جشنِ معراج النبی

احمد علی برقی اعظمی

اللہ کا ہے فضل و کرم سرورِ دیں ﷺ پر

نازل ہوئیں قرآن کی آیات اُنہیں پر

معراج کی شب کتنی حسیں تھی یہ ملاقات

’’ محبوب و مُحِب دونوں ملے عرشِ بریں پر ‘‘

جو اوجِ شرف رحمت عالم کو ہے حاصل

کونین میں ایسا نہیں کوئی بھی کہیں پر

شَل ہوگئی اُن کے پرِ پَرواز کی قوت

تھی تنگ فضا عرش کی جبریلِ امیں پر

حاصل نہ ہو فیضان جسے اُن کے کرم کا

ذی روح نہیں ایسا کوئی فرشِ زمیں پر

دشنام بھی سن کر تھی دعا اُن کے لبوں پر

آئی نہ شکن سرورِ عالم کی جبیں پر

مانے کہ نہ مانے  کوئی برقیؔ ہے تصدق

سیٹ لایٹ و سائنس کی ایجاد اُنہیں پر



⋆ احمد علی برقی اعظمی

احمد علی برقی اعظمی
ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔