نظم

جسٹس راجیندرا سچر کے سانحۂ ارتحال پر منظوم خراج عقیدت

دادرس راجیندر سچر چل بسے

احمد علی برقی اعظمی

دادرس راجیندر سچر چل بسے
نامِ نامی جن کا ہے وردِ زباں

تھے وہ ماہر ایسے اک قانون داں
معترف ہے جن کی عظمت کا جہاں

تھے وہ ایسے ایک جسٹس حق پرست
داد خواہی کی تھے جو روحِ رواں

تھا عدالت ان کا فطری مشغلہ
تھے ستمدیدہ دلوں کے ترجماں

دیکھئے سچر کمیٹی کی رپورٹ
ہے جو ان کی حق پرستی کا نشاں

عہدِ حاضر کے تھے ایسے ایک جج
تھے دلوں پر جو سبھی کے حکمراں

تھے وہ اپنے کام سے ہردلعزیز
ان کا برقی اعظمی ہے قدرداں

مزید دکھائیں

احمد علی برقی اعظمی

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔

متعلقہ

Back to top button
Close