ادب

دوسو سالہ جشن  یومِ سر سیّد 2017ء

 ہندستان میں تعلیم کے مسیحا اور اردو نثر کے باوا آدم جیسے محترم ناموں سے مشہور سر سیدّ احمد خاں کی پیدائش کے دو سو برس پورے ہونے کے موقعے پراے۔ ایم۔ یو۔ الیومنائی ایسوسی ایشن، قطر کے ذریعے انھیں یاد کیا گیا۔ اس موقعے پر سلوا بنیکٹ ہال، شیریٹن ہوٹل میں 26 /اکتوبر 2017ء کو ایک بہترین ادبی پروگرام کا انعقاد کیا گیا۔ سر سیدّ احمد خاں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے بانی ہی نہیں بلکہ ہندوستان میں   نئی تعلیم کی روشنی پھیلانے والے افراد کے رہ نما ہیں ۔ آج کی یہ تقریب ثقا فتی اور ادبی رنگ لئیے ہوئے ایک کامیاب تقریب تھی جس میں 400 کے قریب مہمانوں نے شرکت کی۔

مزید پڑھیں >>

ایک روزہ قومی سمینار بعنوان ’اردو زبان اور جدید ٹکنالوجی مسائل اور امکانات‘

آج اردوٹکنالوجی سے جڑ رہی ہے لیکن اس ٹکنالوجی کو اساتذہ اور طلبا فروغ اردو اور فروغ تعلیم کے لئے استعمال کریں ۔ مہمانوں کو تہنیت پیش کی گئی، سمینار کے سوانئیرکا رسم اجراء مہمان خصوصی پروفیسریو اومیش رجسٹرارمہاتمہ گاندھی یونیورسٹی نلگنڈہ کے ہاتھوں عمل میں آیا۔اختتامی اجلاس میں مہمانوں کے ہاتھوں شرکاء میں اسنادات کی تقسیم عمل میں آئی۔ عروج افشاں جبین اسسٹنٹ پروفیسر معاشیات کے کا شکریہ پر سمینار کا اختتام عمل میں آیا۔اس سمینار میں ریاست تلنگانہ کے مختلف ا ساتذہ و ریسرچ اسکالرز موجود تھے۔

مزید پڑھیں >>

دیار شہر

آج کی شام دیار شہر کے نام اور میںگلستان خسرو سے دیارمیر تک لیتے بلبل بنگال کے نامتجھے ڈھونڈھا اور ڈھونڈھتا رہا اس زندگی کے میلے میں

مزید پڑھیں >>

غزل کا نسوانی رباب

 فوزیہ رباب کا اسلوب کلاسیکی بھی ہے اور جدید بھی۔ کبھی کبھی ان کی آواز گیتوں سے قریب ہوجاتی ہے۔ ان کی غزلوں میں تلازموں اور علامتوں کی موٹی پرتیں تو نہیں لیکن الفاظ کو شعری قالب میں ڈھالنے کا سلیقہ ضرور ہے۔چند مخصوص الفاظ جیسے کہ شہزادہ، سانولا، پاگل، گوزہ گر، پیا، سنگھار اور مکھ وغیرہ ان کے اسلوب کی انفرادیت کا اشاریہ ہیں ۔ انہوں نے اکثر غزلیں لمبی اور مسلسل کہی ہیں ، لیکن لفظ و معنی کا ایسا جادو جگایا ہے کہ اس کی سحر انگیزی سے قاری کا بچ نکلنا مشکل ہے۔

مزید پڑھیں >>

علمی مجلس کے زیر اہتمام طارق متین کے اعزاز میں شعری نشست

علمی مجلس، پٹنہ کے زیر اہتمام گزشتہ شام معروف شاعر طارق متین کے اعزاز میں ایک شعری نشست کا انعقاد کیا گیا۔ نشست کی صدارت بزرگ شاعر قیصر صدیقی نے فرمائی جبکہ نظامت کا فریضہ اثر فریدی نے اپنے مخصوص انداز میں انجام دیا۔ مہمانان خصوصی کی حیثیت سے مہمان شاعر طارق متین کے علاوہ معروف افسانہ نگار فخر الدین عارفی اور مغربی بنگال سے تشریف لائے ہوئے افسانہ نگار عشرت بیتاب شریک ہوئے۔

مزید پڑھیں >>

محفل مشاعرہ میں معتبر شعراء نے پیش کیا کلام 

اردو میں شاعرات کی تعداد گرچہ کم ہے تاہم یہ خوشی کی بات ہے کہ ایک ایسےعہد میں جب کہ اردو کی معدومیت کا شکوہ کیا جاتا ہے مرد شاعروں کے علاوہ خواتین بھی اردو شاعری میں جگہ  بنا رہی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار اردو کی شاعرہ فوزیہ رباب کے شعری مجموعہ آنکھوں کے اس پار کے رسم اجراء کے موقع پر ماہرین زبان و ادب نے کی۔

مزید پڑھیں >>