شکایت ہے مجھے ان نو جوانوں سے

0

مجاہد ہادؔی ایلولوی

شکایت ہے مجھے ان نو جوانوں سے
بہت مرعوب ہیں جو بے زبانوں سے

.

ہوس  نے کردیا  برباد انساں  کو
زمیں پر  آگیے سب  آسمانوں سے

.

حفاظت دین کی کرتے رہیں گے ہم
بھلے ہی ہاتھ ہم دھو بیٹھے  جانوں سے

.

جو دنیا میں مسافر بن کے جیتے ہیں
سدا وہ دور رہتے ہیں خزانوں سے

.

ہے وہ سب سے بڑا شیطان دنیا میں
جسے تکلیف ہوتی ہے اذانوں سے

.

کہیں دنیا میں تم دل مت لگا لینا
سبق سیکھو وفا کی داستانوں سے

.

ثریا تک پہنچ سکتے ہیں وہ ہادؔی
ارادے پختہ ہوں جن کے چٹانوں سے

تبصرے