غزل

’’وہ سہارا دے کے تیرا حوصلہ لے جائے گا،،

اشہد بلال چمن

دستگیری کرنے والا تو دعا لے جائے گا
ہاتھ پھیلانا ترا تیری حیا لے جائے گا

غیر کا بازو پکڑ کر مت کھڑے ہونا کبھی
’’وہ سہارا دے کے تیرا حوصلہ لے جائے گا،،

وقت کا دریا مسلسل بہہ رہا ہے تیز رو
سب کو اپنی موج میں اک دن بہا لے جائے گا

اپنے سینے سے لگا کر دیکھ مفلس کو کبھی
چند لمحے میں تری ساری انا لے جائے گا

وقت کے تکیے پہ کاڑھا پھول تیرے ہجر کا
آنکھ کھلتے ہی مرے سپنے چرا لے جائے گا

چاہتے ہو خلد تو پھر نیکیاں جی بھر کرو
خلد میں بس نیکیوں کا سلسلہ لے جائے گا

عشق کو سمجھا ہے تونے دل لگی ابن چمنؔ
زندگی پرلطف جینے کا مزہ لے جائے گا

مزید دکھائیں

اشہد بلال ابن چمن

نام ۔ اشہدبلال چمن ابن افضال احمد چمن. تاریخ پیدائش ۔ ۲۶نومبر۱۹۸۰ء.تعلق ۔ محلہ چمن نگر،قصبہ بلریاگنج،ضلع اعظم گڑھ.تعلیم ۔ ۲۰۰۳ء میں جامعۃ الفلاح بلریاگنج سے عالمیت سے فراغت حاصل کی. ۱۹۹۵ء سے اپنے شعری سفر کا آغاز کیا اوراپنے والد کا تخلص چمنؔ کی مناسبت سے اپنا تخلص ابنِ چمنؔ رکھا. مقیم حال ۔ ابوظبی , متحدہ عرب امارات.

متعلقہ

Close