نظم

منظوم تاریخ ہند و پاک بعنوان ’حماسہ‘ پر منظوم تاثرات

احمد علی برقی اعظمی

چار جلدیں ہیں حماسہ کی مرے پیشِ نظر
ہے قمر بھوپالی کا جس سے عیاں عرضِ ہُنر

ہند و پاکستان کی منظوم یہ تاریخ ہے
جس سے ہے عہدِ گذشتہ کا نمایاں کرو فر

چاروں جلدیں آج ہی مجھ کو ہوئی ہیں دستیاب
محو حیرت ہوں یہ ادبی کارنامہ دیکھ کر

اہلِ دانش کام پر صدیوں کریں گے جن کے ناز
کیسے کیسے اس جہاں میں آج بھی ہیں دیدہ ور

ہے بجا اردو کا اس کو ’’ شاہنامہ ‘‘ گر کہیں
ہے یہ برقی اعظمی اردو میں اعجازِ قمر

مزید دکھائیں

احمد علی برقی اعظمی

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔

متعلقہ

Close