غزل – بزم دنیا کا تماشا نہیں دیکھا جاتا

ابراہیم اشکبزم دنیا کا تماشا نہیں دیکھا جاتا زندگی یوں تجھے رسوا نہیں دیکھا جاتاجب سے تنہائی کا احساس ہوا ہے مجھ کو کوئی دشمن بھی اکیلا نہیں دیکھا جاتاکوئی سچ بولنے والا بھی تو آگے آئے ہر طرف جھوٹ کا چرچا نہیں دیکھا جاتا…