یہ نفرت صرف مسلمانوں سے نہیں ۔ بلکہ

اسلام اور مسلمانوں کے خلاف نفرت وتعصب کے تسلسل سے ایسا لگتا ہے کہ یہ کسی بڑی سازش کا حصہ ہیں ۔  اگر عالمی منظر نامے پر نظر ڈالیں تو اندازہ ہوتا ہیکہ ہر روز کہیں نہ کہیں مسلم کمیونٹی کے ساتھ نا انصافی یا ناروا سلوک اپنایا جاتا ہے۔ جان و مال…

اردو ادب میں تقابل ادیان کا فروغ: قومی یکجہتی کی علامت

فوری طور پر ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو اپنے کردار وعمل سے فروغ دیں۔ اور اس کے لئے کوئی بھی صورت ہو اختیار کی جائے، معاشرہ سے فرقہ پرستی وتنگ نظری کا قلع قمع کرکے لئے  فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی خوشگوار روایت کو پروان…

محبت پر مبنی ادب کو فرغ دینے کی ناگزیر ضرورت ہے!

ہندوستان میں بڑھتی تنگ نظری اور تعصب و عناد کی بنیاد پر چند مٹھی بھر عناصر نے جو ہندو مسلم سماج میں تفریق و انتشار کی دیوار کھڑی کر رکھی ہے وہ خلیج بھی کم ہوگی اور  یہ کتا ب باہم  سماجی ہم آہنگی کے لئے سنگ میل ثابت ہوگی۔

علی گڑھ مسلم یونی ورسٹی کا تعلیمی معیار 

ایک طرف ملک میں دانشگاہ کو بدنام کرنے کے لئے ہر طرح کی سازشیں ہورہی ہیں اور اس کے شفاف رخ کو حاسدین و متعصبین مخدوش ومجروح کرنے کے لئے کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دے رہے ہیں وہیں تصور بھی پیدا ہوتا ہیکہ ملک میں ایک طبقہ ایسا ہے جو حق و…

ہندوستان میں اقلیتوں کا استحصال اور ہماری ذمہ داری

ہندوستانی سماج کو مضبوط و مستحکم کرنے کے لئے باہم مرکزیت ویکجائیت اور بھائی چارگی کو فروخ دیناانتھائی ضروری ہے اور یہ اسی وقت ممکن ہے کہ جب اخلاص کے ساتھ ذاتی مفاد کو بالائے طاق رکھ کر ملک و ملت کی خدمت کا جذبہ عوام اور خواص سب میں جاگزیں…

کیا اب بھی پردھان سیوک کا جادو برقرار ہے؟

اگر اس مرتبہ ہم نے کسی بھی طرح کی دانستہ یا غیر دانستہ غلطی کی تو پھر اس کا انجام واضح ہے؛ سیکولر برادری کی یکجائیت اس لئے بھی لازمی ہے کہ بارہا  نام نہاد سیکولر اقدار کے محافظوں نے  جن مکروہ خیالات  کا اعلان واظہار کیا ہے  وہ ملک کی صدیوں…

حکمراں جماعت کے وعدوں کو عوام دیکھتی رہ گئی 

آخر میں یہ عرض کرنا چاہتا ہوں کہ شر پسند عناصر نے ملک میں جس طرح جمہوری قدروں کو ارباب سیاست کی سرپرستی میں پامال کیاہے ان شفاف اور پاکیزہ اوصاف کو بحال کرنے کی ضرورت ہے نیز اس بات کی بھی ضرورت ہے کہ ہندوستان کا ہر شہری ملک کی تمام اقدارو…

پروفیسر اختر الواسع کے افکار کی عصری معنویت

ناچیز کے پاس وہ الفاظ ہیں   ایک عظیم مفکر؛  معتبر دانشور معروف اسلامی اسکالر کی خدما ت نوک قلم پر لاسکوں؛  اگر تمام علمی اور قومی خدمات کا احاطہ کیا جائے تو  کئی سو صفحات  پر مشتمل  ایک کتاب تیار ہوجائے گی۔آخر میں   یہی عرض ہیکہ اگر…

سیکولر اقدار کا تحفظ ہر شہری کی ذمہ داری ہے

جس طرح ہندوستان میں  انتخابی ریلیوں سے خطاب کرتے وقت  الفاظ کا خیال  عموما نہیں رکھا جاتا ہے؛  کچھ لوگوں کا تو یہ وطیرہ بن چکا ہے کہ وہ نفرت آمیز زبان استعمال کرکے اپنے آپ کو سخت گیر ہندو لیڈر کے طور پر پیش کرتے ہیں ابھی حال ہی میں مدھیہ…

ملک کی ترقی کے تئیں سب کے ساتھ یکساں سلوک

یہ ملک کسی خاص طبقہ کی وراثت نہہں ہے بلکہ اس میں سب کی ساجھےداری برابر ہے۔  آزادی کے تئیں جو قربانیاں مسلمانوں  نے دی ہیں ان کو صفحئہ تاریخ سے کبھی بھی نہیں مٹایا جا سکتا ہے۔ مگر اب ملک میں مسلمانوں کے تہذیبی اور تاریخی ورثے کو خرد برد کیا…

سیکولر اتحاد کی سیاسی حیثیت

افسوس اس بات کا ہے کہ  ملک میں آئے دن ایسے خطرناک بیانات کا سلسلہ جاری رہتا ہے مگر حکومت خاموش تماشائی بنی رہتی ہے۔ تصور کیجئے جب وطن عز یز میں سماج دشمن عناصر عدالت کی توہیں کرنے پر آمادہ ہوں اور ان کے خلاف کوئی ایکشن نہ لیا جائے تو…

سر سید کے افکار کی عصری معنویت

سر سید نے تعلیم کو فروغ دینے اور ملت اسلامیہ ہند کو فوزو فلاح تک پہنچانے کے لئے ابتداء میں مدرسة العلوم مسلمانان ہند کے نام سے ادارہ قائم کیا جو بعد میں کالج ہوا اور اب دنیا میں علیگڑہ مسلم یونیورسٹی کے نام سے جانا جاتا ہے -

ہندوستانی سماج کی ترقی بھائی چارگی میں مضمر ہے!

اس بات کی بھی سخت ضرورت ہے ہیکہ ملک میں افہام و تفہیم پر زیادہ زور دیا جائے تاکہ ہندوستانی سماج میں ایک دوسرے کے لئے نفرت نہیں بلکہ محبت کی فضا ہموار ہوسکے جب ملک میں امن؛  سکون  اور محبت کا فروغ ہوگا تو یقینا ہندوستا ن مضبوط و مستحکم ہو…

جمہوریت  کا تحفظ اور ہماری ذمہ داری

اس وقت ہندوستان میں زعفرانی طاقتوں کا بول بالا ہے، گزشتہ چار برسوں میں ملک نے جو سیاہ دن دیکھے ہیں وہ ہندوستانی عوام کبھی نہیں بھلا پائے گی۔ حکمراں جماعت کے ایجنڈوں اور منصو بوں کا بغور جائزہ لیا جائے تو یہ اندازہ لگانا چنداں مشکل نہیں ہے…

مسلم اقلیت جمہوریت کی پہچان ہے!

  شرمناک بات یہ ہیکہ   ہمارے سماج کا اب یہ وطیرہ بن گیا ہے کہ اگر کہیں کوئی غیر انسانی حرکت کیجاتی ہے تو اگلے دن اخبارات میں تمام سیاسی رہنما؛  سماجی کارکن اور مذہبی قائد اپنے خیالات کا اظہار کرکے رستگاری حاصل کرلیتے ہیں؛ اور سمجھتے ہیں کہ…

مسلمانوں کو ساتھ لے کر چلنے کی بات ہی تو سیکولرزم ہے! 

  میرا سوال ان لوگوں سے ہے جو بی جے پی کو ہندؤں کی پارٹی قرار دیتے ہیں تو کوئی بھی ان سے یہ نہیں پوچھتا کہ ملک میں دیگر طبقات بھی سکونت پذیر ہیں اس لئے کسی بھی سیاسی جماعت کو کسی ایک طبقہ کی نمائندگی کرنا ٹھیک نہیں ہے؛  بلکہ ملک کی سچی…

شرعی عدالتوں کی نہیں، تعلیمی اداروں کی ضرورت ہے! 

ہندوستان میں  سیکولر اقدار کا تحفظ کرنا ہر انسان کی قومی وملی ذمہداری ہے اس لئے ضرورت اس بات کی ہیکہ کسی بھی طرح کا جذباتی بیان نہ دیا جائے، کیونکہ ا س سے ہندوستان کے امتیاز و تشخص پر آنچ آنے کا خطرہ ہے  اور اس کا نقصان ملک کے ہر شہری کو…

علی گڑہ مسلم یونی ورسٹی میں دلت رزرویشن کا شوشہ 

آج ضروت اس بات کی ہے کہ ملک میں ایسی جدوجہد ہو جو ملک کے تانے بانے کو مضبوط و مستحکم کرسکے اور ایسے لوگوں کی باتوں پر قطعی دھیان نہ دیا جائے جو ملک میں تقسیم وتفریق کی فضا ہموار کرتے ہیں، کیونکہ ملک و سماج کی ترقی کا خواب یکجتی کے بغیر…

حکمراں جماعت کے چار سالوں کا حشر

آزادی کو تقریبا ستر سال ہوچکے ہیں اس بیچ عوام نے کئی  سیاسی  جماعتوں کو  اقتدار سونپا ہے، جنہوں نے ملک کی تعمیرو ترقی کے لئے اپنے مخصوص فکری زاویئہ کے مطابق جتن کئے ہیں، مگر یہ بھی حقیقت ہے  کہ آزادی کے بعد سے اب  تک حکمراں جماعتیں   وطن…

فلسطینی عوام پر مظالم  کا سدّ باب ضروری ہے!

 امریکہ اور اسرائیل کی اس طرح کی اسلام مخالف سرگرمیاں کوئی نئی بات نہیں ہے صیہونی طاقتوں نے اپنی روزی روٹی کی بنیاد  اسلا م دشمنی پر کھڑی کر رکھی ہے آئے دن وہ اسلام کے خلاف نئے زاویے اور طریقہ اپنا رہے ہیں مگر ان کے دفاع میں ہمارا کیا وطیرہ…

وطن عزیز میں نفرت کی نہیں محبت کی ضرورت ہے!

 دنیاکے بڑےبڑے اخبارات ہندوستان میں بڑھتی ہوئی نفرت کو اپناادارتی موضوع بنارہے پیں اور ملک کی سیکولر  اقدار پر مسلسل حملے سے تشویش کا اظہار کرہے ہیں ؛ لہذا ایسے نازک حالات میں ضرورت اس بات کی ہے کہ آپسی بھائی چارگی کو فروغ دیں؛  اور پھونک…

علی گڑھ مسلم یونی ورسٹی کو سیاست گاہ مت بناؤ

جب سے ملک میں سیکولر طاقتیں کا اثر کم ہوا ہے تب سے جگہ جگہ فسطائیت کا گھناؤنا روپ پروان چڑھا ہے اور ہندو مسلم نفرت کو بھی بڑھا وا دیا گیا ہے، ملک  کی ساجھی روایت باہمی اتحاد کو  آئے دن فرقہ پرست طاقتیں نئے نئے شگوفے چھوڑ کر مخدوش و مجروح…

مؤثر حکمت عملی کی ضرورت ہے

آج مسلمانوں کو  سب سب سے زیادہ نقصان اس کی غیر شعوری حرکتوں اور غیر دانشمندانہ اقدام کی وجہ سے ہو رہا ہے،اگر مسلم قوم مسلکی تنازع جیسی بیماری سے نجات پاکر اپنی مرکزئیت اور یکجائیت ک امظاہرہ کرے تو یقین جانئے مسلمانوں کی صورت حال کچھ اور…

ہندوستان میں مسلمانوں کا سیاسی مستقبل

آصفہ کے مجرموں کو جلد از جلد کیفر کردار تک پہنچیا جائے ساتھ ہی ان شریروں کو بھی سخت  ترین اذیت دیجائے جو ان حیوانوں کی حمایت میں ترنگا لہرا کر احتجاج کرہے ہیں اسی طرح عناؤ اور دیگر واردات کے سلسلہ.میں حکومت سنجید گی سے کا م کرتے ہوئے اس…

کون کر رہا شام کی سرپرستی؟

 اس صداقت سے روگردانی نہیں کیجا سکتی ہے کہ  سُپر پاور۔ امریکہ نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادکے برعکس اور اجازت کے بغیر 2003میں عراق پر حملہ کیا اور ھر وہاں جو کچھ ہو وہ کسی کی نظروں سے مخفی نہہں ہے ان گنت افراد کو تختئہ مشق…

تعلیم کا مقصد صالح معاشرہ کی تشکیل ہے!

مدارس کے ارباب و حل و عقد کو چاہئے کہ وہ اس سمت اپنی دلچسپی کا مظاہرہ کریں جب مدارس کے فضلاء دنیا کے دیگر شعبوں میں حصہ.لین گے تو یقین کے ساتھ کہا جا سکتا ہے کہ آج جن محکموں میں کرپشن اور دیگر برائیوں مجسمہ ہیں   وہاں سے تمام برائیوں کا…