پدم شری پروفیسر اخترالواسع

پروفیسر اخترالواسع (پ: ۱۹۵۱، علی گڑھ، اتر پردیش) عزت مآب صدر جمہوریہ کے ذریعےکمشنر براے لسانی
اقلیات مقرر کیے گئے ہیں۔ اس سے قبل آپ جامیہ ملیہ اسلامیہ، نئی دہلی کے شعبہ اسلامی مطالعات کے صدر نشین، فیکلٹی آف
ہیومینٹیز اینڈ لینگویجز کے ڈین نیز ذاکر حسین انسٹی ٹیوٹ آف اسلامی اسٹڈیز کے اعزازی ڈائرکٹر کے عہدوں پر فائز رہ چکے ہیں۔
پروفیسر واسع متعدد علمی جرائد بشمول ‘اسلام اینڈ دی ماڈرن ایج’ (انگریزی)، ‘اسلام اور عصر جدید’ (اردو)،  ‘اسلام اور
آدھونک یگ’ (ہندی)  اور ‘ماہنامہ جامعہ’ کے مدیر رہ چکے ہیں۔
اسلامی مطالعات میں پہلی مرتبہ اور جامعہ ملیہ اسلامیہ سے پروفیسر موصوف کو ۲۰۰۸ میں فل برائٹ اسکالرشپ کے لیے منتخب
کیا گیا۔ آپ متعدد غیر ملکی جامعات بشمول ٹیمپل یونیورسٹی فلاڈلفیا، زیویئرز یونیورسٹی سنسناٹی، ڈینور یونیورسٹی اور کیتھولک
یونیورسٹی واشنگٹن ڈی سی کی فیکلٹی سے وابستہ رہے ہیں۔
پروفیسر اخترالواسع نے ہندوستان اور بیرون ممالک میں متعدد خطابات دیے ہیں۔ ان میں میکگل انسٹی ٹیوٹ آف اسلامک
اسٹڈیز مونٹریال، لویولا یونیورسٹی شکاگو، سنسناٹی یونی ورسٹی، ہوفسٹرا یونیورسٹی نیو یارک، مالانگ یونیورسٹی انڈونیشیا اور پنجاب
یونیورسٹی لاہور میں ان کے خطابات قابل ذکر ہیں۔
پروفیسر موصوف کا شمارمطالعات اسلامی کے سرکردہ دانش وروں میں ہوتا ہے۔ آپ نے اسلام، مسلمان، تصوف اور عصری
مسائل پر قریباً ۳۰ کتابیں تصنیف، تالیف اور ترجمہ کی ہیں۔ علاوہ ازیں ہندی، اردو اور انگریزی زبانوں میں آپ نے قریباً ۵۰۰ مضامین بھی لکھے ہیں۔ آپ کی متعدد تحریریں عربی، فارسی اور فرانسیسی زبان میں بھی ترجمہ کی گئی ہیں۔
آپ ایک دہائی سے آپ بین الاقوامی شہرت کی حامل درگاہ حضرت خواجہ معین الدین چشتی اجمیر کے رکن، نائب صدر اور صدرنشین رہ چکے ہیں۔ یہ ہندوستان کی واحد صوفی درگاہ ہے جس کا انتظام و انصرام پارلیمنٹ کے ایکٹ کے تحت کیا جاتا ہے۔ آپ مرکزی وقف کونسل کے رکن بھی رہے ہیں اور مولانا آزاد ایجوکیشن فاؤنڈیشن کے خازن کی ذمہ داریاں بھی بحسن و خوبی انجام دے چکے ہیں۔ اس کے علاوہ آپ نے ماضی میں دہلی اردو اکادمی کی صدارت، اقلیتی تعلیم کی قومی جائزہ کمیٹی کی رکنیت نیز قومی کونسل براے فروغ اردو زبان میں مختلف حیثیتوں میں اپنی ذمہ داریاں ادا کی ہیں۔
پروفیسر واسع کی دلچسپی کے موضوعات سماجی اور سیاسی مسائل ہیں۔ آپ ساوتھ ایشیا انٹر ریلیجیئس کونسل آن ایچ آئی وی ایڈز کے جنرل سیکریٹری رہ چکے ہیں اور تا حال انڈیا انٹرفیتھ کوالیشن آن ایچ آئی وی ایڈز کے صدر نشین بھی ہیں۔ آپ بین مذہبی افہام و تفہیم میں بھی فعال کردار ادا کررہے ہیں۔
پروفیسر واسع کو متعدد بین الاقوامی اداروں کے ذریعے مختلف دانش ورانہ سرگرمیوں کے لیے مدعو کیا جاتا رہا ہے جن میں یونی سیف، یو این ڈی پی، یو این ایف پی، یو این ایچ آر سی اور منظمۃ التعاون الاسلامی (آرگنائزیشن آف اسلامک کوآپریشن)، مسلم ورلڈ لیگ مکہ، نہدۃ العلما اور محمدیہ، انڈونیشیا کے نام قابل ذکر ہیں۔
پروفیسر اخترالواسع کو ۲۰۱۳ میں ان کی ادبی و علمی خدمات کے اعتراف میں پدم شری کے اعزاز سے نوازا گیا۔



⋆ مضامین ڈیسک

مضامین ڈیسک