صحت

وبائی امراض اور اسلامی تعلیمات

معتبر تحقیقات کے مطابق دنیا بھر میں ایک لاکھ سے زائد بیماریاں ایسی ہیں ؛جو بنی نوع انسانی کو کمزورکرنے اور رفتہ رفتہ انہیں موت کے منہ میں ڈھکیلنے کا کام کررہی ہیں، اسباب کے درجے میں بہت سی مرتبہ ماحولیاتی آلودگی اور فضا میں گردش کرنے والے جراثیم ؛جومختلف ذرائع سے انسانی جسم میں داخل ہو جاتے ہیں بیماری کی وجہ بنتے ہیں، کبھی انسان کا طرز زندگی بہت سی بیماریوں کو جنم دیتا ہے اور لا تعداد امراض بڑھتی ہوئی عمر میں انسان کو جکڑ لیتے ہیں۔

مزید پڑھیں >>

دورحاضرمیں بھی مقبول ہوتا قدیم طریقہ علاج حجامہ!

حجامہ سے علاج کا طریقہ 3000 سال قبل مسیح سے بھی پرانا ہے۔اس طریقہ علاج کا ذکرEbers Papyrus   نامی کتاب میں بھی ہے جو 1550 قبل مسیح کی مشہور طبی کتاب ہے۔قا بل ذکر ہے حجامہ ہزاروں سال پرانا طریقہ علاج ہونے کی وجہ سے اس میں ہزاروں سال کے تجربات بھی شامل ہیں ۔

مزید پڑھیں >>

سوائن فلو کے چیلنجز: اسباب اورعلاج

سوائن فلوایک جان لیوا بیماری ہے اوراس سے بچنے کیلئے مندرجہ ذیل احتیاطی تدابیر اپنانی چاہئیں۔ سوائن فلو کا شکارمریض جن میں مرض کی ابتدائی علامات ظاہر ہورہی ہوں انہیں ورزش کرنی چاہیے اورگہرے سانس لینا چاہیے۔ ذہنی پریشانی اورتناؤ سے خود کو دور رکھنا چاہیے اورمریض کو چاہیے کہ اپنی غذا میں میٹھے کا استعمال ترک کردے۔

مزید پڑھیں >>

لائف اسٹائل ڈزآرڈر سے لاحق بیماریا ں اور چیلنجز

دور حاضر میں مغربی طرز معاشرت کی نقالی اور خورد نوش میں چائینز فوڈکے علاوہ فاسٹ فوڈ کے بڑھتے ہوئے استعمال نے بظاہر ہینڈسم اور صحتمند دکھائی دینے والے انسان کو اندر سے یکسر کھوکھلا بناکر رکھ دیا ہے۔انہیں عادتوں کی وجہ سے ہمارا جسم پیچیدہ اور سنگین امراض کا خزانہ بن چکا ہے ۔

مزید پڑھیں >>

ایمونائزیشن کیوں ضروری ہے؟

ملک کا مستقبل اس کے نونہالوں پر ٹکا ہوتا ہے۔ نئی نسل جتنی تندرست اور مضبوط ہوگی، ملک بھی اتنا ہی ترقی کرے گا۔ ترقی یافتہ ممالک اس کی مثال ہیں ۔ انہوں نے بچپن میں ہونے والی بیماریوں سے اپنے شیرخواربچوں کی حفاظت کی، اس لئے وہ دوسرے ممالک سے آگے نکل گئے۔ پیدائش اور اس کے بعد ہونے والے امراض سے بچوں کی حفاظت ٹیکہ کاری کے ذریعہ ممکن ہے۔ یہ ثابت ہوچکا ہے کہ ایمونائزیشن دنیا بھر کا آزمایا ہوا کفایتی اور انتہائی مؤثر طریقہ ہے۔

مزید پڑھیں >>

یہ 60 اموات سوال ہیں، پر کہاں پوچھیں یہ سوال؟

گورکھپور کے ہسپتالوں میں آکسیجن کی کمی کی وجہ سے 5 دن میں ہوئی 60 بچوں کی موت کا واقعہ پر ملک كھول اٹھا ہے. ہر کوئی حکومت سے سوال پوچھنا چاہتا ہے. اس لچر نظام میں مکمل تبدیلی چاہتا ہے. سوالات، الزام، غصے اور جذبات کے درمیان اصلیت یہ ہے کہ ان بچوں کی موت میں میرا، آپ کا، ہم سب کا ہاتھ ہے. ہم نے اپنے آپ سے، ایک دوسرے سے سوال پوچھنے کے سب سے اہم حق کو چھین لیا ہے.

مزید پڑھیں >>

دنیا کی سب سے بڑی ٹیکہ کاری مہم

مرکزی وزارت صحت وخاندانی بہبود میں  ٹیکہ کاری معاملوں  کے ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر پردیپ ہلدر کا کہنا ہے کہ روبیلا پندرہ سال تک کے بچوں  کیلئے زیادہ خطرناک ہے۔ ایک روبیلا انفیکٹڈ بچہ آس پاس کے 80-95 فیصد بچوں  تک یہ وائرس پہنچا سکتا ہے۔ مہم کے تحت پانچ سال تک کی عمر کے قریب ایک تہائی بچوں  کی موت کو ٹیکہ کاری کے ذریعہ روکا جائے گا۔

مزید پڑھیں >>

اگست ستمبر میں فلو کے خطرات اور ہماری ذمہ داریاں

مورخہ07ا گست2017کو  اخبارات میں خبریہ نمایاں رہی کہ’اس سال برسات کا موسم آنے کے ساتھ ہی دہلی میں گزشتہ ایک ہفتے کے دوران ڈینگو کے معاملات بڑھ کر 185 تک پہنچ گئے ہیں ،جبکہچکن گنیا کے 45 نئے معاملے بھی سامنے آئے ہیں۔

مزید پڑھیں >>

نشے سے انکار زندگی سے پیار

منشیات کا نوجوان نسل میں استعمال بہت خطرناک حد تک بڑھ چکا ہے کچھ لوگ تو اسے بطور فیشن اپناتے ہیں اور بعد ازاں اس کے عادی ہو کر ہمیشہ کے لئے اس لعنتی طوق کو گلے میں ڈال لیتے ہیں اپر کلاس ،مڈل کلاس ،لوئراپر کلاس کے لوگ بھی اس کو بکثرت استعمال کرتے ہیں ۔شاید یہی وجہ ہے کہ ملک میں منشیات کا استعمال روز بروز بڑھ رہا ہے۔

مزید پڑھیں >>

مسیحا بنے قاتل!

آج ایک طبیب فن طب حاصل کرنے کے لئے ایک کروڑ سے زائد روپیے خرچ کرتا ہے ،محنت جد وجہد لگن کے بعد وہ ڈاکٹر ہونے کا شرف حاصل کرتا ہے ،اب اس کے ذہن ودماغ پر خدمت خلق کا جذبہ سوار نہیں ہوتا ،بلکہ ایک تاجر کے خیالات سے کیفیت قلب مملو ہوتی ہے ،اور خرچ کی ہویی رقم کا حصول بھی حاشیئہ خیال میں موجود ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں >>