ادبنظم

 سیدشہاب الدین مرحوم کے سانحۂ ارتحال پر منظوم تاثرات

احمد علی برقی ؔ اعظمی

تھا جو بے لوث رہنما ممتاز
ملک و ملت کی اپنے تھا آواز

جس کو کہتے تھے سب شہاب الدین
تھی بلند اُس کے ذہن کی پرواز

ہو گیا آج وہ بھی ہم سے جُدا
عہدِ حاضر میں تھا جو مایۂ ناز

تھا جوصدرِ مشاورت برسوں
اُس کا سب قائدوں میں قد تھا دراز

قوم کی اپنی ترجمانی کی
کوششوں سے نہ اپنی آیا باز

اُس کی تحریر ہو کہ ہو تقریر
منفرد سب سے اس کا تھا انداز

ہر بُرے وقت میں قیادت کی
کی بلند اپنی ہر جگہ آواز

تھا دلِ درد آشنا اُس میں
اُس کی آواز میں تھا سوزوگُداز

اُس کا مداح کیوں نہ ہو برقیؔ
اس کے طرزِ بیاں میں تھا اعجاز

تاریخِ وفات : 4 مارچ 2017

مزید دکھائیں

احمد علی برقی اعظمی

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔

متعلقہ

Back to top button
Close