تاریخ اسلام

فتح مکہ: رحمت عالم  ﷺ کا اخلاقِ کریمانہ اور شان عفوودرگزر!

اللہ رب العزت کے لئے ہی تمام تعریف ہے جو تمام کائنات کا رب ہے۔ اس نے بنی نوع انسان کی ہدایت کے لئے انبیائے کرام کو مبعوث فرمایا کہ اللہ کی کتاب کے احکام بتائیں ۔ مقصد یہ تھا کہ اللہ کے دین کی بالادستی قائم ہو اور لوگ یہ نہ کہہ سکیں کہ انہیں پتانہیں چلا کہ اللہ کی عبادت و فرماں برداری کیسے کی جاتی ہے۔

مزید پڑھیں >>

فضائے بدر پیدا کر۔۔۔۔!

اللہ رب العزّت نے اپنی قدرتِ کاملہ کے ذریعے اپنے رب ہونے کی تائید کو ظاہر فرما کر اہلِ ایمان کے حق پر ہونے کو مدلّل فرما یا۔ سچ اور جھوٹ، حق اور باطل، صحیح اور غلط اور کھرا و کھوٹا چھانٹ کر رکھ دیا گیا۔ جنگِ بدر تاریخ کا ایسا مشہور سانحہ ہے جب کفر کی طاقت میدانِ جنگ میں توڑ ڈالی گئی اور اسلام کو بلندی عطا کی گئی۔

مزید پڑھیں >>

غزوہ بدر کے دروس!

مومن زندگی کے ہر لمحے احکامِ الہی کا پابند ہے _ مسلمان کفار کے ذریعے ستائے جاتے رہے _ وہ بسا اوقات انتقام لینا چاہتے تھے، لیکن انھیں ہاتھ روکے رکھنے کا حکم دیا گیا تو وہ اس کے پابند رہے ، لیکن جب انھیں اس کی اجازت دے دی گئی تو انھوں نے جان و مال کی قربانی پیش کرنے میں کوئی دریغ نہیں کیا _

مزید پڑھیں >>

غزوہ بدر!

بدر کے میدان میں تین سو تیرہ مجاہدین کے مقابلے پر مشرکین مکہ ایک ہزار جنگجو سپاہیوں پر مشتمل فوج کے ساتھ آئے تھے مجاہدین ِ اسلام کے پاس جذبہ جاں نثاری کے سوا کچھ نہ تھا ۔ نہ سواریا ں نہ ہتھیار یہ منظر دیکھ کر رحمتِ دو جہاں ﷺ کا دل بھر آیا رقت طاری ہو گئی اور گریہ زاری کے عالم میں رب ذولجلال کے سامنے دعا کے لیے ہاتھ اٹھا دیے اے میرے رب تو نے مجھ سے وعدہ کیا اے اللہ اپنا وعدہ پورا کر پھر آپ ﷺ اللہ تعالی کے سامنے سجدہ ریز ہو گئے اور گلو گیر آوار میں فریاد کرنے لگے ۔

مزید پڑھیں >>

فضائے بدر پیدا کر!

آج اگر دشمن طاقت اور اسباب ووسائل سے لیس نظر آرہا ہے تو ہمیں گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے اگر ہم دین کے کامل پیرو کار اور تعلیماتِ نبوی کے اطاعت گزار رہیں گے تو ان شاء اللہ ان کی ساری طاقت وقوت کچھ نہیں بگاڑسکے گی۔اس کے لئے ہمیں عملی اقدامات بھی کرنا ہوگا۔اپنے ظاہر وباطن ،روح اور جسم کو اسلامی تعلیمات سے آراستہ کرنا ہوگا۔

مزید پڑھیں >>

معرکۂ وجود میں بدر و حنین بھی ہے عشق!

غزوۂ بدر کوقرآنِ مجید میں ’’یوم الفرقان‘‘ (یعنی حق و باطل کے درمیان فرق کرنے والے دن) کے نام سے تعبیر کیاگیا، یعنی یہ وہ دن ہے جب حق وباطل، خیروشر اور کفر و اسلام کے درمیان فرق آشکار ہوگیا اور اقوامِ عالم کو بھی پتہ چل گیا کہ حق کاعلم بردار کون ہے؟ اور باطل کا نقیب کون ہے۔

مزید پڑھیں >>

جنگ بدر: حق و باطل کا پہلا تاریخ ساز معرکہ!

اسلام کی جنگوں میں جنگ بدر سب سے پہلی اور کفر و شرک میں امتیاز پیدا کرنے والی جنگ ہے۔ اس لئے کہ اسلام کی عزت و شوکت کی ابتدا اور کفروشرک کی ذلت و رسوائی کی ابتدا اسی غزوہ سے ہوئی۔اسی لئے اس میں شریک ہونے والے صحابہ کرام کی قرآن و حدیث میں بڑی فضیلت آئی ہے۔ صحابہ کرام کا ایمان بالیقین کی منزل سے آگے تھا۔ اللہ و رسول کے فرمان پر ایمان اتنا راسخ تھا جس کی مثال آج تک دنیا میں نہیں ملی نہ آنے والے صبح قیامت تک ملے گی۔

مزید پڑھیں >>

غزوۂ بدر!

آج بھی یہی صورت حال ہے۔ باطل پرست کسی بھی شئے یا واقعہ سے سبق لینے سے قاصر ہوتے ہیں ۔ شیخ سعدی علیہ الرحمہ فرماتے ہیں کہ عقلمند کھیل کھیل کی باتوں سے بھی کچھ سیکھ لیتے ہیں جبکہ بیوقوف عقل کی باتوں کو بھی کھیل سمجھتے ہیں ۔ بے عقلوں اور بے وقوفوں کا حال ہمیشہ دنیا میں اسی طرح رہا ہے۔

مزید پڑھیں >>

جنگ بدر میں دیدۂ بینا رکھنے والوں کے لیے بڑا سبق پوشیدہ ہے!

اللہ کی غالب طاقت سے غافل ہوکر جو لوگ اپنے سرو سامان اور اپنے حامیوں کی کثرت پر پھولے ہوئے تھے ان کیلئے یہ واقعہ ایک تازیانہ تھا کہ اللہ کس طرح چند مفلس و قلانچ غریب الوطن مہاجروں اور مدینے کے کاشتکاروں کی ایک مٹھی بھر جماعت کے ذریعے سے قریش جیسے قبیلے کو شکست دلواسکتا ہے، جو تمام عرب کا سرتاج تھا‘‘۔

مزید پڑھیں >>

قوموں کی زندگی میں اخلاق کی اہمیت!

یہ ایک ناقابل تردید حقیقت ہے کہ اخلاقی بگاڑ آج ہماری زندگی کے ہر شعبے میں داخل ہو چکا ہے۔ معاملہ عبادات کا ہو یا معاملات کا، حقوق و فرائض ہوں یا تعلیم و تربیت، امانت، دیانت، صدق، عدل ،ایفاے عہد، فرض شناسی اور ان جیسی دیگر اعلیٰ اقدار کا ہم میں فقدان ہے۔کرپشن اور بدعنوانی ناسور کی طرح معاشرے میں پھیلی ہوئی ہے۔ ظلم و ناانصافی کا دور دورہ ہے۔

مزید پڑھیں >>