شخصیات

لقمان حکیم (آخری قسط)

گالی گلوج

بیٹا !لوگوں کو گالی نہ دو ورنہ تم اپنے ماں باپ کے گالی دینے کا سبب قرار پائوگے ۔(اختصاص شیخ مفید صفحہ ؍ 336)

موت

بیٹا !ابن آدم کیسے سوجاتا ہے حالانکہ موت اسے تلاش کررہی ہے ۔انسان کس طرح سے غافل ہوجاتاہے حالانکہ اس سے غفلت نہیں برجاتی ۔(اختصاص شیخ مفید صفحہ ؍334)

بیٹا !جس طرح تم سوتے ہو اسی طرح مروگے اور جس طرح تم بیدا رہوتے ہو اسی طرح روز قیامت زندہ ہوگے ۔(مجموعہ ورام صفحہ ؍ 57)

بیٹا !اگر موت کے بارے میں شک رکھتے ہو تو نیند کواپنے سے دور کردو ۔حالانکہ اس کام پر تم قادر نہیں ہو ۔اگر قیامت کے سلسلے میں شک کرتے ہو تو خواب سے بیدار ہونے کو روک لو حالانکہ تم اس پر بھی قادر نہیں ہو۔اگر ان مسائل کے بارے میں غوروفکر کروگے تو جان لو گے کہ تمہاری جان دوسرے قبضہ میں ہے ۔اس طرح تمہاری نیندموت کے برابراور خواب کے بعد بیدار ہونا،موت کے بعد زندہ ہونے کے برابر ہوگی ۔(بحارالانوار جلد 13صفحہ 617)

مشورہ

بیٹا !اگر تم سے کوئی مشورہ چاہے تو صحیح اور صائب نظریہ حاصل کرنے کی کوشش کرو۔اچھی طرح غور فکر اورسوچ کے بغیر جواب نہ دو ۔اپنی ساری قوتوں کو مشورہ کے جواب کے لئے استعمال کرو۔کیونکہ جو شخص طالب مشورہ کواپنے خالص ترین نظریہ سے نہ نوازے ،سوچ بچار کی نعمت اس سے چھین لی جاتی ہے ۔(تفسیر نمونہ زیر نظر آیۃ۔۔۔ناصر مکارم شیرازی جلد ۹صفحہ 423ناشر مصباح القرآن ٹرسٹ)

مہمان

بیٹا !مہمان سے کام نہ لو ۔(تفسیر جلالین :علامہ جلال الدین محلی و علامہ جلال الدین سیوطی ،جلد ۵ صفحہ ؍70مکتبہ ،دارالاشاعت اردو بازار ایم اے جناح روڈ ،کراچی ،پاکستان )

بیٹا !مہمان کے سامنے کسی پر غصہ مت کرو۔(تفسیر جلالین :علامہ جلال الدین محلی و علامہ جلال الدین سیوطی ،جلد ۵ صفحہ ؍70مکتبہ ،دارالاشاعت اردو بازار ایم اے جناح روڈ ،کراچی ،پاکستان )

نصیحت

بیٹا !تم لوگوں سے نصیحت حاصل کرو اس سے قبل کہ لوگ تم سے عبرت حاصل کریں اور تم لوگوں کے لئے سامان عبرت قرار پائو ۔(اختصاص مفید صفحہ ؍ 331)

بیٹا !اوروں کو نصیحت کرنے سے پہلے خود بھی عمل پیرا ہو۔(تفسیر جلالین :علامہ جلال الدین محلی و علامہ جلال الدین سیوطی ،جلد ۵ صفحہ ؍69مکتبہ ،دارالاشاعت اردو بازار ایم اے جناح روڈ ،کراچی ،پاکستان )

نفس پر قابو

بیٹا !اگر تم چاہتے ہو کہ سرداری ،عزت اور دنیا تمہارے پاس رہے تو لوگوں کے مال و دولت سے منھ موڑلو اور لالچ کی جڑ کو کاٹ دو ۔اس لئے کہ االلہ تبارک و تعالیٰ کے پیغمبر اور سچے اولیاء جہاں کہیں بھی پائے گئے (زندگی کے ہر لمحہ میں )وہ لالچ کو دور کرنے کے در پے رہے ہیں (بحارالانوار جلد13صفحہ ؍419)۔

بیٹا !اپنے نفس کو خواہشات اور لالچ سے روکو ۔اس لئے کہ اگر تم نے ایسا نہیں کیاتو نہ بہشت میں جائو گے اور نہ ہی اس کا چہرہ دیکھ سکو گے ۔(اختصاص مفید صفحہ ؍336)

نماز

بیٹا !نماز قائم کرو۔(سورہ لقمان ؍17)

بیٹا !نما ززیادہ پڑھو۔(تفسیر نمونہ زیر نظر آیۃ۔۔۔ناصر مکارم شیرازی جلد ۹صفحہ 423ناشر مصباح القرآن ٹرسٹ)

بیٹا !کبھی بھی نماز کو اول وقت کی تاخیر کے ساتھ نہ پڑھو ۔(تفسیر نمونہ زیر نظر آیۃ۔۔۔ناصر مکارم شیرازی جلد ۹صفحہ ۴۲۳ناشر مصباح القرآن ٹرسٹ)

بیٹا !جماعت کے ساتھ نماز پڑھو خواہ تم سخت ترین حالت میں ہو ۔(تفسیر نمونہ زیر نظر آیۃ۔۔۔ناصر مکارم شیرازی جلد ۹صفحہ ۴۲۳ناشر مصباح القرآن ٹرسٹ)

  نوٹ:(آیۃ اللہ ۔۔۔ناصر مکارم شیراز ی آیت ’’اقم الصلوٰۃ‘‘کے ذیل میں لکھتے ہیں کہ جناب لقمان مبدا و معاد کو محکم کرنے کے بعد جوکہ مذہب کے تمام اعتقادات کی بنیاد ہے ،اہم اعمال یعنی نماز کے بارے میں فرماتے ہیں :بیٹا! نماز قائم کرو۔اس لئے کہ نماز خالق سے بہترین اور اہم رابطہ کی چیز ہے ۔نماز تمہارے دل کوبیدار ،روح کو صاف اور زندگی کو روشن کرتی ہے ۔تمہاری جان سے گناہوں کو دھودیتی ہے ۔تمہارے دل کی دنیا میں ایمان کانور پھیلاتی ہے اور برائی سے روکتی ہے ۔)(تفسیر نمونہ ،زیر نظر آیۃ ا۔۔۔ناصر مکارم شیرازی جلد 9 صفحہ 52)

بیٹا !نماز قائم کرو۔اس لئے کہ نماز خدا کے دین میں خیمہ کے ستون کے مانند ہے ۔اگرستون باقی رہے تو خیمہ باقی ہے ۔اس کی رسی ،میخ ،کھونٹی اور سایہ خیمہ بھی مفیدرہے گا۔لیکن اگر ستون اورخیمہ ہی باقی نہ رہے تو کھونٹی ،رسی اورسایہ سے کوئی فائدہ نہیں اٹھاسکتا۔(بحارالانوار جلد 13صفحہ 435)

یتیم

بیٹا !یتیم کامال نہ کھائو ۔ورنہ روز قیامت رسوا ہوجائو گے اور اس دن اس مال کا نقصان یتیم کی طرف پلٹانے پر مجبو کئے جائو گے ۔(اختصاص شیخ مفید صفحہ ؍134)

مزید دکھائیں

متعلقہ

Close