غزل

ڈھونڈ رہے ہیں سارے لوگ

عتیق انظر

ڈھونڈ رہے ہیں سارے لوگ
کہاں  گئے   وہ   اچھے  لوگ

دریا   پر  تھے  بہرے  لوگ
چینخ کے مر گئے پیاسے لوگ

عیاروں   کی   بستی   میں
یاد آتے ہیں بھولے لوگ

بڑی بڑی باتیں کرتے ہیں

خالی    اور   نکمے    لوگ

جب بھی میں نے خواب بنا
دشمن  ہو گئے  اپنے  لوگ

میرا   قد   نیچا   کرنے   میں
لگے ہوے ہیں بونے لوگ

مزید دکھائیں

عتیق انظر

عتیق انظر ان دنوں قطر میں مقیم ہیں۔ آپ کو جذبات اور رومان کا شاعر کہا جاتا ہے۔ آپ انڈیا اردو سوسائٹی قطر کے بانیوں میں سے ہیں۔ پہچان آپ کا مجموعہ کلام ہے۔

متعلقہ

Close