اٹل بہاری واجپئی: میری یادیں، ان کی باتیں

  بحیثیت وزیر اعظم اٹل جی کی خدمات کو ہمیشہ یاد کیا جاتا رہے گا۔ وہ ایک ایسے ماہر سیاست داں تھے جو نرم روی کے ساتھ مشکل سے مشکل مسائل حل کر لیا کرتے تھے۔ اور اسی لئے ہر طبقہ فکر میں یکساں مقبولیت رکھتے تھے۔ ملک کو فرقہ پرستی کے دلدل سے…

شفاعت علی صدیقی: اردو ادب کا ایک اور ستون گرگیا

 چراغ علم و ادب جو لکھنؤ کی آبرو ہوا کرتے تھے، بجھتے جارہے ہیں۔ لکھنؤ خالی ہوتا جارہا ہے۔ شفاعت صاحب کے چلے جانے سے علم و ادب کا ایک چراغ اور بجھ گیا اب پچاس برس پہلے کے لکھنؤ کے بارے میں بتانے والے بس انگلیوں پر گنے جاسکتے ہیں۔

آہ! بھائی انضمام

اللہ تعالیٰ اس کی خطائوں کو معاف فرمائے اور اسے اس کی حسنات کی خلد بریں میں بلند مقام عطا فرمائے۔ آمین یاب العالمین۔قارئین کرام سے اپنے خصوصی تعلق کے واسطے سے بھی مغفرت اور ایصال ثواب کی درخواست ہے۔