غزل

روٹھنے منانے کا سلسلہ پرانا ہے

یعنی دل لگانےکا سلسلہ پرانا ہے

سالک ادؔیب بونتی

روٹھنے منانے کا سلسلہ پرانا ہے
یعنی دل لگانےکا سلسلہ پراناہے

سوچناہراک لمحہ دل میں چاہتیں رکھنا
یہ نظرگُھمانےکا سلسلہ پراناہے

دیدکی تمنامیں رات دن بہانےسے
صرف آنےجانےکاسلسلہ پراناہے

کچھ اشارہ کردینا پھرلرزتےہونٹوں سے
گیت گنگنانےکا سلسلہ پراناہے

گفتگوادھوری سی دور سےکنایوں میں
ہاتھ پھرہلانےکا سلسلہ پراناہے

دیکھنامسلسل یوں بےسبب ادؔیب ان کو
اور مسکرانےکاسلسلہ پراناہے

مزید دکھائیں

متعلقہ

Close