مودی کے ہندوتو میں سیندھ لگانے کی تیاری

کانگریس اور حمایتی پارٹیوں کو بھی ای وی ایم کے خلاف میدان میں اترناہوگا۔راہل کے جادو کی جھپّی نے مودی اور امت شاہ کے کھیل کو بگاڑدیا ہے، ابھی سے یہ کہنا صحیح نہیں ہوگا۔ مودی کے ترکش میں بہت سے تیر ہیں اور صرف جادو کی جھپّی مودی کے قلعے میں…

پرنب مکھرجی: ناگپور اور آر ایس ایس کی سیاست

آر ایس ایس یہ بھول گئی کہ ان چار بر سوں میں اس کے ہندو کارڈ نے ہندوستان کا نقشہ بد ل دیا۔ دلت، مسلمانوں اور عیسائیوں کو جس طرح ٹارگٹ کیا گیا، آزادی کے بعد ایسی مثالیں کبھی سامنے نہیں آئی تھیں ۔ کانگریس کا سیکولرخیمہ اسی لئے ناراض ہے کہ مودی…

فرقہ پرست تنظیمیں علی گڑھ میں ایک تیر سے کئی شکار کرناچاہتی ہیں

میں بس یہیں آکر خاموش ہوجاتی ہوں ۔ حکومت علی گڑھ کے طلبہ کے ساتھ جو مذاق کررہی ہے، اس کا حاصل یہ ہے کہ وہ ابر کو جوئے رواں اور کوہ گراں پر برسنے سے روک رہی ہے۔ اتحاد اور ملت کی طاقت کے ساتھ ان کے ہر قدم کو نا کام بنانا ضروری ہے۔

امیج کو نقصان یا امیج کو سہارا؟

 یہ ملک کی نئی تصویر ہے جہاں خاموشی سے مودی اور آر ایس ایس کے نظریات کے خلاف بغاوت دبے پائوں سر نکالنے لگی ہے۔ مودی کو اسی بغاوت سے خطرہ ہے،  ورنہ 2002کے گجرات فسادات کے بعد سے اب تک مودی نے اس بیڈمین کی امیج سے فائدہ ہی اٹھایا ہے۔

عورت: ذرا اسے ڈھونڈ کے لا دو

مجھے حیرت ہوتی ہے کہ سال کے 365 دنوں میں ایک دن ہم اسے تلاش کرنے کی سعی رایگان کیوں کرتے ہیں؟ دراصل اس بیکار مباش کچھ کیا کر کے ذمہ دار بھی مرد ہیں. سال کے سارے دنوں پر قبضہ کرنے کے بعد ایک دن عورت کے نام کرنے والے دراصل یہی بتانا چاہتے ہیں…

سہ ماہی ‘لوح’

پیش لفظ اور آخری چند صفحات میں انہوں نے اپنے اردو افسانے کے 115 سالہ سفر پر بے لاگ تبصرہ کیا ہے .میں مانتی ہوں کہ ہمارے نقاد گروپ اور تحریکوں کے شکار رہے ہیں .ہر نقاد نے فکشن کے نام پر صرف اپنے پیمانے گڑھے ہیں . اس لئے یہاں یہ آزادی ہے کہ…

ایک سیمینار، جس نے عورتوں کی مکمل آزادی پر مہر لگایی 

وومن امپاور منٹ کے اس عھد میں اس سیمینار کی سب سے بڑی خوبی یہ تھی کہ عورت جبر اور آنسووں سے آزاد نظر آیی .یہ نیے تیور کی عورت ہے، جو ادب میں بھی پوری دیانتداری اور مضبوطی کے ساتھ وقت سے دو دو ہاتھ کرنے کو تیار کھڑی ہے. نیی منزلوں کے حصول کے…

بول، زباں اب تک تیری ہے!

یہ تحریک بھی کمزور ہونے والی نہیں ہے— اس تحریک کا اثر تھا کہ فسطائی ذہنیت رکھنے والے ریپبلک ٹی وی کے رپورٹر کو شہلا رشید نے اپنے پروگرام سے باہر نکال دیا۔ غم وغصہ کی انقلاب بنتی یہ لہر ابھی مرکزی حکومت کو نظر نہیں آرہی ہے لیکن حقیقت یہ بھی…

آزادی کے 70 برسوں کی حقیقت

دیکھتے ہی دیکھتے ہندوستان کی آزادی کو 70 برس گزرگئے ۔ ان ستر برسوں کی سیاست کا تجزیہ کیجئے تو ایسے کئی مقام آئے جب آزادی، سیکولرزم اور جمہوریت جیسے الفاظ پر دھول کی پرتیں جمتی ہوئی محسوس ہوئیں — لیکن آندھی اور طوفان کے گزرنے کے بعد یہ…

2019 کا مشن اب بھی آسان نہیں!

یہ بی جے پی کا نیا ماڈل ہے جہاں کانگریس  اوردیگر پارٹیوں کے ترجمان زعفرانی رنگ میں رنگے ہوئے اب آر ایس ایس کے مشن کو آگے بڑھارہے ہیں۔ اس نئے نظام سے خوفزدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ ممکن ہے ایک دن بی جے پی کی یہ فراخدلی بی جے پی کو مہنگی پڑ…

بھیڑ، درندگی اور سیاست

یہ حقیقت ہے کہ ناٹ ان مائی نیم کا پیغام، آہستہ آہستہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کے دلوگوں تک پہنچنے کی کوشش کررہا ہے۔ یہی ہمارے ہندوستان کی اصل طاقت ہے۔ سماجی، معاشرتی اورتہذیبی سطح پر ہماری جڑیں اتنی پختہ اورمضبوط ہیں کہ دنیا کی کوئی بھی شر…

2019 کی تیاریاں!

2019 میں کیا ہوگا؟ یہ سوال ابھی سے سر اٹھانے لگا ہے۔ جہاں کانگریس پریشان ہے۔ وہاں علاقائی سطح کی سیاسی پارٹیوں کو بھی مستقبل کے لیے خطرہ نظر آنے لگا ہے۔ وقت کے ساتھ بی جے پی کی بڑھتی ہوئی طاقت نے ان تمام پارٹیوں کو حاشیہ پر ڈال دیا ہے۔ ان…

سیاست، مخالفت اور علاء الدین کا چراغ!

یہ نیا سیاسی تجربہ ہے۔ مسلمانوں نے کبھی سوچا بھی نہیں ہوگا کہ ستربرسوں میں آر ایس ایس اور بی جے پی سے نفرت انہیں اس قدر مہنگی پڑ سکتی ہے۔ لیکن حل بھی اسی سیاسی منظر نامہ سے نکلے گا۔ کیسے؟ اس پر جذباتی ہو کر نہیں ، منطقی اور سیاسی پہلوئوں…

موجودہ سیاسی بحران سے نکلنے کا راستہ کیا ہے؟

یوگی اونچی ذات سے بھی ہیں اور برہمنوں کی پسند بھی۔ میڈیا جس طرح یوگی کو پراجیکٹ کررہا ہے، اس سے بھی یہ صاف نظر آرنے لگا ہے کہ 2019 میں آر ایس ایس کی پسند یوگی بن سکتے ہیں ۔ یوگی متنازعہ بیانات سے الگ روزگار سے اترپردیش کو جوڑنے کی کوشش…

سیاسی پارٹیوں کا مستقبل؟

1925 سے مشن چلانے والی آر ایس ایس کو ہندو اکثریت کا ساتھ دلانے میں اکیلا سب سے بڑا کردار مودی کا رہا ہے۔ آج مودی کا نام ہی آر ایس ایس کی شناخت بن چکا ہے، اور اس شناخت سے مودی کو نکال دیں تو آر ایس ایس کا وجود ایک بار پھر کمزور پڑ جائے…

کیا اس وقت خوفناک حالات کے شکار صرف ہندوستان کے مسلمان ہیں؟

ہم مشتعل ہوکر حالات اور خراب کردیں گے۔ ہم عدلیہ پر بھروسہ کریں ۔ یہ ثابت کر دکھائی کہ ہندوستان کا مسلمان ملک کی بہتری اور مستقبل کے لیے بھی فکر مند ہے۔ مسلمان اگر چاہیں تو مصلحت، محبت اور تعلیم سے ہندوستان کا موجودہ چہرہ بدلنے میں کامیاب…

مسلمان: حاشیے سے زیرو پر!

تین چار برسوں میں یہ ملک ایک تبدیل شدہ ملک نظر آتا ہے جہاں مسلمانوں کا نام صرف مذاق اڑانے کے لیے رہ گیا ہے۔ انتخابات کے نام پر مسلمانوں کا مذاق بنایا جاسکتا ہے۔ مسلم سیاسی پارٹیوں کے نام پر مسلمانوں کی مذمت کی جاسکتی ہے۔ ذاکر نائک، شبنم…

انصاف کا پیمانہ ایک کیوں نہیں؟

جس دن ایک بے بس، لاچار اور مجبور باپ اپنے غدار بیٹے کی لاش لینے سے انکار کررہا تھا، اسی دن اجمیر دہشت گردانہ حملوں کے ملزمین اندریش کمار، سوامی اسیما نند جیسے ملزمین کو عدالت شک کا فائدہ دے کر الزامات سے بری کرنے کا فیصلہ سنا رہی تھی۔ ایسے…

عورت: ذرا اس کو ڈھونڈ کے لا دو!

میں اسے دیکھنے اور تلاش کرنے کی کوشش میں ہر بار ہار جاتی ہوں . سال میں ایک دن، 8 مارچ وہ ملتی بھی ہے تو ایسے ملتی ہے جیسے اس کا مذاق اڑایا جا رہا ہو. آدم -حو ا کی تاریخ میں اب تک اس کی کامیابیاں گنوانے کے لئے ،مرد معاشرے کے پاس کچھ ایک…

فرقہ واریت اور سیاست کا گرتا معیار

المیہ یہ ہے کہ ملک کا وزیر اعظم اب اس سیاست پر اتر آیا ہے جہاں اسے سوئے ہوئے مردوں کا بھی کوئی لحاظ نہیں ۔ اسی طرح گھروں کو روشن کرنے والی بجلی کو بھی ہمارے وزیر اعظم نے ہندو اور مسلمانوں میں تقسیم کردیا

کس کازور، کس کی ہوا؟

تازہ صورتحال یہ ہے کہ مسلم لیڈران کے فتووں کے بعد اتر پردیش کے مسلمان دو حصوں میں تقسیم نظر آتے ہیں ۔بی ایس پی اور ایس پی دونوں اب آمنے سامنے ہیں ۔بی جے پی کی اسٹریٹجی کامیاب ہوتی ہوئی نظر آتی ہے۔ اگر ایسا ہوا تو تاریخ کی کتابوں میں…

کیا  یوپی کو یہ ساتھ پسند ہے؟

یہ سچ ہے کہ اتر پردیش کی سیاست کے مرکزی دھارے میں ابھی تک اکھلیش کا قد سب سے آگے تھا. لیکن ملائم کے مخالف بیانات نے سايكل ملنے کے باوجود ٹائر کی ہوا نکال دی ہے. امید سے بھری کانگریس کو اس کا سب سے زیادہ خمياذا بھگتنا پڑ سکتا ہے. ویسے یوگی…

سب سے بڑاامتحان

اترپردیش کا انتخاب جیسے جیسے نزدیک آرہا ہے، مختلف طرح کی قیاس آرائیوں کا بازار گرم ہو گیا ہے۔ موجودہ سیاسی فضاکو دیکھتے ہوئے ایسا لگتا ہے، جیسے کچھ سیاسی پارٹیوں نے یہ سوچ رکھا ہے کہ مسلمان جائین گے کہاں ؟ لوٹ کر ان کے پاس ہی آئیں گے۔…

سیاسی مہابھارت کا نیا صفحہ

ہندوستان کے موجودہ سیاسی نظام کی بنیاد جھوٹ پر ہے جس نے عوام کو گمراہ کیا ہے ہندوستانی سیاست میں سبز باغ پہلے بھی دکھائے جاتے رہے ہیں اور ایسا نہیں ہے کہ عام آدمی سبز باغ اور وعدوں کی سیاست سے واقف نہیں ہے مگر اب صورتحال مختلف ہو چکی ہے۔…

یہ ہندوستانی عوام کو کیا ہوگیاہے؟

تبسم فاطمہ       ہم اس بات سے انجان ہیں کہ ایک بڑی دنیا اس وقت ہماری طرف دیکھ رہی ہےنوٹ بندی کے خلاف ناراضگی صرف ہندوستان میں نہیں ہے۔ ابھی حال میں نوٹ بندی کو لے کر روسی صدر پتین کو بھی غصہ آگیا اور دھمکی دے ڈالی کہ وہ اس…

مسلمانوں کا آپسی اتحاد کسی بھی پیشین گوئی پر بھاری پڑسکتاہے

اترپردیش کا تاجتبسم فاطمہیہ سوال اہم ہے کہ موجودہ فضا کو دیکھتے ہوئے اترپردیش کے مسلمان کس کے ساتھ جائیں گے کانگریس ،ایس پی،بی ایس پی،تینوں آپشن مسلمانوں کے لئے کھلے ہیں۔ دراصل یہی سیاسی کنفیوژن ہے، جو بی جے پی کی جیت کے…