نعت

مرے لب پہ صلِّ علی ٰرہے مرے دل میں عشقِ رسولؐ ہو

نذرانۂِ عقیدت بحضور سرورِ کائنات ﷺ

سعید سعدی

مرے لب پہ صلِّ علی ٰ رہے مرے دل میں عشقِ رسولؐ ہو

یہی ہو وظیفۂِ روز و شب یہی زندگی کا اصول ہو

میں پڑھوں درود و سلام اور پھر اٹھاؤں ہاتھ دعا کو جب

ملے نام انﷺ کا دعا ؤں میں تو مری دعا بھی قبول ہو

کبھی حاضری کا جو اذن ہو مجھے ان ﷺکے روضۂِپاک پر

جو وہاں ہو پیشِ نظر مرے وہ بس اک نظر کا حصول ہو

میں گدائے رحمتِ دو جہاں ﷺمیں غبارِ راہِ حضور ﷺ ہوں

وہ ﷺجو ملتفت ہوں مری طرف مرا دل کبھی نہ ملول ہو

مرے رب مری ہے یہ التجا درِمصطفیٰﷺسے جڑا رہوں

مری ذات میرےعیال پر تری رحمتوں کا نزول ہو

مزید دکھائیں

سعید سعدی

بقول نصیرؔ ترابی"لب و لہجہ کی سب سے بڑی خوبصورتی اس کی صداقت ہے، یعنی کسی بھی جذبہ خواہ وہ ارفع ہو یانچلی سطح کا، اس طرح ظاہر کرنا کہ حقیقت آشکارا ہوجائے اور سامع ایسا محسوس کرے کہ گویا اس شاعر نے اس کے دل کی باتیں کرید کرید کرخوبصورت انداز میں طشتری میں رکھ دیں ہیں ، یعنی اس کے دل کی بات کہہ دی ہے." سعید سعدی ایسے ہی سچے جذبوں کے ابھرتے ہوئے شاعر ہیں۔ 1975 میں شاعر محبت و عظیم صوفی بزرگ حضرت شاہ عبد اللطیف بھٹائی کی دھرتی سندھ کے علاقہ سکھر میں پیدا ہوے ۔دریائے سندھ کے مغربی کنارے پر واقع سکھر عربی زبان کے لفظ سقر سے نکلا ہے جس کا مطلب سخت یا شدید کے ہیں۔ سکھر کو درياءَ ڈنو یا دریا کا تحفہ بھی کہا جاتا ہے۔ دریائے سندھ سے دو دریا یعنی بحرین کی ہجرت کی برکت سے بزرگ استاد شاعر سعید قیس سے ملاقات ہوئی اور آپ کی محبت اور شفقت سے شعری ذوق پروان چڑھا. بحرین میں ہی معظم سعید جیسے شاعر کی صحبت میسر آئی جنہوں نے ان کی علمی اور ادبی صلاحیتوں کو جلا بخشی۔ سید سعدی کے فن پر تو اساتذہِ نقد و نظر ہی روشنی ڈالیں گے، لیکن ایسا محسوس ہوتا ہے کہ شاعری سعدی کے لیے شوق ہے، نہ وقت گزاری کا ذریعہ، بلکہ یہ ان کے لیے اس مراقبے سے کشف کا اظہار ہے جو انہوں نے سکھر سے بہاولپور ،رحیم یار خان سے بحرین کی ہجرت میں کیا . سعید سعدی نے خواجہ فرید کالج رحیم یار خان سے گریجوایشن اور الخیر یونیورسٹی اسلام آباد کیمپس سے کمپیوٹر سائنس میں ماسٹرز کیا ۔ ادارۂ فروغِ قومی زبان (مقتدرہ قومی زبان) کی Urdu Computerization and Standardization of Urdu Unicode کمیٹی کے رکن رہے ۔ شاعری کا آغاز کالج کے زمانے میں آزاد نظم سے کیا اور کالج کی بزم ادب کے جنرل سیکریٹری رہے .٢٠٠١ سے بحرین میں مقیم ہیں.اور خوب شاعری کر رہے ہیں. خرم عباسی ) 2019 بحرین(

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ

Back to top button
Close