نعت

ادب سے آتے ہیں شمس و قمر مدینے میں

مجاہد ہادؔی ایلولوی

ادب سے  آتے  ہیں شمس و قمر  مدینے میں
قیام   فرما   ہے    ایسا    بشر   مدینے   میں

۔

بلائیں  جانے   لگیں  اپنے   اپنے  مسکن   سے
جب  آئے  مکہ  سے خیر  البشر  مدینے  میں

۔

جمال  ہی  نظر  آتا ہے  ہم  کو ہر  شئے  میں
ہے  پیارے   آقا   کا  ایسا   اثر   مدینے   میں

۔

مجاورت  میں جو   میرے  نبی  کی رہتا ہے
اسے  کسی سے   نہیں  لگتا ڈر   مدینے  میں

۔

میں  اپنے  رب  سے ہمیشہ  دعا یہ کرتا  ہوں
خدایا   ختم   ہو   میرا   سفر    مدینے   میں

۔

نہیں  ہے  حسن  کی  ایسی  مثال  دنیا  میں
حسیں ہیں جتنی وہ دیوار و در مدینے میں

۔

تو میرے حق میں خدا ایسا فیصلہ لکھ دے
تمام    عمر   ہو   میری   بسر    مدینے    میں

۔

ہر  ایک  ذرّہ   وہاں  رشک ِ  ماہ  و  اختر  ہے
ہوئے ہیں جب سے نبی جلوہ گر  مدینے میں

۔

نظر   میں  گنبدِ  خضرا   ہو   ہر   گڑی  ہادؔی
تمہاری گزرے یوں شام  و سحر مدینے میں

مزید دکھائیں

مجاہد ہادؔی ایلولوی

تخلیقِ کارِ کلامِ دل پزیر شعر و سخن کا نیا ابھرتا ستارہ جناب مجاہد ہادؔی ایلولوی صاحب کا تعلق ہندوستان کے صوبہ گجرات سے ہیں, آپ پیشے سے عالمِ دین ہیں آپ نے اپنی ابتدائی تعلیم اپنے آبائی وطن ایلول میں حاصل کی اس کے بعد مزید عربی اردو اور فارسی کی تعلیم کے حصول کے لئے اپنے علاقہ کا معروف ادارہ ( جامعہ اسلامیہ امداد العلوم وڈالی) کا رخ کیا اور وہی سے 2016 میں سند فضیلت حاصل کی اور اس کے بعد سے اب تک احمدآباد کے قریب شہر بوٹاد میں مقیم ہیں آپ کا تعلیق گجرات کے ضلع سابرکانٹھا کے ایک علمی خاندان سے ہیں آپ کے والد محترم کا اسمِ گرامی عمر ابن محمد پشوا ہیں وہ بھی پیشے سے عالمِ دین ہیں, آپ افق شعر و سخن کا ایک چمکتا ستارہ ہیں اور نئی نسل کے فعال ترین شعراء میں سے ایک ہیں

متعلقہ

Close