محمد وسیم احمد

محمد وسیم احمد

8 سالہ پاکسانی لڑکی زینب کے ساتھ بربریت

زینب کے ساتھ ہوئی زیادتی اور قتل پر میں پوچھنا چاہتا ہوں انسانیت کے ان ٹهیکیداروں سے جو پانی کے باہر نکلی ہوئی مچھلیوں پر بھی تڑپ اٹھتے ہیں، ان پر آنسو بہاتے ہیں، مگر زینب کے معاملے میں ان کی آنکھیں نم کیوں نہیں ہوئیں ؟ کیا حقوقِ انسانی کی تنظیمیں مردہ ہو چکی ہیں ؟ کیا اقوامِ متحدہ میں بیٹھے ہوئے انسان سوروں اور کتوں کے حقوق کے لئے قانون سازی میں مصروف ہیں ؟

مزید پڑھیں >>

ایرانی حکومت کے خلاف عوامی احتجاج

فارسی میں ایک کہاوت ہے 'چاہ کن را چاہ درپیش'، یعنی کواں کهودنے والے کے سامنے کواں ہے، یہی حالت ایران کی ہے، جو اپنے مسائل سے نظریں چرا کر دوسرے مسلم ملکوں میں دہشت گردی کو فروغ دیتا رہا ہے، اب اسے خود اس کی عوام سے مخالفت کا سامنا ہے، آج غربت، مہنگائی، کرپشن کے خلاف ایرانی عوام  لاکھوں کی تعداد میں سڑکوں پر سراپا احتجاج ہے۔

مزید پڑھیں >>

 سال 2018ء اور مسلمان!

نئے سال کی آمد پر ہم یہ عہد کرتے ہیں کہ ہم اپنی ساری طاقت و قوت عالمِ اسلام کے دفاع کے لئے اکٹھا کریں گے، اب آئندہ کی زندگی میں ہم عالمِ اسلام کی بھلائی کے لئے ہر قدم اٹھائیں گے- اور ہندوستان میں موجود مسلمانوں سے جھوٹی ہمدردی کا دعویٰ کرنے والی منافق سیاسی پارٹیوں، جھوٹے مفاد پرست مسلم رہنماؤں اور فرقہ پرست طاقتوں کو بهی منہ توڑ جواب دیں گے....ان شاء اللہ

مزید پڑھیں >>

معذور فلسطینی ابراہیم ابو ثریا کی شہادت

ابراہیم مسجدِ اقصٰی کی حفاظت اور اسرائیل کے ظلم کے خلاف لڑتے ہوئے جام شہادت نوش کر گئے، آپ کو یہ تو پتہ تھا کہ اسرائیل پانچویں بڑی فوجی طاقت ہے، مگر تم نے معذوری کے بعد بهی مسجدِ اقصٰی سے محبت کی لازوال مثال پیش کر گئے، ہم تو لاکھوں کے مالک ہیں، طاقت و قوت رکھتے ہیں، گھروں میں بڑی بڑی تعلیمی ڈگریاں ہیں، مگر ہم آپ کے ساتھ شامل نہیں ہو سکے آپ کے لئے کچھ نہیں کر سکے، آپ دونوں پیروں سے معذور ہو کر بهی جام شہادت نوش کر گئے، اخبار میں آپ کی شہادت کی خبر پڑھ کر ہم غم زدہ ہو گئے-

مزید پڑھیں >>

انٹرپول نے ڈاکٹر ذاکر نائک کو امن پسند تسلیم کیا

ڈاکٹر ذاکر نائک کو انٹرپول کے ذریعے سے کلین چٹ دےء جانے سے مسلمانوں میں خوشی کا ماحول ہے۔ اس خوشی کے موقع پر ہم اپنے فیس بُک قارئینِ کرام کا شکریہ ادا کرتے ہیں کہ انهوں نے ہمیشہ ڈاکٹر ذاکر نائک سے دلی محبت کا اظہار کیا اور ان کے لئے برابر دعائیں کرتے رہے۔ آج اللہ تعالیٰ نے ہم سب کی دعائیں قبول فرمائیں ، دشمنوں کی سازشوں کو شکست ہوئی۔ قرآن پاک کے سورہء آل عمران آیت نمبر 54 میں ہے کہ کفار و مشرکین تدبیریں کرتے ہیں مگر اللہ تعالیٰ بہترین تدبیر کرنے والا ہے-

مزید پڑھیں >>

مسجدِ اقصٰی امریکہ کی جاگیر نہیں!

افسوس ہے کہ مسجدِ اقصٰی عرصہء دراز سے یہودیوں کے قبضے میں ہے، یہودی مسجدِ اقصٰی کی حرمت کی پامالی کرتے رہتے ہیں ۔ مسلمانوں کو کبهی اس میں نماز پڑھنے کا موقع میسر آ جاتا ہے تو کبهی ان کے لئے مسجد کے دروازے بند کر دےء جاتے ہیں۔ اسی سال رمضان میں یہودی فوجیوں نے مسجدِ اقصٰی میں گھس کر معتکفین اور نمازیوں کو زخمی کیا۔ مسجد کو نقصان پہونچایا، مگر ان کے ظالمانہ رویے کے خلاف فلسطینی مسلمان بے پناہ قربانیاں پیش کر رہے ہیں -

مزید پڑھیں >>

ہندوستانی مسلمانوں سے مخاطب ہوں!

میں ڈاکٹر ذاکر نائک اپنی قوم کے نوجوانوں سے مخاطب ہوں، اے میری قوم کے نوجوانوں ! مجھے تم سے بہت امیدیں ہیں، تمہیں ہر مشکل وقت میں قوم کی رہنمائی کا فریضہ انجام دینا ہے، تمہیں ہی ظلم کے خلاف اٹھ کھڑے ہو کر مقابلہ کرنا ہے، آنے والے وقتوں میں تم ہی اسلام کے سپاہی بن کر باطل کا مقابلہ کرو گے...ان شاء اللہ

مزید پڑھیں >>

اسلام: اکیسویں صدی اور ڈاکٹر ذاکر نائک

25 کروڑ ہندوستانی مسلمان اور خاص کر معزز دینی شخصیات ڈاکٹر ذاکر نائک کو جمہوریت، حکومت اور سیاسی پارٹیوں کے بھروسے میدان میں تنہا و اکیلا نہیں چھوڑ سکتے- اس لئے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ مسلمان اپنے مسلمان بھائی کو نہ تو تنہا چھوڑتا ہے اور نہ ہی کفار کے حوالے کرتا ہے.

مزید پڑھیں >>

محمد بن سلمان کا معتدل اسلام؟

معتدل اسلام کے نام پر جدیدیت اور مغربیت کو بڑھاوا دینے کے نتیجے میں سعودی عرب میں امن و سکون کو خطرہ لاحق ہوجائے گا اور حکومت اور عوام کے درمیان بے چینی سے عالمِ اسلام اور مسلمانوں کے درمیان نئے نئے مسائل جنم لیں گے، اس لئے محمد بن سلمان کو یہودیوں اور عیسائیوں کے ناپاک عزائم، ان کی سازشوں اور اپنے ملک کے اندرونی اور خاندانی مسائل کو سمجھ کر بہتر حل نکالنے کی کوشش کرنی ہوگی۔

مزید پڑھیں >>

ڈاکٹر ذاکر نائک اغیار کے نشانے پر

اس وقت ڈاکٹر ذاکر نائک ملیشیا میں ہیں۔ تو اخبارات نے بھی وہاں پر ان کی موجودگی کا ذمہ دار ملیشیائی حکومت کو ٹھہرا کر دہشت گردی اور شدت پسندی کا الزام لگایا ہے، جو کہ انتہائی قابلِ افسوسناک ہے، خبر کے مطابق ہندوستانی حکومت نے ڈاکٹر ذاکر نائک کے خلاف ابھی تک سرکاری طور پر تحریری صورت میں ملیشیائی حکومت کو ان کی دہشت گردی سے متعلق آگاہ نہیں کیا ہے۔

مزید پڑھیں >>