مذہب

جانوروں کے خون سے علاج 

ان دونوں آیات کا مطلب یہ ہوا کہ انسان کے لئے کسی قسم کا بہنے والا خون حلال نہیں ہے اس لئے کبوتر کے خون سے فالج کی بیماری کا علاج کرنا جائز نہیں ہے حالانکہ کبوتر کا گوشت اپنی جگہ کھانا حلال ہے مگر اس کا بہتا ہوا خون حلال نہ ہونے کی وجہ سے اس سے علاج کرنا جائز نہیں ہے خواہ علاج کا طریقہ کھانے یا پینے یا ملنے (لگانے) جیساکہ ہو۔

مزید پڑھیں >>

سورۂ اخلاص تہائی قرآن کے برابر ہے!

توحید، رسالت اور آخرت۔ دین اسلام کے تین اہم ترین عقاید ہیں، سورۂ اخلاص عقیدہ ٔ توحید کوبیان کرتی اور وحدت ِ ِمعبود کے اصول تا قیامت طے کرتی ہے، اس کے ساتھ ساتھ یہ چار آیات مبارکہ پر مشتمل سورت ادیان باطلہ اور عقائدِ فرقِ ضالہ کا ردبھی کرتی ہے، اور بتاتی ہے کہ اللہ تعالیٰ کے سوا تمام معبود باطل، شیطان کی پھیلائی ہوئی گم راہی اور انسانی خواہشات کی ایجادہیں اور ان کے نام بھی اسی شیطان کے دیے ہوئے ہیں۔ ذیل میں احادیث ِمبارکہ کی روشنی میں اس عظیم سورت کے فضائل ذکر کیے جاتے ہیں، جس کی تلاوت کا ثواب ایک تہائی قرآن یعنی تقریباً 2022آیات کی تلاوت کے برابرہے، جس سے محبت کرنے والو ں کو جنت اوراللہ تعالیٰ کی محبت اور دوستی کی بشارت دی گئی ہے

مزید پڑھیں >>

نئے عیسوی سال کی آمد اور قابل توجہ چند امور

ہرقوم اپنے کلینڈر کے حساب سے نئے سال کے پہلے دن کی بڑی اہمیت دیتی ہے  اور اس دن کو بڑی دھوم دھام سے منایا جاتا ہے۔ حالانکہ یہ نیااور پہلا دن بھی دوسرے ایام سے کچھ الگ نہیں ہوتا۔ ایسا نہیں ہے کہ نئے سال کے پہلے دن میں صرف خوشی ہی خوشی ہوتی ہے۔ دیکھا جاتا ہے غم میں ڈونے لوگ آج بھی غمگین ہی ہوتے ہیں۔ نئے سال پہ بھی لوگوں کو موت آتی ہے۔ اکسڈنٹ ہوتا ہے۔ مصائب و مشکلات پیش آتے ہیں پھر آج کے دن خوشی کے طور پہ منانے کا سبب و محرک کیا ہے ؟

مزید پڑھیں >>

ایان نام رکھنا کیسا ہے؟

نام رکھنے کے لئے سماج میں ایک عام طریقہ رائج ہے وہ یہ ہے کہ کوئی ایک لفظ لے لیتے ہیں اور لوگوں سے اس لفظ کا معنی پوچھتے ہیں۔ اگر معنی خوبصورت ہوا تو نام رکھ لیتے ہیں۔ سوشل میڈیا کی ترقی کی وجہ سے ابھی ایک دوسرا طریقہ ایجاد ہوا ہے و ہ یہ ہے کہ گوگل یا کسی ویب سائٹ سے ناموں کی لسٹ دیکھ کرخوبصورت معنی والا نام پسند کرلیتے ہیں جبکہ اس میں معنوی اور اعتقادی بہت ساری غلطیاں ہوتی ہیں۔

مزید پڑھیں >>

قرآن حکیم کا سمجھ کر پڑھنا ہی مطلوب ہے! 

قرآن کریم عالم انسانیت پر نازل ہونے والی اللہ کی نعمتوں میں سے ایک عظیم نعمت ہے۔ یہ وہ نسخہ کیمیا ہے جس کے ذریعہ انسان نہ صرف یہ کہ اپنے خالق حقیقی کی معرفت حاصل کرسکتا ہے بلکہ اپنے وجود کے حقیقی مقاصد کو بھی پہچان سکتا ہے۔ وہ یہ جان سکتا ہے کہ اس کے لئے کامیابی اور نجات کی راہ کون سی ہے اور کس طرز حیات کو اختیار کرنے میں اس کی دنیوی و اخروی ذلت و رسوائی اور ناکامیابی ہے۔ اسی لئے اللہ رب العزت نے اسے کتاب ہدایت قرار دیاہے۔

مزید پڑھیں >>

انسانی فطرت اورقرآن (آخری قسط)

بے شک بہت سے لوگ اللہ تعالیٰ کی آیتوں سے غافل ہیں اوران پر توجہ نہیں دیتے۔ نہ اسے یاد کرتے، نہ اس کی آیات پر غوروفکر کرتے ہیں۔ وہ اللہ تعالیٰ کی نعمتوں کے مزے لوٹتے ہیں اور باقی سب کچھ فراموش کردیتے ہیں۔ اس کی جنت و جہنم اورحساب و عذاب کے بارے میں نہیں سوچتے۔ اللہ تعالیٰ کی نعمتوں سے فیض یاب ہوتے ہیں لیکن اس کی نافرمانی کرتے اور اس کے ذکر و اطاعت سے اعراض کرتے ہیں اور اکثر لوگوں کی عمر سی غفلت میں گزر جاتی ہے۔

مزید پڑھیں >>

روئے زمین پر اللہ کی دو ضمانتیں

ایک ضمانت چلی مگر اللہ کی ایک ضمانت ابھی بھی روئے زمین پرباقی ہے وہ ہے مومنوں کا استغفار کرنا۔ جو بدعتی ہیں وہ بدعت سے توبہ کرلیں اور کثرت سے استغفار کریں، جو بد چلن ہیں وہ اپنے گناہوں سے توبہ کرلیں اور بکثرت اللہ سے استغفار کریں اور جو کفر ومعاصی میں ڈوبے ہوئے ہیں وہ اپنے ایمان کی اصلاح کریں، عمل صالح انجام دیں اور استغفار کو لازم پکڑیں۔ اللہ تعالی استغفار کی بدولت ہم سے عذاب ٹال دے گا۔ آج کل پوری دنیا میں مسلمانوں کے حالات بہت ناگفتہ بہ ہیں، ان حالات میں من مانی، نفسانی خواہشات اور بے دینی وخرافات چھوڑ کراللہ کی کتاب اور سنت رسول اللہ کی طرف رجوع کرنا، اپنے اعمال درست کرنا اور توبہ واستغفار کو لازم پکڑنا نہایت ضروری ہے۔

مزید پڑھیں >>

گرم پانی سے وضو  اور غسل کا حکم

ٹھنڈی کے موسم میں گرم پانی اور گرمی کے موسم میں ٹھنڈا پانی میسر ہونااللہ کی نعمت میں سے ہے، اس پہ اللہ کا شکر بجا لانا چاہئے۔ پانی ٹھنڈ یا گرم ہونا یہ موسم کی طبیعت پہ ہے، موسم سرد ہوا تو پانی سرد ہوجائے گا اور گرم موسم سے پانی گرم ہوجائے گا۔ اللہ نے بندوں کو ایسی سہولت میسر کی کہ موسم کے ٹھنڈے پانی کو مختلف طریقوں سے گرم کرلیتے ہیں اور طبعی گرم پانی کو سرد بناکر اللہ کی اس بیش قیمت نعمت سے محظوظ ہورہے ہیں۔

مزید پڑھیں >>

کیا تصورِ خدا فقط انسانی ذہن کا کرشمہ ہے؟

مارکس خدا کو نہیں مانتا تھا۔ وہ مذہب کو ’’عوام کے لیے افیون‘‘ کہتاتھا۔ خیر! بات لمبی ہوگئی۔ اس ساری گفتگوسے میری مراد فقط اتنا ثابت کرناہے کہ انکار کی روایت یعنی ملحدانہ نظریات، تصورِ خدا کی تلخیص کے لیے نہایت ضروری ہوتے ہیں جو سب سے پہلے کسی نہ کسی ریفارمر کی بدولت معاشرے میں داخل ہوتے ہیں اور ضرور معاشرے میں پہلے سے موجود خداؤں کے انکار پر منتج ہوتے ہیں۔

مزید پڑھیں >>

قرآن اور  حضورؐ کی حیات طیبہ لازم و ملزوم ہیں

 کسی نے سچ کہا ہے کہ قرآن اور عملی قرآن یعنی حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی حیات طیبہ آپس میں لازم و ملزوم ہیں ۔ جس نے حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کو نہیں دیکھا وہ قرآن کو دیکھ لے لیکن جنہوں نے پورا قرآن نہیں دیکھا تھا ان کیلئے حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم ہی کافی تھے۔

مزید پڑھیں >>