متفرقات

اب لگیں گے عید مبارکباد کے بینر

ایسے احباب اگر اتنے پیسے بینر میں نہ ڈالتے ہوئے اپنی ہی گلی محلے کے مجبور، بے سہارا لوگوں کی مدد کریں تو امداد بھی ہو جائے اور ان کے اس کام کے بدلے میں روز محشر اجر بھی مل جائے۔ لیکن یہ بھلا ایسا کیسے اور کیونکر کرسکتے ہیں...یہ تو الٹی گنگا بہانے کی مانند ہوگیا۔ انکے تو چہروں کی سرخی ہی غرباء کے زمینی، سماجی، سرکاری اور عوامی حقوق غصب کرکے اور انکے خون چوس چوس کرکے آتی ہے۔

مزید پڑھیں >>

زکوٰۃ سے دور ہوسکتی ہے غریبی

زکوٰۃ اسلام کا تیسرا رکن اور اسلامی نظام معیشت کا ستون ہے۔ قرآن میں اس کا ذکر نماز کے ساتھ کیاگیا ہے۔ نماز فحش ومنکرات سے روکتی ہے توزکوٰۃاقتصادی نابرابری کو کم کرتی ہے۔ نماز جسم کی اور زکوٰۃمال کی عبادت ہے۔ رب کائنات نے دولت مندوں کے مال میں غریبوں ، مسکینوں ، کمزوروں اور بے سہارائوں کا حصہ رکھا ہے۔ یہ حصہ صرف دولت میں نہیں بلکہ کھیتی، موسم میں آنے والے پھلوں ، تجارت کے جانوروں اور سامان میں بھی ہے۔

مزید پڑھیں >>

مسیحا بنے قاتل!

آج ایک طبیب فن طب حاصل کرنے کے لئے ایک کروڑ سے زائد روپیے خرچ کرتا ہے ،محنت جد وجہد لگن کے بعد وہ ڈاکٹر ہونے کا شرف حاصل کرتا ہے ،اب اس کے ذہن ودماغ پر خدمت خلق کا جذبہ سوار نہیں ہوتا ،بلکہ ایک تاجر کے خیالات سے کیفیت قلب مملو ہوتی ہے ،اور خرچ کی ہویی رقم کا حصول بھی حاشیئہ خیال میں موجود ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں >>

فخر زماں اور حسن علی کا مہذب انداز!

ہندستانی اخباروں میں شائع شدہ دو تصویریں بہت اچھی اور خوشنما معلوم ہوئیں ۔ فائنل میچ کے دن ہندستانی صبح کے اخباروں میں ایک تصویر میں دھونی سرفراز کے ننھے منے بیٹے عبداللہ جو تین چار مہینے کا مشکل سے ہوگا کی گود میں ہے اور سرفراز اور اس کی بیوی دھونی کے بغل میں کھڑے ہیں ۔ آج (21جون 2017ء) کے ایک ہندستانی اخبار میں پاکستانی بالر جنید علی کے اہل خانہ (بیوی بچوں ) کے ساتھ دھونی اور ویراٹ کوہلی کی تصویر شائع ہوئی ہے۔ یہ سب اچھی علامتیں ہیں ۔ ان کو جاری رہنا چاہئے۔

مزید پڑھیں >>

کرکٹ میچ دیش بھکتی کا ثبوت نہیں!

گزشتہ ایک ہفتے سے بھارت پاکستان کے فائنل مقابلہ کو لے کر سوشل میڈیا پر جنگ جاری ہے، لفاظی کی، اپنے دیش کو بڑا گرداننے میں حدود و قیود کو توڑا جارہا ہے. ایسا محسوس ہوتا ہیکہ بھارت پاکستان کا میچ ہی حقیقی جنگ ہے اور جو اس میں جیتے گا وہی فاتح زمانہ کہہ لائے گا، ادھر میڈیا کا بھی عجب ستم ہے، کھیل جہاں تفریح اور دلچسپی کا ایک ذریعہ تھا میڈیا نے اپنے پیٹ پالنے کے لئے اس کھیل کو بھی نفرت کی جنگ بنا دیا.

مزید پڑھیں >>

معاشرتی خرابیاں اور امر بالمعروف و نہی عن المنکرکی فرضیت!

آج ہمارے معاشرہ میں جو برائیاں ، خرابیاں اور تباہ کاریاں سرکش عفریت کی طرح سر اٹھائے کھڑی ہیں ان کا شمار کرنا ناممکن ہے اور انہوں نے ہمارے فکرو ذہن ، عقل و فہم اور دل و ددماغ کو ایک حیثیت سے ماؤف کرکے زندگی کی ہنگامہ خیزیوں سے کنارہ کش کر دیا ہے اور ہمیں ذلت و رسوائی ، خواری و ناداری کی نہ ٹوٹنے والی زنجیروں میں جکڑ دیا ہے۔

مزید پڑھیں >>

بیانوں میں تنازعات کی تلاش!

ٹی وی والوں کی نوکری کا بڑا کام ہے ،’’تنازعات تلاش کرنا‘‘نہ ہوں تو تنازعہ بنانا ۔کسی بھی طرح سے تنازعات بنائے جا سکتے ہیں ۔تنازعات نہ ہوں تو اہمیت نہیں ہے ۔میں مشکوک تھا کہ محسوس ہوتا ہے کہ ٹی وی صحافت میں ا ب ایک پرچہ پڑھایا جانے لگا ہے ’’متنازعات بنانا ‘‘اس شک کو دور کرنے کی کوشش میں تنازعات بنانے کی ایک کلاس میں جھانکنے کا موقع ملا ۔

مزید پڑھیں >>

پاکستان کی کرکٹ کی دنیا دین کی طرف مائل ہے!

امن و امان، فرقہ وارانہ ہم آہنگی، اخوت و محبت اسلام اور مسلمانوں کی اکثریت خواہ ہندستان میں ہو یا پاکستان میں اس کو نہ مسلم مفادات کا علم ہے اور نہ اسلامی مفادات سے کوئی واقفیت ہے جس کی وجہ سے وہ طاقتیں جو دونوں ملکوں میں انسان دوستی اور بھائی چارہ کی خواہاں ہیں انھیں کامیابی نہیں مل رہی ہے وہ طاقتیں آج کامیاب ہیں جو فرقہ پرستی کو اپنے اپنے ملکوں میں ہوا دیتی ہیں ۔

مزید پڑھیں >>

جھوٹ، منافقت اور جہالت!

جھوٹ کو کوئی نہیں پسند کرتا مگر جھوٹ بولنے والوں کی تعداد معاشرہ میں زیادہ ہے اور دن بدن بڑھتی جارہی ہے۔ آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد گرامی ہے کہ مومن میں بزدلی اور دوسری کمزوریاں ہوسکتی ہیں ، جھوٹا نہیں ہوسکتا۔

مزید پڑھیں >>

شوہر کا بیوی پر بلاوجہ ظلم وزیاتی کرنا

واقعی بہت سارے گھروں میں مردوں کی صورت حال ایسی ہی ہے ، اپنی مردانگی کا اظہار میدان میں نہیں صنف نازک پہ کرتے ہیں ۔ بلاوجہ عورتوں کو گالی دینا، اسے کوسنا، مارنا، ستانا، بددعا کرنا، دھمکی دینا ظم وزیادتی پیشہ بنالیاہے ۔ اللہ تعالی ایسے ظالموں کا سخت محاسبہ کرے گا۔ عورت کے صبر وضبط سے فائدہ اٹھاکر بہت سے ظالم لوگ طرح طرح کی سزائیں بھی دیتے ہیں ۔

مزید پڑھیں >>