الطاف حسین جنجوعہ

الطاف حسین جنجوعہ
مضمون نگار پیشہ سے صحافی اور وکیل ہیں۔

جموں میں بھی سانس لینا دشوار!

شہر جموں میں فضائی آلودگی کی سب سے بڑی وجہ سڑکوں پر دوڑنے والی لاکھوں کی تعداد میں روزانہ گاڑیاں ہیں۔ اس کے بعد جگہ جگہ پر کوڑا کرکٹ، فضلہ وغیرہ کو جلانے سے نکلنے والا دھواں ہے۔ یہی وجہ ہے کہ زیادہ دیر تک بارش نہ ہونے کی وجہ سے شہر جموں پردھند سی بکھر جاتی ہے، وہ زمین سے اٹھنے والا گرد وغبارہوتا ہے جوکہ ہوا کو آلودہ کرتاہے۔

مزید پڑھیں >>

مذکرات کار کی تقرری:  مخلصانہ پہل یا ایک بار وقت گذاری؟

آخری مرتبہ سال 2010کو کشمیر میں ایجی ٹیشن جس دوران سیکورٹی فورسز کے ہاتھوں 120شہری مارے گئے تھے ,کے بعد پیدا شدہ صورتحال سے نپٹنے کے لئے حکومت ہند نے تین رکنی مذاکراتکاروں کی تقرری عمل میں لائی جن میں دلیپ پڈگاؤنکر، ایم ایم انصاری اور پروفیسر رادھا کمار شامل تھے جنہوں نے مختلف حلقوں سے بات کر کے ایک مفصل او ر جامع رپورٹ پیش کی مگر اس پر کوئی بھی عمل نہ ہوا۔

مزید پڑھیں >>

88سالہ تاریخ میں صوبہ جموں کے مسلم طبقہ کوعدالت عالیہ میں نمائندگی نہیں ملی!

صوبہ جموں میں مسلم آبادی قریب40فیصد ہے ۔جموں وکشمیر ہائی کورٹ بار ایسو سی ایشن جموں میں 3400کے قریب وکلاء میں کم وپیش700مسلم وکلا ہیں لیکن ان میں سے کسی کو ابھی تک ہائی کورٹ کا جج بننے کا موقع نہیں ملا۔ صوبہ جموں کے 10اضلاع میں سے 5اضلاع میں 50فیصد سے زیادہ مسلم آبادی ہے جن میں راجوری، پونچھ، کشتواڑ، ڈوڈہ اور رام بن شامل ہیں ۔

مزید پڑھیں >>

جموں کے زنانہ کالج میں زیر تعلیم طلاب عدم تحفظ کا شکار

بدھ کے روز جموں میں پریڈ کالج کے علاوہ متعدد کالجوں کے طلبہ وطالبات سڑکوں پر اتر آئے اور انہوں نے کالج پرنسپل کے خلاف زوردارنعرے لگائے۔ انہوں نے کالج پرنسپل کی فوری معطلی کا مطالبہ کیا۔ کالج انتظامیہ پرطالبات کی طرف سے لگائے گئے سنگین الزامات کی سوشل میڈیا اور اخبارات میں شائع خبروں سے پیدا شدہ غیر معمولی صورتحال کے بعد حکومت نے کالج پرنسپل کو اٹیچ کر دیا۔

مزید پڑھیں >>

GST اور جموں و کشمیر کے صنعت کار

جموں وکشمیر میں اشیا و خدمات ٹیکس(GST)کے اطلاق کے لئے احتجاج، مظاہرے، دھرنے اور ہڑ تا ل کرنے والے جموں کے صنعت کار وں پر اب یہ حقیقت آشکارا ہو ئی ہے کہ ریاست میں صنعتوں کو مراعات ختم ہو نے والی ہیں جس کے بعد ان کے ہوش اڑ گئے ہیں۔

مزید پڑھیں >>

سرنکوٹ کی گمنام حسین وجمیل وادیاں!

ایڈونچرٹورازم میں دلچسپی رکھنے والے سیاحوں، ریسرچ سکالروں ،یونیورسٹی کالجوں کے طلبا اور مقامی تعلیم یافتہ نوجوانوں کو چاہئے کہ وہ سرنکوٹ کی ان گمنام وادیوں کا دورہ کر کے ان کی ویڈیوگرافی یا تصویری عکاسی کر نے کے ساتھ ساتھ اس کے بارے میں لکھیں اور سوشل میڈیا کے ذریعہ باہری دنیا کو اس بارے بتائیں ۔

مزید پڑھیں >>

جی ایس ٹی معاملہ پر جموں وکشمیردو پھاڑ!

جی ایس ٹی کو لاگو کرنے کے معاملہ پر جموں وکشمیر ریاست دو حصوں میں تقسیم نظر آرہی ہے۔ ایک طرف جہاں وادی کشمیر میں نیشنل کانفرنس،تاجر تنظیمیں ،اعلیحدگی /حریت پسند خیمہ کے ساتھ ساتھ عام آدمی اس کے حق میں نہیں تو وہیں صوبہ جموں میں کانگریس، پینتھرز پارٹی ودیگر جموں نشین سیاسی جماعتوں کے علاوہ تاجر تنظیمیں اور سول سوسائٹی جی ایس ٹی کا من وعن سے لاگو کرنے پرزور دے رہی ہیں ۔

مزید پڑھیں >>

حق حقدار کو ملے!

مدارس ومساجد کی تعمیر ، انتظام ونصرام کے نام پر جعلی رسیدات بناکر زکوٰۃ وچندہ کی رقم جمع کر نے کاگورکھ دھندہ کرنے والوں کی حوصلہ شکنی، ان کا قلع قمع کرنے اور صحیح معنوں میں ملی خدمت میں مصروف اور مدارس ومساجد میں جائز جگہ اپنا پیسہ لگائیں ۔

مزید پڑھیں >>

ماہ رمضان میں حکومت قیمتوں کو اعتدال پر رکھنے میں ناکام!

رمضان کا پہلا عشرہ گذر چکا ہے، نہ تو بجلی وپانی کی تسلی بخش فراہمی ہوسکی اور نہ ہی قیمتیں اعتدال پر ہیں ۔محض رسمی میٹنگوں کا انعقاد اور زمینی سطح پر ہدایات کی عمل آوری نہ ہونے سے حکومت کی افادیت، اہمیت اور اعتمادیت پرسوال اٹھتا ہے اور اب یہ میٹنگیں مذاق بن کر رہ گئی ہیں ۔

مزید پڑھیں >>

سرکاری اسپتالوں کے تئیں حکومتی عدم توجہی لمحہ فکریہ!

عام آدمی کے لئے اپنا علاج ومعالجہ کرانا بہت ہی مشکل ترین ثابت ہورہاہے۔نجی کاری کی وجہ ڈاکٹروں وپیرا میڈیکس کا بھی زیادہ رحجان پرائیویٹ کلینکوں کی طرف ہے کیوں کہ اس وقت ڈاکٹروں کو دکھانے میں 80 فیصد اور بھرتی ہونے کے معاملے میں 60 فیصد حصہ پرائیویٹ سیکٹر کا ہے۔ہیلتھ سروسیز خاص طور سے شہری علاقوں تک محدود ہیں ، جہاں ملک کی صرف 28 فیصد آبادی رہتی ہے۔

مزید پڑھیں >>