پروفیسر عبداللہ بھٹی

پروفیسر عبداللہ بھٹی

خانہ کعبہ اور مقامِ ابراہیمؑ

 اِس وقت میرے محبوب ﷺکا ذکر ہو رہاہے سرور کائنات ﷺ کی روح پرنور کا ذکر ہو رہاہے اُس ہستی کا ذکر جس کا انتظار ہزاروں سالوں سے ہر ذی روح کو ہے اِس وقت کا ئنات کا ذرہ ذرہ معطر اور خو شی سے جھوم رہا ہے قدرت خدا وندی ہے اُسی لمحے وہ پتھر بھی سرکار دوجہاں ﷺ  کے ذکر سے موم ہو گیا او ر حضرت ابرا ہیم ؑ کے پا ئوں کے نشان قیامت تک کے لیے پتھر میں پیوست ہو گئے

مزید پڑھیں >>

حضر ت ہاجرہؑ کی سعی

صفا اور مروہ کی سعی اللہ کے شعائر میں سے ہے، میرے سامنے ہزاروں دیوانے صفا و مروہ کے درمیان چلتے دوڑتے نظر آتے ہیں ‘سعودی حکام کے بہترین انتظا مات طا قتور ائر کنڈیشنڈ صاف و شفاف فرش پر دیوانے آب زم زم کے جام پر جام نڈ ھا رہے تھے صفا مروہ کا راستہ خو شبو ئوں سے معطر تھا.

مزید پڑھیں >>

خانہ کعبہ کے مہمان

اللہ کا گھر بیت اللہ آج بھی ہمیشہ کی طرح آباد تھا ‘حرمِ کعبہ پر لمحہ ہر پل یو نہی آباد و شاد رہتا ہے ‘عشق و محبت میں ڈوبے دیوانوں کا قافلہ بیت اللہ کے گر د دن و رات ‘دھو پ چھا ئوں ‘سرد گرم کی پروا کئے بغیر ہر وقت مسلسل حر کت کر تا نظر آتا ہے۔ ‘حج کا مو سم دنیا جہاں سے آئے دیوانوں سے حرم کعبہ بھر چکا تھا میں آج کا سارا دن حرم کعبہ میں گزارنے آیا تھا ‘دنیا جہاں ‘دوستوں ‘رشتہ داروں سے کٹ کر صرف حرم کعبہ اور میں اور کچھ بھی نہیں۔

مزید پڑھیں >>

رحمتِ دوعالم ﷺ

جیسے ہی نبی کریم ﷺ باہر تشریف لے جاتے تو بکری ہجر کی آگ میں جلنا شروع ہو جاتی۔ بکری کا سکون غارت ہو جاتا اور وہ بے قراری اور پریشانی میں مثل پروانہ شمع محبت کی تلاش میں عالم پریشانی میں گھر کے اند ر ایک کونے سے دوسرے کونے تک تیز تیز چلتی اس کی یہ بے چینی بے قراری انتظار اس وقت ختم ہو تا۔

مزید پڑھیں >>

پنجرہ

میں خدا کے نظام عدل پر حیران ہو رہا تھا کہ اُس عادل با دشاہ نے اِس کو کیسی سزا دی جیسے یہ مجبو ربے بس لڑکیوں کو دیتا تھا اِس نے دھا ڑیں مار کر رونا شرو ع کر دیا میں پنجرے کے پاس گیا اور دیکھا تو وہ بو لا مجھے خدا کے لیے با ہر نکا لو تو میں نے اُس کی آنکھوں میں گھورا اور کہا آزاد فضا ئوں میں انسا ن رہتے ہیں۔ کیونکہ تم جا نور ہو اِس لیے جانور پنجروں میں رہتے ہیں یہ کہہ کر میں گھر سے نکل آیا ۔

مزید پڑھیں >>

دولت کا نشہ

حقیقت تو یہ ہے دولت مند وہی خوش نصیب ہے جو اپنی ضروریات سے زائد دولت مخلوق خدا اور خدا کی راہ میں خر چ کر دے ایسے شخص کے لیے دولت زحمت کی بجا ئے رحمت اور سعادت بن جا تی ہے قارون اور حضرت عثمان ؓ میں یہی فرق تھا قارون گھمنڈ میں مبتلا ہو کر ذلت کی بد بو دار وادی میں دفن ہوا اور حضرت عثمان ؓ قیا مت تک لے لیے شہرت کے آسمان پر چاند بن کر چمکے ۔

مزید پڑھیں >>

فرشتے زمین پر

یہی وہ لو گ ہیں جن کہ آنکھیں کسی ضرورت مند کو دیکھ کر بھیگ جا تی ہیں جو کسی کی ضرورت پر تڑپ جا تے ہیں جو دوسروں کی ضرورت کو اپنی ضرورت پر ترجیح دیتے ہیں ایسے ہی سخاوت کے علمبردار لوگ ہو تے ہیں جو جانتے ہیں کہ سخا وت سے اللہ کے نا م پر دینے سے ان کے کاروبار نے دن دگنی رات چوگنی تر قی کی ہ

مزید پڑھیں >>

حقیقی عید کب ہو گی؟

اِسی طرح جب تک عید کا تہوار ہم غریبوں کے ساتھ مل کر نہیں منا تے عید دوسروں میں خو شی لا نے کا سبب نہیں بنتی ہما رے درمیان پیا رمحبت کے ترانے نہیں بجتے اخو ت روا داری اور پیار کے گلستان نہیں مہکتے اُس وقت تک ہم عید کی حقیقی خو شیوں سے محروم رہیں گے پتہ نہیں ہما ری قوم کو کب حقیقی عید کی خو شیاں نصیب ہو نگیں کب ہم حقیقی خو شیوں سے لبریز حقیقی عید منائیں گے ۔

مزید پڑھیں >>

شیر خدا

سیدنا علی کی ولادت رجب عام الفیل بعثت نبوی ﷺ سے دس سال پہلے جمعہ المبارک کے دن مکہ مکرمہ خانہ کعبہ کے اندر ہو ئی یہ سعادت صرف اور صرف آپ کے حصے میں آئی ۔ حضرت ابو طالب کی تنگدستی دیکھ کر حضور ﷺ نے ان کا بوجھ ہلکا کر نے کی تجویز سوچی کہ جب حضرت علی تھوڑے بڑے ہو ئے تو ان کو اپنی کفالت میں لے لیا گویا وہ 5سال سے محبوب خدا ﷺ کے دامن اقدس سے وابستہ ہو گئے اور آغوش ِ نبوت میں پر ورش اور تربیت پائی ۔

مزید پڑھیں >>

فتح مکہ!

تطہیرِ کعبہ کے فورا بعد حضور اقدس ﷺ نے حضرت بلال کو کعبہ کی چھت پر چڑھ کر آذان دینے کا حکم دیا اور پھر مکہ کے گلی کوچے اور گھاٹیاں سر مدی نور میں نہائی ہو ئی گونج سے چھلکنے لگے ۔ حضرت بلال نے اذان دی پھر رحمتِ دو جہاں ﷺ کی امامت میں مسلمانوں نے نماز ادا کی ۔

مزید پڑھیں >>