ادبنظم

صدائے علی گڑھ

کہ ہم کو زخم کھا کر مسکرا دینے کی عادت ہے

ڈاکٹر ندیم ظفر جیلانی

ہمارے واسطے جتنی تمہارے دل میں نفرت ہے

ہمیں اس سے بہت زیادہ، علی گڑھ سے محبّت ہے

کرو مشقِ ستم لیکن ڈرا سکتے نہیں ہر گز

کہ ہم کو زخم کھا کر مسکرا دینے کی عادت ہے

علی گڑھ ایک گہورا ہے تہزیب و تمدّن کا

جہاں کثرت میں وحدت ہے، جہاں ہر سو اخوّت ہے

انہیں معلوم کیا،  کیسے یہاں رہتے ہیں مل جل کر

جہاں ذہنوں میں بس فرقہ پرستی کی غلاظت ہے

اسے خونِ جگر سے سینچنے والے ہیں سر سیّد

خلوصِ دل سے جن کے یہ چمن سارا عبارت ہے

چراغِ علم یہ، پاگل ہوا کیسے بجھائے گی

خدا کے ہاتھ میں جب دوستو اس کی حفاظت ہے!

علی گڑھ میں پڑھی ہوتی تو شاید مختلف ہوتی

ہمارے ملک میں اس وقت جو بھونڈی سیاست ہے

نکل آئے ہیں میرے نوجواں اس بار سڑکوں پر

نظام جبر سے سن لو، یہ اعلانِ بغاوت ہے!

مزید دکھائیں

ندیم ظفر جیلانی

ڈاکٹر ندیم ظفر جیلانی ’دانش‘ سدرہ ہاسپیٹل دوحہ میں شعبۂ حمایت الاطفال کے میڈیکل ڈائرکٹر ہیں۔ پیشہ سے کنسلٹنٹ پیڈیاٹریشین ہیں اور شروع کی تعلیم اور میڈیکل ٹریننگ علی گڑھ مسلم ہونیورسٹی کےجواہر لال نہرو میڈیکل کالج میں مکمل کرنے کےبعد برطانیہ میں تقرہباً 15 سال مختلف نمایاں اسپتالوں میں کام کرنےکیا اور حال میں دوحہ شفٹ ہوئے ہیں۔ اپنے امتیازی تعلیمی کیرئر اور پیشہ ورانہ مشغولیات کے باوصف وہ حالاتِ حاضرہ پر گہری نظر رکھتے ہیں اور سماج کے جلتے ہوئے مسائل کو اپنی شاعری کا موضوع بناتے ہیں۔

متعلقہ

Close