نظم

روح پرور ہے دیار جونپور

دلنشیں ہیں یادگار جونپور

ڈاکٹر احمد علی برقی اعظمی

روح پرور ہے دیارِ جونپور

دلنشیں ہیں یادگار جونپور

تھا کبھی یہ مرجعِ اہلِ نظر

کیا ہوئی اب وہ بہارِ جونپور

کہتے تھے اس شہر کو شیراز ہند

ہے متاعِ فن نثارِ جونپور

حکمراں تھے اس پہ شرقی بادشاہ

تھے جو برسوں تاجدار جونپور

ملا جیون تھے کبھی اس شہر میں

باعثِ عز و وقارِ جونپور

تھے شفیق و وامق و محسن رضا

عہدِ حاضر میں وقارِ جونپور

زیب تاریخِ ادب ہیں آج بھی

جابجا بقش و نگار جونپور

تھا ذخیرہ ایک مخطوطات کا

ہے کہاں وہ یادگارِ جونپور

ہیں جو پوشیدہ نگاہوں سے ابھی

منکشف ہوں شاہکار جونپور

شاہی پُل اس شیر کا ہے دیدنی

ہے جو برقی افتخارِ جونپور

مزید دکھائیں

احمد علی برقی اعظمی

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔

متعلقہ

Close