نظم

آہ الہ آباد مرحوم

آج الہ آباد کا بدلا ہے نام

احمد علی برقی اعظمی

اور کرنے کو نہیں ہے کوئی کام
آج الہ آباد کا بدلا ہے نام

کیوں نہ دکھلائیں وہ طاقت کا نشہ
ملک کی ہے جن کے ہاتھوں میں لگام

وہ مٹاتے ہیں جو تہذیبی شناخت
کیا مٹا سکتے ہیں وہ اکبر کا نام

شعر ہیں جن کے دلوں پر سب کے نقش
جن کا فن ہے مرجعِ ہر خاص و عام

گنگا جمنی ہند کا سنگم تھا جو
اس سے ہے کس بات کا یہ انتقام

یہ مشاہیر ادب کی سرزمیں
بخشتی ہے بادۂ عشرت کا جام

ہند کی تاریخ میں جو ثبت ہیں
کیا مٹا سکتے ہیں وہ نقشِ دوام

چار سو سالہ ثقافت کا یونہی
چند لمحوں میں ہوا ہے قتلِ عام

ہے تقدس اس کا ہم سب کو عزیز
کرتے ہیں پریاگ کا ہم احترام

کیا قباحت تھی الہ آباد میں
کیا ضروری تھا بدلنا اس کا نام

مزید دکھائیں

احمد علی برقی اعظمی

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ

Close