ہندوستان

مسلم پرسنل لا بورڈ کا دوراندیشی پر مبنی فیصلہ

بورڈ کی طرف سے یہ اہم فیصلہ دور اندیشی پرمبنی ہے ، امید ہے کہ دیگر جماعتیں اور تنظیمیں بھی اسی طرح اپنا ترجمان مقرر کرکے موقع و مفاد پرستوں کی چال بازیوں کا خاتمہ اور لائق و مستحق افراد کو اپنا ترجمان بنا کر پیش کریں گی۔ جس کا سیدھا اثر یہ ہوگا کہ ہر ایرا غیرا نٹ شنٹ بگھارنے سے باز رہے گا اور اگر وہ باز نہ بھی رہا تو اس کی بات بے وزن سمجھی جائے گی۔ مسلمانوں کے اہم ترین مسائل میں گہرے مطالعے و تجربے کے بغیر اس نازک دور میں کچھ بھی کہنا اور بولنا وغیرہ انتہائی نامناسب ہے ، جس پر ہر طرح ختم کیا جانا ضروری ہے۔

مزید پڑھیں >>

88سالہ تاریخ میں صوبہ جموں کے مسلم طبقہ کوعدالت عالیہ میں نمائندگی نہیں ملی!

صوبہ جموں میں مسلم آبادی قریب40فیصد ہے ۔جموں وکشمیر ہائی کورٹ بار ایسو سی ایشن جموں میں 3400کے قریب وکلاء میں کم وپیش700مسلم وکلا ہیں لیکن ان میں سے کسی کو ابھی تک ہائی کورٹ کا جج بننے کا موقع نہیں ملا۔ صوبہ جموں کے 10اضلاع میں سے 5اضلاع میں 50فیصد سے زیادہ مسلم آبادی ہے جن میں راجوری، پونچھ، کشتواڑ، ڈوڈہ اور رام بن شامل ہیں ۔

مزید پڑھیں >>

مابعد جدید دیش پریم!

مودی صاحب کانگریس سے ساٹھ سال کا حساب مانگتے نہیں تھکتے لیکن خود اپنے تاریک ترین تین سال تین مہینے کا حساب دینے کی اوقات نہیں رکھتے۔ بقول مودی، ’منموہن سنگھ کی  لٹیری سرکار‘ کے زمانے میں، گھریلو گیس سلنڈر کی قیمت 414 روپئے تھی  جو اب مودی  کے امبانی اڈانی راج میں 777 روپئے فی سلنڈر ہو چکی ہے !

مزید پڑھیں >>

سیاست کی آگ، عدالت کی جھاگ

گئو بھکتی  آہستہ آہستہ اس حکومت کے گلے کی ہڈی بنتی جارہی ہے۔ عدالت  سےپریشان گئوبھکت سرکار کو خود اس کے نو منتخب  مرکزی وزیر نے جھٹکا  دیا۔ پہلے یہ معاملہ آسام کے وزیر اعلیٰ تک محدود تھا لیکن اب گوہای دلی آگیا ہے۔ سرکاری افسر سے سیاستداں بننے والے مرکزی وزیر سیاحت الفونس کننتھانم نے اپنا عہدہ سنبھالنے کے پہلے ہی دن بیف کے مسئلہ پر اظہارخیال کرتے ہوئے کہاکہ کیرالا میں بیف بدستور کھایا جاتا رہے گا۔

مزید پڑھیں >>

روہنگیا پناہ گزیں: حکومتِ ہندکا موقف کیاہے؟

ہندوستان میں مقیم روہنگیا مسلمانوں کو نکالے جانے کے حکومت کے فیصلے کوچیلنج کرتے ہوئے دوروہنگیاپناہ گزینوں کی جانب سے سپریم کورٹ میں پیٹیشن داخل کی گئی ہے، روہنگیاپناہ گزینوں کی جانب سے معروف وکیل و سیاست داں پرشانت بھوشن کورٹ میں پیش ہورہے ہیں،

مزید پڑھیں >>

مسلم راشٹریہ منج اور نظریہ ٔ قربانی

 غرض یہ کہ مذہب اسلام کے علاوہ دیگر مذاہب میں جانور کے ذبیحہ اور قربانی کا تصور عبادت کے طور پر پایا جاتا ہے اور قربانی کے تاریخ اتنی ہی پرانی ہے کہ جتنا پرانا یہ انسان ہے، اس واضح دلائل کے بعد جانور کی قربانی کا انکار کرنا گویا چلچلاتی دھوپ کے وقت سورج کا انکار کرنا ہے۔

مزید پڑھیں >>

مسئلہ قومیت: حقیقت اور فسانہ

ضرورت اس بات کی ہے کہ ہندوستان کے ان مقامات پر جہاں ہم قابل لحاظ تعداد میں ہیں وہاں عدل و انصاف کی لڑائی  جو زمینی سطح پر جاری ہے اس میں حصہ لیتے ہوئے  دعوت کی گفتگو کریں، اگر ظلم کے خلاف جدوجہد) (struggle ہم نہیں کریں گے، تواس کا مطلب یہ ہوگا کہ ہماری یہ دعوت صرف قولی سطح تک محدود ہوکر رہ جائیگی۔

مزید پڑھیں >>

اس ملک میں اب جو بولے گا، وہ مارا جائے گا

 نریندر مودی کی قیادت کے ابھی ساڑھے تین برس پورے نہیں ہوئے مگر ملک کے انتظامی حالات یہ اعلان کررہے ہیں کہ کسی نہ کسی طرح ہم خانہ جنگی اور سول وار کی طرف بڑھ رہے ہیں۔ ہر گلی محلے میں آر ایس ایس اور بھاجپا کی نئی نئی قِسمیں جنم لے رہی ہیںجن کا ایک ایجنڈا ہے کہ ہندستان میں اُن کے کاموں سے جو اختلاف کرے گا، اسے مار دیا جائے گا۔

مزید پڑھیں >>

میں بھی منصور ہوں کہہ دو اغیار سے!

سچ یہی ہے کہ آج  کے دور میں کیمیکل اسلحوں سے زیادہ  مہلک  فیک نیوز  اور  پیڈ  نیوز کا  بازار ہے جو  پوری قوم میں سرائیت کر دیا گیا ہے۔ اسی کا   شاخسانہ ہےکہ 2  فیصد  اقتداری کنبہ 18 فیصد بنا  ریڑھ  والوں کا خوف  دکھا کر  80 فیصد موم کی ناک  والوں کو قابو میں کرنے میں لگا ہے۔

مزید پڑھیں >>

سیلاب میں دم توڑتی زندگی

پچھلے کئی سالوں سے مانسون کی خبرسے ایک ان چاہاڈرستانے لگاہے، بے وقت ضرورت سے زیادہ بارش کبھی تکلیف کاباعث بنتی ہے، توکبھی طغیانی کی آہٹ سنائی دینے لگتی ہے۔ شایدہی کوئی ایساسال گزراہوجب باڑھ نے ملک کے کسی نہ کسی حصہ میں قہرنہ برپایاہو۔راجستھان جیساعلاقہ بھی اس کی زدسے نہ بچ سکا،اسے ندیوں کاغصہ کہاجائے یافطرت Natureکے ساتھ چھیڑچھاڑ کانتیجہ۔

مزید پڑھیں >>