مذہبی مضامین

ترقی وکامیابی کے لئے صفاتِ صحابہ ؓ سے متصف ہونا ضروری !

صحابہ کرام ؓ کی سیرت کی روشنی میں ہمیں دنیا کے موجود ہ حالات کو بھی سمجھنا چاہیے کہ آج پوری دنیا میں مسلمانوں پر ظلم وستم ہورہا ہے، قیامت برپا ہے، برما میں بچوں کو ذبح کیا جارہا ہے،عورتوں کی عصمت دری ہورہی ہے، مردوں کا ختم کیا جارہا ہے، شام اور فلسطین کے حالات بھی نہایت الم انگیز ہے۔یہ تمام واقعات اور پرُدرد حالات ہمیں سبق دیتے ہیں کہ ہم صحابہ کرام ؓوالی صفات کو اپنے اندر پیدا کریں، ان کے اخلاق وکردار ہمارے اندر آئیں،

مزید پڑھیں >>

انقلاب کا اسلامی تصور! (دوسری قسط)

جب ہم کسی تہذیب کو نقد صحیح کے معیار پر جانچنا چاہیں تو ہمارے لیے اُس کے نصب العین کی جستجو ناگزیر ہے۔اس موقع پر یہ بات واضح رہنی چاہیے کہ تہذیب کے نصب العین سے ہماری مراد کیا ہے؟یہ ظاہر ہے کہ جب ہم 'تہذیب'کا لفظ بولتے ہیں تو اس سے ہماری مراد افراد کی شخصی تہذیب نہیں ہوتی بلکہ ان کی اجتماعی تہذیب مراد ہوتی ہے۔اس لیے ہر فرد کا شخصی نصب العین ،تہذہب کا نصب العین نہیں ہوسکتا۔

مزید پڑھیں >>

اسلامی کلینڈر کا آغاز ہجرت کے سال سے

اسلامی سن کا آغاز امیر المومنین سیدنا عمر فاروق کے زمانےسے ہوا  ،جس کی بنیاد ہجرت کے سال کو بنایا گیا ہے۔ حالانکہ ہجرت کے علاوہ بہت ساری چیزیں تاریخ ساز تھیں جسے اسلامی سال کی یاد گار کے طور پر بنیاد بنائی جاسکتی تھیں ۔ لیکن اس کے باوجود ہجرت کے سال کو اسلامی تقویم کا محور قرار دینا یہ اس بات کی بین دلیل ہے کہ ہجرت مدینہ در اصل اسلام کی زراعت کو سبزہ زار بنانے میں جو مقام رکھتی ہے اتنا کوئی دوسری چیز نہیں۔

مزید پڑھیں >>

اظہارِ غم اور اسلامی تعلیمات

تکلیف اور غم کے حالات انسان کو پیش آئیں گے ایسے موقع پر صبر و استقامت کے دامن کو تھامے رکھنا اورزبان پر حرفِ شکایت نہ لانا اور غیر شرعی اعمال و حرکات سے بچتے ہوئے اسلامی حدود کی پاسداری کرنا ایک سچے اور حقیقی مومن کی علامت ہے، اس کے برخلاف غم کے اظہار کے لئے تھوڑی دیر خاموش رہنا‘ جھنڈے سرنگوں کرنا،سیاہ پٹیاں باندھنا،نوحہ کرنا، چلاّ چلاّ کر رونا، گریباں چاک کرنا، سینہ ٹھوکنا، گال نوچنا، اپنے کو زخمی کرنا، چوڑیاں توڑنا، ماتمی دھن بجانا وغیرہ ناجائز اور حرام ہیں.

مزید پڑھیں >>

نئے ہجری سال کا استقبال کیسے کریں؟

آج جب کہ نیا اسلامی اور ہجری سال شروع ہوچکا ہے، ایک بار پھر سے نزول قرآن، بعثت نبوی، آمد خاتم الانبیاء والمرسلین اور دین اسلام پہ جان ودل قربان کرنے والے عظیم المرتبت صحابہ کرام جن سے اللہ راضی ہوئے اور وہ اللہ سے، کی عظیم تاریخ اورتاریخ کے سنہرے اوراق نظروں کے سامنے آگئے۔

مزید پڑھیں >>

کم سنی کی شادی اور اسلام : ایک تجزیا تی مطالعہ

انہوں نے کہا کہ کم عمری میں شادی سے لڑکیاں نہ صرف تعلیم کے مواقع حاصل کرنے سے محروم رہ جاتی ہیں، بلکہ کم عمری میں حمل اور زچگی سے ان کی زندگی کو بھی خطرہ لاحق ہوجاتا ہے۔سیو دا چلڈرن انٹرنیشنل کی چیف ایگزیکٹیو ہیلے تھورننگ شمٹ کا رپورٹ کے حوالے سے کہنا تھا کہ ’کم عمری میں شادی سے ناموافق صورتحال کا ایک سلسلہ شروع ہوجاتا ہے، جس سے لڑکیوں کے سیکھنے، نشوونما پانے اور بچے رہنے جیسے بنیادی حقوق کی پامالی ہوتی ہے۔‘

مزید پڑھیں >>

محرم الحرام اور عاشوراء کا روزہ

مہینوں کی گنتی اللہ کے نزدیک کتاب اللہ میں بارہ کی ہے ، اسی دن سے جب سے آسمان وزمین کو اس نے پیدا کیا ہے ، ان میں سے چار حرمت وادب کے ہیں۔ یہی درست دین ہے۔ تم ان مہینوں میں اپنی جانوں پر ظلم نہ کرواور تم تمام مشرکوں سے جہاد کرو جیسے کہ وہ تم سب سے لڑتے ہیں اور جان رکھو کہ اللہ تعالی متقیوں کے ساتھ ہے۔

مزید پڑھیں >>

ہجری کیلنڈر: جسے مسلمانوں نے فراموش کردیا

سچ یہ ہے کہ جب کوئی قوم ضعف کا شکار ہوتی ہے تو وہ اسی طرح اپنے شعائر کو پس پشت ڈال دیتی ہے۔مشرق سے مغرب تک ، شمال سے جنوب تک مسلمان غیروں کی اتباع میں حد سے گذر گئے ہیں اور یوں اللہ کے رسول کی پیشین گوئی سچ ثابت ہورہی ہے کہ’’ تم اپنے پہلے لوگوں کی ضرور بالضرورشانہ بشانہ اتباع کرو گے یہاں تک کہ اگر وہ گوہ کے سوراخ میں بھی داخل ہوں گے تو تم بھی اس میں داخل ہوجاؤ گے

مزید پڑھیں >>

قرآن حفظ کرنے والی خواتین کو نصیحت

اسلام ہی ایک ایسا مذمب ہے جس کی مذہبی کتاب قرآن کے حافظ بے شمار تعداد میں ہرجگہ پائے جاتے ہیں اور کسی مذہب کے اندر مذہبی کتاب اس قدر حفظ کرنے کی مثال نہیں ملتی۔ کفاراسلام دشمنی میں قرآن جلاسکتے ہیں ، دوچار حفاظ کو شہید کرسکتے ہیں مگرلاکھوں کروڑوں  حفاظ کے سینوں سےاسے  نہیں نکال سکتے۔ یہ اللہ کا مسلمانوں پر خاص فضل وکرم ہے۔

مزید پڑھیں >>

کیا حرم کا تحفہ زمزم کے سوا کچھ بھی نہیں؟

ہر آدمی یہ بات بہ خوبی جانتاہے کہ کوئی بھی اچھا یا بُراعمل اپنے اندر ایک تاثیر رکھتاہے اور سنت اللہ بھی یہی ہے کہ انسان کے جملہ اعمال اختلافِ نوعیت کے ساتھ ترتب ِ احوال کا ذریعہ ہوتے ہیں ؛ صحت ومرض، نفع ونقصان، کامیابی وناکامی، خوشی وغمی، بارش وخشک سالی، مہنگائی وارز انی، بدامنی ودہشت گردی، وبائی امراض، زلزلہ، طوفان، سیلاب وغیرہ، یہ سب ہمارے نیک وبد اعمال کا نتیجہ ہوتے ہیں ۔

مزید پڑھیں >>