نعت

جب جانبِ مدینہ یہ عاشق چلا کرے

مجاہد ہادی ایلولوی

جب  جانبِ  مدینہ  یہ عاشق  چلا  کرے
رستے  سمٹتے  جائیں  کچھ ایسا خدا کرے

۔

خواہش ہے میرے دل کی خدایا  بس اتنی سی
نظروں  میں  عاشقوں کی وہ  روضہ  رہا  کرے

۔

ہو  جب بھی نعت  لکھنے کا دل سے ارادہ  تو
حرکت نہ دوں قلم  کو وہ پھر بھی لکھا کرے

۔

ہو  جسکی  آرزو  کہ  ہو عاشق  رسول  کا
اصحاب   مصطفی  کی  ڈگر پر  چلا  کرے

۔

وہ کتنا  خوش نصیب ہے جسکی زبان  سے
نعت    رسول   پاک   ہی  جاری   ہوا  کرے

۔

تلوہ   رسول   پاک   کا گر   چاند   چوم  لے
دنیا میں سب سے بڑھ کے وہ روشن ہوا کرے

۔

آنکھوں  کو بند کرتے  ہی طیبہ  دکھائی  دے
آقا     کی    بار    بار    زیارت      ہوا    کرے

۔

ہے   التجا   صبا سے مجاہؔد  کی  اتنی  سی
میرا    درود    آقا   کو   پہنچا   دیا   کرے

مزید دکھائیں

مجاہد ہادؔی ایلولوی

تخلیقِ کارِ کلامِ دل پزیر شعر و سخن کا نیا ابھرتا ستارہ جناب مجاہد ہادؔی ایلولوی صاحب کا تعلق ہندوستان کے صوبہ گجرات سے ہیں, آپ پیشے سے عالمِ دین ہیں آپ نے اپنی ابتدائی تعلیم اپنے آبائی وطن ایلول میں حاصل کی اس کے بعد مزید عربی اردو اور فارسی کی تعلیم کے حصول کے لئے اپنے علاقہ کا معروف ادارہ ( جامعہ اسلامیہ امداد العلوم وڈالی) کا رخ کیا اور وہی سے 2016 میں سند فضیلت حاصل کی اور اس کے بعد سے اب تک احمدآباد کے قریب شہر بوٹاد میں مقیم ہیں آپ کا تعلیق گجرات کے ضلع سابرکانٹھا کے ایک علمی خاندان سے ہیں آپ کے والد محترم کا اسمِ گرامی عمر ابن محمد پشوا ہیں وہ بھی پیشے سے عالمِ دین ہیں, آپ افق شعر و سخن کا ایک چمکتا ستارہ ہیں اور نئی نسل کے فعال ترین شعراء میں سے ایک ہیں

متعلقہ

Close