عبادات

قربانی: سنت ابراہیمی کی ایک عظیم یاد گار

 در اصل قربانی اس عظیم الشان سنت ابراہیمی کو زندہ کرنے اور اس یادگار لمحے کو ہمیشہ اپنے قلوب و اذہان کے اندر پیوست کرنے لیے کی جاتی ہے جسے سیدنا ابراہیم خلیل اللہ اور اسماعیل ذبیح اللہ نے کی تھی۔ انبیائے کرام کی قربانی میں امت کے لیے یہ پیغام پنہا ں ہےکہ اے مسلمانو! تم ان حسین ایام میں اپنا بھولا ہوا سبق یاد کرکےاپنے جد امجد کی سنت کو زندہ کرو،اور اگر تم اپنے رب کی رضا مندی چاہتے ہو تو اپنا مال ہی نہیں بلکہ وقت اور جان بھی اس کے راستے میں قربان کرنے کے لیے تیار رہو

مزید پڑھیں >>

کیا اللہ تعالی عرفہ کے دن آسمان دنیا پرنزول کرتا ہے؟

غیر حجاج کے لئے اس دن کا روزہ مشروع ہے جوکہ دوسال کے گناہوں کا کفارہ ہے۔ مگرلوگوں میں جویہ بات مشہور ہے کہ اللہ تعالی عرفہ کے دن آسمان دنیاپر نزول کرتا ہے یہ ثابت نہیں ہے۔ اس تعلق سے مجمع الزوائد،  ابن حبان، الترغیب والترھیب اور ابن خزیمہ وغیرہ میں ایک روایت  موجود ہے کہ اللہ تعالی یوم عرفہ کو آسمان دنیا پر نزول کرتا ہے مگر وہ روایت سندا ًضعیف ہے۔ روایت اس طرح سے ہے۔

مزید پڑھیں >>

قربانی کرنا ہر صاحبِ نصاب پر واجب و ضروری

 اسی لیے امام ابوحنیفہؒ کا مسلک یہ ہے کہ ہر صاحبِ نصاب کے ذمّے الگ الگ قربانی واجب ہے، ایک بکری سارے گھر والوں کی طرف سے کافی نہیں ہوسکتی۔ حنفیہ کی دلیل یہ ہے کہ ’قربانی‘ ایک عبادت ہے اور عبادت ہر ایک انسان پر الگ الگ فرض ہوتی ہے، عبادت میں ایک آدمی دوسرے کی طرف سے قائم مقامی نہیں کرسکتا۔

مزید پڑھیں >>

دعوت توحید اور حضرت ابراہیم علیہ السلام کی قربانیاں

 قربانی کے تعلق سے جو لوگ اللہ اور اس کے رسول  ﷺ اور قیامت پر ایمان رکھتے ہیں ان کو رسول عربی  ﷺ کی سیرت طیبہ ، آپ کی سنت ،آپ کے اسوہ حسنہ کو بھی پیش نظر رکھنا چاہئے۔ آپ  ﷺ نے مدینہ منورہ میں دس سال قیام فرمایا ۔ اس سارے عرصے میں آپ  ﷺ نے کبھی ایک مرتبہ بھی قربانی ترک نہیں فرمائی۔ حتٰی کہ دورانِ سفر بھی آپ نے قربانی کا اہتمام فرمایا ۔

مزید پڑھیں >>

قربانی کا پیغام

قربانی اللہ تعالی کی وہ عظیم عبادت ہے جس کے ہر پہلومیں انسان کے لئے کچھ نہ کچھ نصیحتیں موجود ہیں،  جس پر عمل کرکے انسان اپنے اندرونی نظام کی اصلاح کرسکتا ہے،  جب تک بندہ کے اندر قربانی کے جانور کی طرح اپنے آپ کو مٹانے کا جذبہ پیدا نہ ہو اس وقت تک وہ بارگاہِ رب العالمین میں مقبول نہیں ہوگا،

مزید پڑھیں >>

دنبے یابکری کی واجب قربانی میں شرکت کاحکم ؟

قربانی ہرصاحب نصاب پر واجب ہے حدیث شریف میں ہےکہ "جس کو وسعت ہو اور وہ اس کے باوجود قربانی نہ کرے، تو ہمارے مصلی(عیدگاہ) کے قریب بھی نہ آئے"(ابن ماجہ)، پتہ چلا کہ اگر گھر میں ایک سے زائد صاحب نصاب ہوں تو ہرشخص پر قربانی واجب ہے؛جس طرح  ہرفرض عبادت کامعاملہ ہےکہ کسی ایک کے ادا کرلینے سے ذمہ ساقط نہیں ہوتا ۔

مزید پڑھیں >>

قربانی، تفریح یا عبادت: چند حقایق اور غور طلب باتیں

آج پوری دنیا مسلمانوں کے لئے تنگ ہوتی چلی جا رہی ہے ۔ ایک زمانہ تھا کی مسلم قوم دنیا کے لئے ایک نمونہ تھی ۔ غیر مسلم حضرات اپنے معاملات بھی مسلمانوں کے پاس لایا کرتے تھے اور یہ تصور کرتے تھے یہ ہمارے درمیان انصاف کا پہلو قائم رکھیں گے لیکن آج دنیا میں مسلمانوں کی اہمیت نہیں رہ گئی۔ علامہ اقبال نے اس جذ بے کی ترجمانی کی ہے۔ 

مزید پڑھیں >>

قربانی سے آخر کیا مطلوب ہے؟

اصل قربانی تو اپنے نفس کی ہے اور جانور تو حقیقت میں ایک علامت ہے۔ ہمارے اندر یہ جذبہ ہونا چاہیے کہ قربانی کرتے وقت ہم اللہ کی طرف متوجہ ہوکر اپنے دل میں یہ کہیں کہ اے میرے رب ! یہ جانور کیا چیزہے، تیرے احکام کی پاسداری ا ور دین کی سربلندی کے لئے بندہ اپنی جان، مال اور اولاد کی ہر قربانی دینے کو تیار ہے۔ یہی وہ جذبہ ہے جو قربانی سے پیدا کرنا مطلوب ہے اوریہی وہ جذبہ تھا جس نے سیّدنا ابراہیم علیہ السلام کو اپنے پیارے بیٹے کو اللہ کی راہ میں قربان کرنے پر آمادہ کیا اور اللہ کی طرف سے آئی اس آزمائش میں کامیاب ہونے پر ہی وہ انسانیت کی امامت کے عہدہ پر سرفراز کئے گئے۔ جس کے اندر یہ جذبہ ہوگا وہ سب سے پہلے اپنے نفس کو اللہ اور اس کے رسولﷺ کے احکام کے تابع کرے گاجس کے بغیر ایمان کی تکمیل ہی ممکن نہیں.

مزید پڑھیں >>

ایصال ثواب: ایک تحقیقی مطالعہ

حاصل یہ ہے کہ کتاب و سنت اور قیاس کے ذریعہ نماز، روزہ اور تلاوت قرآن وغیرہ کے ذریعہ ایصال ثواب درست ہے اور جس طرح سے ایک مومن کی دعا اور استغفار کے ذریعہ دوسرے مومن کو فائدہ پہنچ سکتا ہے اسی طرح سے بدنی عبادات اور قربانی و صدقہ وغیرہ کے ذریعہ سے بھی میت کوفائدہ ہوسکتا ہے.

مزید پڑھیں >>