سہ روزہ جشنِ ریختہ 2017: منظوم تاثرات

احمد علی برقیؔ اعظمی

ریختہ کے تین دن کے جشن کا یہ اہتمام

اہلِ اردو کے لئے ہے بادۂ عشرت کا جام

ریختہ ہے گنگا جمنی ہند کی وہ ترجماں

دے رہی ہے سب کو جو مہر و محبت کا پیام

سہ لسانی ہے یہ ویب سایٹ نہایت دلنشیں

ہے دعا جاری رہے اس کا یونہی یہ فیضِ عام

کر رہی ہے اردو کی میراث کو محفوظ یہ

ہیں مشاہیرِ ادب کے اس میں معیاری کلام

وہ زباں جمہوریت کی ہے جہاں میں جو مثال

بزمِ سہ روزہ سجی ہے اس کی یہ اردو کے نام

خادمِ بے لوث ہیں اردو کے برقیؔ ایس صراف

اردو کی ترویج کا جو کررہے ہیں آج کام

⋆ احمد علی برقی اعظمی

احمد علی برقی اعظمی

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔

آپ اسے بھی پسند کر سکتے ہیں

قاضی ارشاد حسین کے سانحۂ ارتحال پر منظوم تاثرات

قاضی ارشاد سے دیرینہ مراسم تھے مرے ہوگئے آج جو اس دار فنا سے رخصت

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے