غزل

جس کو میں سہہ نہ سکوں ایسی سزا مت دینا

خان حسنین عاقب

جس کو میں سہہ نہ سکوں ایسی سزا مت دینا
جب بچھڑ نا ہو تو جینے کی دعا مت دینا

مضطرب دل تو مجھے قبر میں لے آیا ہے
اب وہاں چین سے سوؤں تو اُٹھا مت دینا

عشق کی آگ جو بھڑکے تو غضب کرتی ہے
خود سے جلتی ہے تو جلنے دو، ہوا مت دینا

جس کو اچھا کِیا تم نے ، تو وہ اچھا نہ ہُوا
میں جو بیمار پڑوں ، مجھ کو دوا مت دینا

جا رہا ہوں میں تمہیں چھوڑ کے دنیا والو !
بس یہ کرنا ، مجھے پیچھے سے صدا مت دینا

مزید دکھائیں

خان حسنین عاقب

خان حسنین عاقبؔ اردو ، ہندی اور انگریزی زبان و ادب کی معروف شخصیت ہیں۔ ان کی مطبوعہ کتابوں میں مجموعہ ء غزلیات ّرمِ آہوٗ ، ّخامہ سجدہ ریزٗ اور ّاقبالؔ بہ چشمِ دِل ٗ شامل ہیں۔ موصوف ترجمہ نگاری میں بھی اپنا مقام رکھتے ہیں۔ معاصر رسائل اور اخبارات میں ان کی شعری و نثری تحریریں شائع ہوتی رہتی ہیں۔

متعلقہ

Back to top button
Close