ادبنظم

بیاد شوکت کیفی: فی البدیہہ منظوم تاثرات

تاریخ وفات : 22 نومبر 2019

احمد علی برقی اعظمی

ہے یہ شوکت کیفی کی جانسوز رحلت کی خبر

فیلم اور تھیٹر کی تھیں اک شخصیت جو نامور

تھیں وہ کیفی اعظمی کی زندگی کا ایک جزو

تھے جو دنیائے ادب کا ایک چہرہ معتبر

دونوں کا دنیائے  اردو میں نمایاں ہے مقام

اپنے فکرو فن سے تھے جو مرجع اہل نظر

ان کے سینے میں دھڑکتا   تھا دلِ درد آشنا

تھیں ستم دیدہ دلوں کے دردِ دل کی چارہ گر

شہر اعظم گڈھ کا روشن کررہی تھیں نام وہ
ہے جو دنیائے  ادب کی سرزمین مفتخر

تھیں شبانہ اعظمی کی والدہ ہردلعزیز

جن کی یادوں کی بہت مقبول تھی وہ رہگذر

ہے نمایاں جس سے ان کی زندگی کا سوزو ساز

تھیں وہ برقیؔ اعظمی عہد رواں کی دیدہ ور

مزید دکھائیں

احمد علی برقی اعظمی

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ

Back to top button
Close