خصوصی

پارلیمنٹ کے سینٹرل ہال میں نیتاؤں اور صحافیوں کی بحث

بی جے پی نیتاؤں کا خیال تھا کہ رافیل کے مسئلے کو کانگریس بڑا بنا کر ایک گھوٹالے جیسا بنانے کی کوشش کرے گی، شاید اس سے ان کو تھوڑا سیاسی فائدہ مل بھی جائے، مگر آخر میں بی جے پی اسے قوم پرستی سے جوڑنے میں کامیاب رہے گی اور رافیل پر کچھ بھی بولنے سے انکار کرتے ہوئے اسے قومی سلامتی سے منسلک معاملہ بتاتی رہے گی. بار بار کہے گی کہ اس سے قومی سلامتی سے سمجھوتہ کرنا ہوگا. پھر یہ معاملہ بھی آنے والے انتخابات میں جی ایس ٹی اور نوٹ بندي جیسا ہی بن کر رہ جائے گا یعنی ٹائیں ٹائیں فش۔  یعنی مودی کا جادو برقرار رہے گا. راہل کو ابھی بہت محنت کرنی پڑے گی اور مودی سے بہت کچھ سیکھنا پڑے گا، خاص طور پر کسی چیز کی مارکیٹنگ کس طرح کی جاتی ہے اور لوگوں سے بات چیت کس طرح کی جاتی ہے. ساتھ ہی اپوزیشن پر کب سب سے شدید حملہ کیا جا سکتا ہے اور کب مؤثر طریقے سے.

مزید پڑھیں >>

مصر میں احیائے اسلام کے بانی: امام حسن البنا شہیدؒ

امام حسن البنا شہیدؒ کو حکومت براہ راست تو کچھ نہ کہ سکی لیکن انکی مسلسل نگرانی کی جانے لگی اور بالآخر12فروری 1949ء کو خفیہ پولیس اہلکاروں نے اس وقت امام کو گولی کا نشانہ بنایاجب وہ اخوان المسلمون کے شعبہ نوجوانان’’شبان المسلمون‘‘کے دفتر سے باہر نکل رہے تھے۔ امام حسن البنا شہیدؒ اپنے رب سے جاملے اور ہمیشہ زندہ رہنے کے منصب پر سرفراز ہو گئے۔ سلام ہو اس تنظیم پر اور اسکی قیادت پر کہ جس نے اپنے خون سے امت مسلمہ کے شجر سایہ دار کی آبیاری کی۔ اﷲ تعالی امام حسن البنا شہیدؒ سمیت امت کے کل شہدا کو اپنے جوار رحمت میں جگہ دے، آمین۔

مزید پڑھیں >>

بدلتا بھارت اور ہماری اولین ترجیحات

مسلمانوں کا ملی وجود مٹانے کی کوششیں تیز تر ہورہی ہیں اسلئے مسلمانوں کو تعلیم، تجارت سیاست میں عرق ریزی کرنی پڑے گی اور اپنی صفوں کو درست کرنا پڑے گا، اپنے ملی وجود کی حفاظت ساتھ ساتھ اس ملک کو بھی ان مادہ پرست، خود غرض اور کرپٹ لوگوں سے بچانا ہوگا جو اسکی روح پر ضرب لگارہےہیں۔ یہی وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔

مزید پڑھیں >>

ملک کی معیشت کی خستہ حالی اور سرمایہ داروں میں ترک وطن کا بڑھتا رجحان

ملک کےاہم اور حقیقی مسائل میں سے ایک روزگار اور بے روزگاری  کا مسئلہ ایک بار پھر ابھر کر سامنے آرہا ہے اور  'پکوڑا سیاست' پر گفتگو تیزتر ہوتی جارہی ہے۔ حالانکہ برسراقتدار طبقہ کی طرف سے اسے  تہہ در تہہ فرقہ پرستی کے نیچے دفن کرنے کی پر زور کوشش میں خونی کھیل کھیلنے سے بھی دریغ نہیں کیا گیا لیکن معاملہ دبنے کے بجائے مزید ابھر کر سامنے آرہا ہے۔ جہاں تک بات سیاست کی ہے تو وہ اس مسئلہ پر نفع اور نقصان کو مدنظر رکھ کر کچھ بولتی اور آواز بلند کرتی ہے۔

مزید پڑھیں >>

کیا رامائن کا میڈی سیریل تھا؟

ایوان بالا میں حزب اختلاف کے رہنما نے غلام نبی آزاد نے بجا طور سے فرمایا کہ یہ  کام  بدلنے والی  (Game changer) نہیں بلکہ  نام بدلنے والی (Name changer) سرکار ہے۔ اس کا شعار’رام نام جپنا پرایا مال اپنا‘ ہے۔ یہ پرانے کاموں کو نیا نام دے کر خود سے منسوب کرلیتی ہے۔ آزاد کے اس الزام کا ثبوت پیش کرتے ہوئے مودی جی نے ایوان میں کہہ دیا کہ آدھار کارڈ کا خیال سب سے پہلے اٹل جی کو آیاتھا۔ اس پر کانگریس رہنما رینوکا چودھری نے ایسا زور دار  قہقہ لگایا کہ صدارت کرنے والے وینکیا نائیڈو کی نیند اڑ گئی اور انہوں نے رینو کا جی  کونظم و ضبط کی تلقین کرڈالی۔ مودی جی کی تقریرکو تحریر کر نے والے نہیں جانتے تھے  کہ رینوکا ایک قہقہہ مودی جی کی طول طویل تقریر کو نگل  جائے گا اس لیے انہوں نے  اس بات کچھ لکھ کر نہیں دیا  ار مجبوراًپردھان سیوک  کو فی البدیہہ جواب دینا پڑا۔ مودی جی کا معرکتہ الآراء  جواب بھی ملاحظہ فرمائیں۔ وہ  بولے انہیں مت روکیے اس لیے  کہ رامائن سیریل کے بعد پہلی مرتبہ ایسی ہنسی سنائی پڑی ہے۔

مزید پڑھیں >>

ایران: اسلامی انقلابات کی سرزمین

اکیسویں صدی کی دہلیز پر پوری امت مسلمہ کی نگاہیں ایران کے ایٹمی پروگرام پر مرکوز ہیں ۔ آفرین ہے ایرانی قیادت کوجوپورے عالمی دباؤ اور دھونس دھاندلیوں اوردھمکیوں کے باوجود اپنے موقف پرسختی سے قائم ہے اور سلام ہے ایرانی قوم کو جو اپنے تن من دھن کے ساتھ اپنی قیادت کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔

مزید پڑھیں >>

حصول رزق میں حلال و حرام کی تمیز ضروری

جس بھائی کو اللہ کا خوف اور آخرت کے انجام کی ذرا بھی فکر ہو وہ اپنے پیشہ سے متعلق اسلامی احکامات کو جاننے کی فکر کرے اور اپنے ذرائع آمدنی کا جائزہ لے، حلال کو اختیار کرے اور جہاں حرام کا شائبہ بھی ہو اسے ترک کردے۔ اسی میں د نیا اور آخرت کی عافیت اور فلاح پوشیدہ ہے۔ اللہ سے دعا ہے کہ وہ اس سیہ کار کی لغزشوں کو بھی معاف فرمائے اور بقیہ زندگی اپنی اطاعت میں گزارنے کی توفیق عطا کرے۔ آمین!

مزید پڑھیں >>

کانگریس کا ایک ہی مقصد: مودی ہٹاؤ

کانگریس کا خیال ہے کہ 2014 میں بی جے پی نے 282 سیٹیں جیت کر اپنی اب تک جو سب سے بہترین کارکردگی کی، وہ اس سے بہتر ابھی نہیں کر سکتی ہے. یعنی بی جے پی کی لوک سبھا میں نشستیں کم ہونا طے ہے. کانگریسی لیڈروں کو لگتا ہے کہ کچھ ایسی ریاستیں ہیں جہاں بی جے پی کو زیادہ سے زیادہ کامیابی ملی اور اسے دہرایا نہیں جا سکے گا. وہ کہتے ہیں کہ گجرات جو بی جے پی کے لئے سب سے مضبوط گڑھ ہے، جب پارٹی کو وہاں گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کیا جا سکتا ہے تو پھر ان ریاستوں میں اسے کڑی ٹکر کیوں نہیں دی جا سکتی جہاں کانگریس روایتی طور پر مضبوط رہی ہے یا جہاں بی جے پی اور کانگریس کی سیدھی ٹکر ہے.

مزید پڑھیں >>

ایک رفال کی قیمت تم کیا جانو رمیش بابو

آپ اپنا دماغ لگائیں. سارا دماغ پکوڑے تلنے میں لگے گا تو لوگ خزانہ لوٹ کر چمپت ہو جائیں گے. دفاعی سودوں کو لے کر اٹھنے والے سوالات کبھی کسی نتیجے پر نہیں پہنچتے ہیں. آج تک ہم بوفورس کی جانچ میں وقت ضائع کر رہے ہیں اور دنیا کو ورغلا رہے ہیں. دو ہفتے پرانی کمپنی کو ہزاروں کروڑ کی ڈفینس ڈیل مل جائے یہ صرف اور صرف اسی دور میں ہو سکتا ہے جب ملک ہندو مسلم میں ڈوبا ہوا ہو، ورنہ عوام کو الو بنانے کا کوئی چانس ہی نہیں تھا.

مزید پڑھیں >>

تصوّر اقامت دین پر اعتراضات: ایک جائزہ

اقامتِ دین میں لفظ دین سے مراد وہ دینِ حق ہے جسے اللہ رب العالمین اپنے تمام انبیاء کے ذریعے مختلف زمانوں اور مختلف ملکوں میں بھیجتا رہا ہے اور جسے آخری اور مکمل صورت میں تمام انسانوں کے لیے اپنے آخری نبی حضرت محمدﷺ کے ذریعے نازل فرمایا، اور جو اَب دنیا میں ایک ہی مستند، محفوظ اور عنداللہ مقبول دین ہے اور جس کا نام ’اسلام‘ ہے۔

مزید پڑھیں >>