عبادات

شب قدر: انسانیت کے لیے شب نجات !

شبِ قدر عطا کئے جانے جانے کے بارے میں کئی ایک روایتیں ملتی ہیں ، ایک روایت میں ہے کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا کہ بنی سرائیل میں ایک شمسون نامی عابد تھا جس نے ہزار ماہ اللہ کی راہ میں جہاد کیا۔ اس پر صحابۂ کرام کو تعجب ہوا کہ ہمارے اعمال کی کیا حیثیت؟ اس پر اللہ تعالیٰ نے اس امت کو ایک رات عطا فرمائی جو اس غازی کی مدتِ عبادت سے بہتر ہے ۔

مزید پڑھیں >>

شبِ قدر: ایک عظیم رات!

اللہ عزوجل نے امت محمدیہ پر جو خصوصی نوازشات اور انعامات فرمائے ہیں ، ان میں سے ایک شب قدر بھی ہے، یہ بابرکت اور بے شمار خیر وخوبیوں سے معمور رات صرف امت ِ محمدیہ ہی کو عطا ہوئی ہے ، اس رات کی اہمیت اور قدر کو بتلانے کے لئے یہ بتلادینا کافی ہے کہ اللہ عزوجل اس رات کے فضائل وبرکات اور انوارات کو بیان کر نے کے لئے ایک مستقل سورۃ ’’سورۃ القدر ‘‘ کے نام سے اپنی کتاب خالد میں نازل کی ہے ، جس میں اللہ عزوجل نے اس رات کے خصائص کا خود تذکرہ فرمایا ہے

مزید پڑھیں >>

آخری عشرہ: جہنم سے آزادی کا ذریعہ!

اب جب کہ رمضان المبارک کا مہینہ بہت جلد ہم سے رخصت ہونے والا ہے اور اپنی تمام تر برکتوں کے ساتھ واپس ہونے والا ہے،ایسے میں ہماری یہ بھی ذمہ داری ہے اس ماہ کے باقی چند دنوں میں ہم جہاں دوسری بہت ساری چیزوں کی دعاؤں کی فکرکریں وہیں کثرت سے جہنم اور اس کی ہولناکیوں سے حفاظت کے لئے پروردگارِ عالم سے دعاؤں کا خصوصی اہتمام کریں ۔

مزید پڑھیں >>

آخری عشرے سے متعلق چندامور پر انتباہ!

اگر مسجد میں موجود لوگوں کو تعلیم کی ضرورت ہو اور معتکف (اعتکاف کرنے والا)ان کی ضرورت کو پورا کرنے کے قابل ہے تو انہیں درس دینے میں کوئی حرج نہیں ہے ۔ ہاں پابندی کے ساتھ اعتکاف کے اپنے قیمتی اوقات کو درس پر ہی صرف نہ کرے ، اعتکاف دراصل عبادت کے لئے فراغت کا نام ہے لہذا اس مقصد کی تکمیل میں کوشاں رہے ۔

مزید پڑھیں >>

فرائض اور واجبات خوش دلی سے ادا کریں !

مسلما نوں کو چا ہیئے اللہ کا بندہ بن کر رہیں یعنی اطاعت وبندگی کرتے ر ہیں ا ور اطا عت پر گامزن رہیں فرائض واجبات خاص کر نماز جو کسی حال میں معا ف نہیں وقت پر ادا کرتے رہیں اور سنتوں ونوا فل کا بھی اہتمام کریں خواہ نورانی راتیں ہوں یا کبھی بھی خوش فہمی میں نہ رہیں فرا ئض کی ادا ئے گی میں کو تاہی نہ کریں ۔

مزید پڑھیں >>

اعتکاف کیجیے، لیکن اس کی روح کے ساتھ!

آج کل موبائل کی وجہ سے معاملہ اور بھی بگاڑ کا شکار ہوگیا ہے _ دورانِ اعتکاف میں آدمی موبائل کے ذریعے اپنی تمام پسندیدہ شخصیات اور تمام پسندیدہ کاموں سے جڑا رہتا ہے _ وہ دوسروں کو فون کرتا ہے اور ان کے فون ریسیو کرتا ہے ، اس کے علاوہ فیس بک ، واٹس ایپ اور ملٹی میڈیا کے دیگر وسائل سے بھی محظوظ ہوتا ہے _

مزید پڑھیں >>

شب قدر و اعتکاف کی اہمیت!

رمضان المبارک کا آخری عشرہ بہت اہمیت کا حامل ہے،حدیث اور سنت کی روشنی میں ہمیں پتہ چلتا ہے کہ حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم بھی آخری تہائی میں پہلے سے زیادہ تازہ دم اور انہماک اور جوش و خروش سے عبادت کیا کرتے تھے،آخری عشرے کی طاق راتوں میں ایک رات شبِ قدر کہلاتی ہے، جس کا مطلب ہے قدر اور تعظیم والی رات،اس رات کو اللہ نے ہزار مہینوں سے افضل قرار دیا ہے،اللہ اس رات بندے کی ہر جائز دعائیں قبول فرماتا ہے

مزید پڑھیں >>

رمضان المبارک: دعاؤں کی قبولیت کا موسمِ بہار!

رمضان المبارک اللہ کی رحمتوں کا موسمِ بہار ہے ۔ گرچہ اس کی رحمتیں ہر آن ، ہرلمحہ اس کی مخلوق پر بلا تفریق و امتیاز برستی رہتی ہے۔لیکن کچھ مخصوص دن اور رات و مہینے ایسے ہیں جن میں اللہ رب العزت اپنے بندوں پر بے شمار رحمتیں ، برکتیں نازل فرماتاہے۔

مزید پڑھیں >>

تلاش شب قدر اور ہماری ذمہ داری!

شب ِ قدر جیسی نہایت عظیم الشان اور قیمتی رات بھی اللہ تعالی نے رمضان المبارک کے آخری عشرہ میں رکھی ہے ،جس کی عظمت و اہمیت کو اللہ تعالی نے خود قرآن کریم میں بیان فرمایا کہ یہ رات ایک ہزار راتوں سے افضل و بہتر ہے ۔یعنی اس رات کو عباد ت کرنے والے کو تراسی ّسال سے زائد عباد ت کرنے کا ثواب ملتا ہے ۔

مزید پڑھیں >>

اعتکاف: یہی وہ در ہے جہاں آبرو نہیں جاتی!

شریعت میں جس عبادت کے بھی کرنے کا حکم دیا گیا ہے، یا پھر جس عبادت کے کرنے پر حوصلہ افزائی کی گئی ہے؛ اس میں حکیم وخبیر پروردگار نےبڑی حکمت ودانائی بھی رکھی ہے۔اعتکاف بھی ایک قسم کی عبادت ہے۔ اعتکاف کی حکمت یہ ہے کہ معتكِف (اعتکاف کرنے والا) نماز باجماعت کا انتظار کرے، خود کو فرشتوں کے مشابہ بنانے کی کوشش کرے اور اللہ تعالی کا قرب حاصل کرے۔

مزید پڑھیں >>