تاریخ و سیرت

شہادت حسینؓ کا مقصد

 شہادت حسین رضی اللہ عنہ فی الحقیقت ، حق و صداقت ، آزادی و حریت، امر بالمعروف اور نہی عن المنکر کی ایک عظیم الشان انسانی قربانی تھی جو صرف اس لئے ہوئی کہ تاکہ پیروان اسلام کیلئے ایک اسوۂ حسنہ پیش کرے اور اس طرح جہاد حق و صداقت اور اس کے ثبات و استقامت ہمیشہ کیلئے ایک کامل ترین مثال قائم کرے، پس جو بے خبر ان کو رونا چاہئے اور جو روتے ہیں ان کو صرف رونے ہی پر اکتفا نہ کرنا چاہئے۔

مزید پڑھیں >>

شیر کی ایک دن کی زندگی!

میسور کے نام سے تقریباً قارئین واقف ہی ہونگے یہ ہندوستان کی ایک ریاست کا نام تھا مگر آجکل ایک جدید شہر کا نام ہے ۔دنیا اس شہر کے نام سے بہت اچھی طرح واقف ہے جسکی ایک اہم ترین وجہ وہاں کہ سلطان حیدر علی کے صاحبزادے فتح علی ہیں جنہیں دنیا ٹیپو سلطان کے نام سے جانتی ہے۔

مزید پڑھیں >>

شہادت : یہ رتبہ ٔبلند ملا جس کو مل گیا

ضروری ہے کہ شہادت کی عظمت کو سمجھیں اور شہداء کے مقام و مرتبہ کو جانیں ،شہادت کوئی غم والم یا نوحہ وماتم کی چیز نہیں بلکہ عظیم تر کامیابی اور ابدی حیات  کی علامت ہے ،یہ رشک و فخر کا ذریعہ ہے نہ کہ افسوس و غم کا سبب ہے ۔

مزید پڑھیں >>

ہندو مسلم اتحاد کے علمبردار: ٹیپو سلطانؒ

آج ہمارے برادران وطن کو ٹیپو کے تعلق سے جو غلط فہمیاں ہیں وہ انگریزوں کے ٹیپو اور اس کی جراء ت وہمت اور اس کی مذہبی رواداری اور ہندو مسلم اتحاد سے بعض وعناد اور اس کی وجہ سے اپنی حکومت سازی میں جو رکاوٹیں در پیش ہورہی تھیں ان کا سب کا نتیجہ تھا، جس کی رو میں بہہ کر اس عظیم مسلمان حکمراں اور سامراج کو ناکوں چنے چبوانے والے ملک کے سپوت کے تعلق زبان درازی کی کوشش یا تو یہ تاریخی حقائق سے عدم واقفیت یاتعصب ذہنی کی علامت ہے۔

مزید پڑھیں >>

کربلا اقوام عالم کے لئے مرکز اتحاد

 اگرآپ واقعہ کربلاکا تجزیاتی انداز میں مطالعہ کریں تو اس کے معنوی اقدار کے تناظر میں زندگی کی بہت سی حقیقتوں کا انکشاف ممکن ہے۔ لیکن کچھ حقیقتیں ایسی ہیں ،جو اس واقعہ کے فطری متون میں پوشیدہ ہیں۔ جن کا ادراک ایک متعین وقت کا متقاضی ہے۔ لیکن وقت کی بصیرتیں جب ان حقائق کے درمیان حائل حجابات کو چاک کریں گی تو دنیا کی آنکھیں حیرت واستعجاب سے پھٹ جائیں گی اور جاء الحق۔۔ ۔ ۔ ۔ کی قہرمان صدائیں ظالموں کے کلیجوں کوچیڑ کر رکھ دیں گی۔

مزید پڑھیں >>

حضرت عمر ؓ  کے دور میں قانون سازی

گنتی کے چند حکمران گزرے ہیں جو بذات خود قانون ساز تھے اور انہوں نے صرف حکمرانی ہی نہیں کی بلکہ انسانیت کو جہاں قانون سازی کے طریقے بتائے وہاں قوانین حکمرانی و جہانبانی بھی بنائے۔ ایسے حکمران انسانیت کااثاثہ تھے۔ امیرالمومنین حضرت عمر بن خطاب خلیفہ ثانی انہیں حکمرانوں میں سے ہیں جنہوں نے عالم انسانیت کو وحی الہی کے مطابق قوانین بناکر دیئے اور قانون سازی کے طریقے بھی تعلیم کیے۔ آپﷺ نے فرمایا تھا کہ میرے بعد اگر کوئی نبی ہوتاتووہ حضرت عمر ہوتے۔

مزید پڑھیں >>

واقعہ کربلا: دین کی بقا اور اسلام کی سربلندی

ایمان و محبت کا دعویٰ عمل کے بغیر صحیح نہیں حضرت امام حسین کے عمل کو دیکھیں اور عبرت حاصل کریں ۔دعا ہے کہ ہم سب کو اللہ ر ب العزت عبرت و نصیحت حاصل کرنے کی توفیق رفیق بخشے اور اللہ کے محبوب بندوں کے نقش قدم پر چلنے کی قوت عطافرمائے، قیامت کے دن نبین،صدیقین،شہدااور صالحین کے دامن کرم میں ہم سب کا حشر فرمائے اور حسینی کردار کو اپنانے کی توفیق عطا فرمائے۔

مزید پڑھیں >>

شہادت امام حسینؓ اور آج کا مسلمان

ہر لمحہ ، ہرساعت ، ہردن، ہر مہینہ، ہرسال اللہ کے پیدا کئے ہوئے ہیں لیکن اللہ تعالیٰ نے اپنے پورے سال کے بعض ایام کو خصوصی فضیلت عطا فرمائی ہے اور ان ایام کیلئے کچھ مخصوص احکام مقرر فرمائے ہیں ۔ یہ محرم کا مہینہ بھی ایک ایسا ہی مہینہ ہے جس کو قرآن کریم نے حرمت والا مہینہ قرار دیا ہے۔ اللہ تعالیٰ نے قرآن کریم میں فرمایا کہ چار مہینہ حرمت والے ہیں ان میں سے ایک مہینہ محرم کا ہے۔

مزید پڑھیں >>

حضرت امام حسینؓ کی عظیم شہادت

ضرورت اس بات کی ہے کہ حضرت اما حسین رضی اللہ عنہ کی شہادت کے حقیقی فلسفہ و حقیقت اور مقصد کو سمجھا جائے اور اس سے ہمیں جو سبق اورپیغام ملتا ہے اسے دنیا میں عام کیا جائے کیونکہ پنڈت جواہر لا ل نہرو کے بقول ’’ حسین کی قربانی ہر قوم کے لئے مشعلِ راہ و ہدایت ہے۔

مزید پڑھیں >>

اسلامی کلینڈر کا آغاز ہجرت کے سال سے

اسلامی سن کا آغاز امیر المومنین سیدنا عمر فاروق کے زمانےسے ہوا  ،جس کی بنیاد ہجرت کے سال کو بنایا گیا ہے۔ حالانکہ ہجرت کے علاوہ بہت ساری چیزیں تاریخ ساز تھیں جسے اسلامی سال کی یاد گار کے طور پر بنیاد بنائی جاسکتی تھیں ۔ لیکن اس کے باوجود ہجرت کے سال کو اسلامی تقویم کا محور قرار دینا یہ اس بات کی بین دلیل ہے کہ ہجرت مدینہ در اصل اسلام کی زراعت کو سبزہ زار بنانے میں جو مقام رکھتی ہے اتنا کوئی دوسری چیز نہیں۔

مزید پڑھیں >>