آج کا کالمنقطہ نظر

یوگی کا کسانوں کی قرض معافی کا وعدہ پورا!

رويش کمار

یوپی کے کسانوں کے لئے بڑی خبر ہے. یوگی کابینہ کی پہلی کابینہ میں کسانوں کی قرض معافی کر دی گئی ہے. انتخابات کے دوران وزیر اعظم نے وعدہ کیا تھا کہ بی جے پی حکومت کے کابینہ کی پہلی میٹنگ میں قرض معاف کر دیا جائے گا. یوگی حکومت نے یہ وعدہ پورا کر دیا ہے. وعدہ مختصر اور معمولی کسانوں کے بارے میں ہی تھا. وزیر صحت سددھارتھ ناتھ سنگھ نے بتایا کہ یوپی میں دو کروڑ 15 لاکھ چھوٹے اور معمولی کسان ہیں. ان کسانوں کا 729 30 کروڑ روپے کا قرض معاف کر دیا گیا ہے. ان کسانوں کا ایک لاکھ روپے تک کا کراپ قرض معاف کیا جائے گا. جن لوگوں نے ایک لاکھ تک کراپ قرض لیا ہے ان کے اکاؤنٹ سے اتنی رقم معاف کر دی جائے گی. اس کے علاوہ سات لاکھ کسانوں کا این پی اے بھی معاف کیا جایے گا. یعنی جو لون کسان دینے کی حالت میں نہیں ہیں وہ بھی معاف کر دیا گیا. سات لاکھ کسانوں کا این پی اے اےماٹ 5630 کروڑ معاف کر دیا گیا ہے. مجموعی طور پر یوگی حکومت نے ، 359 36 ہزار کروڑ کسانوں کا قرض معاف کر دیا ہے.

کراپ قرض مطلب بیج کھاد کے لیے لیا گیا قرض ہوتا ہے. یہ بہت بڑی رقم ہے. ہر طرح کے بینک اس میں شامل ہیں. لیکن جن کسانوں نے بینک، کوآپریٹو بینک، دیہی بینک سے لون لیا ہے، ان کا معاف ہوگا. جنہوں نے مہاجن سے لیا ہے ان کا نہیں ہو گا. 36 ہزار کروڑ کی رقم کہاں سے آئے گی اس کے لئے چیف سیکرٹری کی کمیٹی راستہ كھوجےگي. مگر سدھارتھ ناتھ سنگھ نے صاف صاف کہا ہے کہ یہ معافی اسی مالی سال میں ہو گی. بجٹ میں رقم منظور ہوتے ہی معافی شروع ہو جائے گی.

اس کے علاوہ یوگی حکومت نے یہ بھی فیصلہ کیا ہے کہ یوپی میں گندم خریداری کے پانچ ہزار مراکز بنائے جائیں گے. کسانوں کے لیے پانی اور سایے اہتمام کیا جائے گا. خریداری مراکز پر پیسہ براہ راست کسانوں کے اکاؤنٹ میں جائے گا. 80 لاکھ ٹن گندم خریدنے کا ہدف رکھا گیا ہے. کم از کم امدادی قیمت 1625 روپے کے علاوہ ہر کوئنٹل پر دس روپے الگ سے ملیں گے. آلو کسانوں کے مسائل کے حل کے لئے ایک کمیٹی بنی ہے.

مذبح خانوں کے بارے میں بھی حکومت نے کہا ہے کہ جن کے لائسنس کی تجدید ہونا ہے انھیں اپ گریڈ کرنے میں حکومت کو کوئی دقت نہیں ہے. 26 غیر قانونی مذبح خانوں کو بند کیا گیا ہے. جن مذبح کے خلاف کارروائی کی گئی ہے، انہیں بند نہیں کیا گیا ہے. جو غیر قانونی ہیں وہی نہیں چلائے جائیں گے. اینٹی رومیو اسکواڈ کے بارے میں بھی حکومت نے کہا ہے کہ پارک میں، مال میں رضامندی سے بیٹھے جوڑوں کو پولیس پریشان نہیں کرے گی. چھیڑخانی کی شکایت پر ہی کارروائی کی جائے گی. حکومت نے کہا کہ اینٹی رومیو اسکواڈ کے عوام میں خوب تعریف ہو رہی ہے.

یہ مصنف کی ذاتی رائے ہے۔
(اس ویب سائٹ کے مضامین کوعام کرنے میں ہمارا تعاون کیجیے۔)
Disclaimer: The opinions expressed within this article/piece are personal views of the author; and do not reflect the views of the Mazameen.com. The Mazameen.com does not assume any responsibility or liability for the same.)


مزید دکھائیں

رویش کمار

مضمون نگار ہندوستان کے معروف صحافی اور ٹیلی وژن اینکر ہیں۔

متعلقہ

Close