غزلنظم

آ گھر مرے یا مجھ کو بُلا عید کا دن ہے

جو مجھ کو مِلا تجھ سے مِلا عید کا دن ہے

احمد علی برقی اعظمی

آگھر مرے یا مجھ کو بُلا عید کا دن ہے

جو مجھ کو مِلا تجھ سے مِلا عید کا دن ہے

جو زلفِ معطر میں چھپا رکھی ہے اپنی

’’ خوشبو مری سانسوں میں بسا عید کا دن ہے‘‘

حق جو ہے مرا تجھ پہ اسے مانگ رہا ہوں

دے میری محبت کا صلہ عید کا دن ہے

گر شیشۂ دل ٹوٹ گیا پھر نہ مِلے گا

یوں خاک میں اس کو نہ مِلا عید کا دن ہے

جس طرح سے پہلے تھے اُسی طرح رہیں گے

آمِل کے یہ کرتے ہیں دُعا عید کا دن ہے

دل میرا ترے پاس ہے یا کھو دیا اُس کو

جو میں نے دیا تھا تجھے لا، عید کا دن ہے

برقی کا تھا جو فرض کیا اس نے ادا وہ

نظروں سے نہ یوں اُس کو گِرا عید کا دن ہے

مزید دکھائیں

احمد علی برقی اعظمی

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔

متعلقہ

Close