نظم

کورٹ میرج

ذیشان الہی

تو کیا تم نے ارادہ کر لیا ہے

سارے دیرینہ تعلق توڑ کر تم

اک نیا رشتہ بناؤ گی؟

سبھی مانوس رستے چھوڑ کر تم

اک نئے رستے پہ جاؤ گی؟

اگر ہے واقعی ایسا

تو اتنا دھیان میں رکھنا

کہ جو رشتہ

بہت سارے عزیز از جان رشتوں کی

ہلاکت کا سبب ٹھہرے

زیادہ دن تلک باقی نہیں رہتا

جو چہرہ

اپنے ہی پیاروں کی شکلیں بھول جانے پر

تمہیں مجبور کرتا ہو

وہ اپنا ہو نہیں سکتا

محبت…(عمر ہی جس کی ابھی دو چار دن کی ہے)

تمہیں اپنے عزیزوں کی محبت سے الگ کر دے

محبت ہو نہیں سکتی

مزید دکھائیں

ذیشان الہی

276۔۔۔۔ ذیشان الہٰیذیشان الہٰی 2 اگست 1990 کو ٹانڈہ امبیڈکر نگر(فیض آباد) یو.پی ، بھارت میں پیدا ہوئے۔ میٹرک 2005 میں قومی انٹر کالج ٹانڈہ فیض آباد سے کی۔ انٹرمیڈیٹ 2008 میں قومی انٹر کالج ٹانڈہ سے کی۔ بسلسۂ روز گار سعودی عرب میں مقیم ہیں۔ شاعری کا باقاعدہ آغاز 2010 میں فیس بک کے ادبی تنقیدی گروپ اردو انجمن اور انحراف پر آنے کے بعد کیا۔

متعلقہ

Back to top button
Close