غزل

رہوں سدا ترے دل کے حصار میں شامل

یہ چاہ بھی ہے دلِ داغدار میں شامل

مجاہد ہادؔی ایلولوی

رہوں سدا ترے دل کے حصار میں شامل
یہ چاہ بھی ہے دلِ داغدار میں شامل

ہمارے واسطے رب کا یہ ایک تحفہ ہے
یہ جو گھڑی ہے ترے انتظار میں شامل

امیر شہر سے کوئی کہے کہ وہ دیکھے
ہیں کتنے لوگ غمِ روزگار میں شامل

سنا ہے سینکڑوں دل پر تری حکومت ہے
مجھے بھی کرلے اسی اقتدار میں شامل

ملن کی رات بہے تھے خوشی کے جو آنسو
کروں گا ان کو بھی میں یادگار میں شامل

رکے ہوئے ہیں مری چھت پہ چاند تارے بھی
"تمام شب ہے مرے انتظار میں شامل”

سبق وفا کا پڑھاتے ہیں وہ ہمیں ہادؔی
وفا ہے جبکہ ہمارے شعار میں شامل

مزید دکھائیں

مجاہد ہادؔی ایلولوی

تخلیقِ کارِ کلامِ دل پزیر شعر و سخن کا نیا ابھرتا ستارہ جناب مجاہد ہادؔی ایلولوی صاحب کا تعلق ہندوستان کے صوبہ گجرات سے ہیں, آپ پیشے سے عالمِ دین ہیں آپ نے اپنی ابتدائی تعلیم اپنے آبائی وطن ایلول میں حاصل کی اس کے بعد مزید عربی اردو اور فارسی کی تعلیم کے حصول کے لئے اپنے علاقہ کا معروف ادارہ ( جامعہ اسلامیہ امداد العلوم وڈالی) کا رخ کیا اور وہی سے 2016 میں سند فضیلت حاصل کی اور اس کے بعد سے اب تک احمدآباد کے قریب شہر بوٹاد میں مقیم ہیں آپ کا تعلیق گجرات کے ضلع سابرکانٹھا کے ایک علمی خاندان سے ہیں آپ کے والد محترم کا اسمِ گرامی عمر ابن محمد پشوا ہیں وہ بھی پیشے سے عالمِ دین ہیں, آپ افق شعر و سخن کا ایک چمکتا ستارہ ہیں اور نئی نسل کے فعال ترین شعراء میں سے ایک ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ

Close