ادبغزل

شبِ قدر

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی

شبِ قدر ہر شخص کو راس آئے

رہیں سایہ گُستر یہ رحمت کے سائے

 خدایا ہمیں نیک و بد کی سمجھ دے

نیا کوئی فتنہ نہ اب سر اُٹھائے

 ہے اب اوج پر دورِ سرمایہ داری

نہ جانے نیا کون سا گُل کِھلائے

 خدایا ہمیں اُن سے محفوظ رکھنا

پُرانے شکاری نیا جال لائے

 ضرورت ہے شیرازہ بندی کی ہم کو

مزید اور یہ مُنتشر ہو نہ جائے

 عطا کر ہمیں زورِ بازوئے حیدر

ہمارا جو دشمن ہے بچ کر نہ جائے

 دعا تجھ سے ہے یہ بصد اِنکساری

رہیں مِل کے آپس میں اپنے پرائے

مزید دکھائیں

احمد علی برقی اعظمی

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔

متعلقہ

Close