۔  ہر مسلمان، چاہے وہ امیرہو یاغریب، خواندہ ہو یا ناخواندہ، نہایت بے بسی کے ساتھ اس زبوں حالی کے دردناک مناظر اپنی آنکھوں سے دیکھ رہا ہے۔ اور بڑی بے بسی اورذلت ورسوائی کے ساتھ اس کے نہایت کڑوے اورزہریلے پھل چکھ رہاہے۔

مزید پڑھیں >>

فلسطین کا حق دار کون: اسرائیل یافلسطینی مسلمان؟

اسرائیل کو اچھی طرح سمجھ لینا چاہیے،  کہ آج بھی مسلم امت کی رگوں میں دوڑنے والا خون نہایت سرخ ہے، اور ایمانی حرارت سے کھول رہا ہے، وہ اسلامی مقدسات کے تحفظ کے لیے ہربازی کھیل سکتی، اور اپنی قیمتی سے قیمتی متاع کو داؤں پر لگا سکتی ہے!وہ اپنے سروں پر مسلّط ظالم وجابر اور اسلام دشمن حکم رانوں اور بادشاہوں سے بھی عاجز آچکی ہے، اور اللہ تعالی کی مدد شامل حال رہی، تو وہ وقت دور نہیں جب وہ ان سب کو اپنے پیروں سے روند کرسارے عالم کے لیے نمونۂ عبرت بنادے گی!

مزید پڑھیں >>

عذاب کسی قوم یا بستی پر کب آتا ہے؟

اور ہم نے ان سے پہلے قوم فرعون کو آزمایا، ان کے پاس ایک معزز رسول آیا۔ اس نے کہا: اللہ کے بندوں کو میرے پاس آنے دو،میں تمہارے لئے رسول امین ہوں ۔ تم اللہ سے سرکشی نہ کرو، میں تمہیں واضح نشانی دکھاتا ہوں ۔میں اپنے رب اور تمہارے رب کی پناہ چاہتا ہوں ، اس بات سے کہ تم مجھے سنگسار کرو! اور اگر تم میری بات نہیں مانتے تو مجھ سے دور رہو‘‘

مزید پڑھیں >>

کیا وہ اللہ کی زبردست نشانی نہیں تھے!

پھر کیا وہ اللہ کی زبردست نشانی نہیں تھے، کہ حکومت مصر تو انہیں امریکہ بھیجتی ہے، کہ وہاں کے تعلیمی نظام اور تعلیمی نظریات کا گہرا مطالعہ کریں پھر مصر واپس آکر انہیں مدارس اور مصری جامعات میں نافذ کریں۔ مگر وہاں پہنچ کر وہ امریکہ ہی سے متنفر ہوجاتے ہیں۔ وہاں کی معاشرت، وہاں کے ماحول، وہاں کے نظام اور وہاں کی بے کردار مشینی زندگی، غرض وہاں کی ایک ایک چیز سے سخت بیزار ہوجاتے ہیں۔

مزید پڑھیں >>

فلسطین کا حق دار کون: اسرائیل یا فلسطینی مسلمان؟

اگر یہودی آج بھی اپنی اسلام دشمنی اور مسلم دشمنی سے باز آجائیں اور فلسطین کے معزز شہریوں کی حیثیت سے فلسطین میں رہنا چاہیں ، تو مسلم قوم کووہ دوسروں سے زیادہ عالی ظرف اور فراخ دل پائیں گے۔ لیکن اگروہ مسلم امت کی غیرت وحمیت اور اس کے وقار کو چیلنج کرتے ہیں اور ظلم وبربریت سے اس کے کسی خطۂ زمین پر قبضہ کرکے اسے یہودی ریاست بنانا چاہتے ہیں ،تو مسلم امت کسی بھی حال میں یہ ذلت برداشت نہیں کرسکتی، وہ آخر دم تک اس کے لیے لڑتی رہے گی۔ اگرمسلم امت کے سروں پر مسلط کچھ حکمرانوں اور بادشاہوں کا خون سفید ہوگیا ہے،تو اس سے اسرائیل کودھوکہ نہیں کھانا چاہیے! اسرائیل کو اچھی طرح سمجھ لینا چاہیے، کہ آج بھی مسلم امت کی رگوں میں دوڑنے والا خون نہایت سرخ ہے اور ایمانی حرارت سے کھول رہا ہے، وہ اسلامی مقدسات کے تحفظ کے لیے ہربازی کھیل سکتی اور اپنی قیمتی سے قیمتی متاع کو داؤں پر لگا سکتی ہے!وہ اپنے سروں پر مسلّط ظالم وجابر اور اسلام دشمن حکم رانوں اور بادشاہوں سے بھی عاجز آچکی ہے اور اللہ تعالی کی مدد شامل حال رہی، تو وہ وقت دور نہیں جب وہ ان سب کو اپنے پیروں سے روند کرسارے عالم کے لیے نمونۂ عبرت بنادے گی!

مزید پڑھیں >>

نظامی صاحب! آپ کی حق پسندی اور بے باکی کو ہمارا سلام!

بنگلہ دیش سے آنے والی اطلاعات کے مطابق 10؍مئی 2016ء کو منگل اور بدھ کی درمیانی رات میں جناب مطیع الرحمن نظامی صاحب امیر جماعت اسلامی بنگلہ دیش کو تختۂ دار پر لٹکادیا گیا۔ جس وقت انہیں تختۂ دار پر …

مزید پڑھیں >>