نظم

یاد رفتگاں: بیاد مولانا حسرت موہانی

احمد علی برقیؔ ہے ان کے حُسنِ عمل کا غلام

احمد علی برقی اعظمی

حسرتؔ موہانی ہے ایسا اردو ادب میں نام

ہیں تاریخِ ادب کی زینت جس کے زریں کام

ان کا شعری سرمایہ ہے وہ ادبی میراث

جس کے ہیں مداح جہاں میں سبھی خواص و عوام

تھے وہ ایسے مردِ مجاہد دیتے تھے جو درسِ عمل

محو نہ ہونگے صفح? ذہن سے ان کے نقشِ دوام

مردِ مجاہد، نڈر صحافی، رونقِ بزمِ شعر و سخن

حسرت موہانی کا سب میں تھا ممتاز مقام

نظم و نثر کی صورت میں تاریخِِ ادب کا حصہ ہیں

اُن کے سبھی رشحاتِ قلم ہیں درسِ عمل کا پیام

آزادی کی جدو جہد میں رہتے تھے سرگرمِ عمل

عمرِ عزیز کے اپنی گذارے جیل میں صبح و شام

قول و عمل میں کبھی نہ دیکھا ان کے کوئی تضاد

احمد علی برقیؔ ہے ان کے حُسنِ عمل کا غلام

مزید دکھائیں

احمد علی برقی اعظمی

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اعظم گڑھ کے ایک ادبی خانوادے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کے والد ماجد جناب رحمت الہی برقؔ دبستان داغ دہلوی سے وابستہ تھے اور ایک باکمال استاد شاعر تھے۔ برقیؔ اعظمی ان دنوں آل آنڈیا ریڈیو میں شعبہ فارسی کے عہدے سے سبکدوش ہونے کے بعد اب بھی عارضی طور سے اسی شعبے سے وابستہ ہیں۔۔ فی البدیہہ اور موضوعاتی شاعری میں آپ کو ملکہ حاصل ہے۔ آپ کی خاص دل چسپیاں جدید سائنس اور ٹکنالوجی خصوصاً اردو کی ویب سائٹس میں ہے۔ اردو و فارسی میں یکساں قدرت رکھتے ہیں۔ روحِ سخن آپ کا پہلا مجموعہ کلام ہے۔

متعلقہ

Close