سید سعادت اللہ حسینی

سید سعادت اللہ حسینی

بابری مسجد، پرسنل لا بورڈ اور مولانا سلمان ندوی

ان واقعات سے زیادہ افسوسناک وہ گفتگو ہے جو سوشل میڈیا میں سنجیدہ دینی حلقوں میں اس کے حوالہ سے ہورہی ہے۔ خیالات پر بحث کو خیالات تک محدود رکھنے کی صلاحیت اجتماعی شعور اور بالغ نظری کی بڑی اہم علامت ہوتی ہے۔ یہ بحث اگر تیزی سے ذاتیات کی سطح پر اترنے لگے تو سمجھ لیجئے کہ ہمارا شعور ابھی بالغ نہیں ہوا ہے۔ یہ بڑے افسوس کی بات ہے کہ اس نابالغی کے مظاہرے ان دودنوں میں بہت کثرت سے ہوئے۔

مزید پڑھیں >>

تصوّر اقامت دین پر اعتراضات: ایک جائزہ

اقامتِ دین میں لفظ دین سے مراد وہ دینِ حق ہے جسے اللہ رب العالمین اپنے تمام انبیاء کے ذریعے مختلف زمانوں اور مختلف ملکوں میں بھیجتا رہا ہے اور جسے آخری اور مکمل صورت میں تمام انسانوں کے لیے اپنے آخری نبی حضرت محمدﷺ کے ذریعے نازل فرمایا، اور جو اَب دنیا میں ایک ہی مستند، محفوظ اور عنداللہ مقبول دین ہے اور جس کا نام ’اسلام‘ ہے۔

مزید پڑھیں >>

ما بعد جدیدیت کا چیلنج اور تحریکِ اسلامی (4/4)

انجینیئرسید سعادت اللہ حسینی ٹھیک یہی رد عمل پوسٹ ماڈرن ازم کے سلسلہ میں بھی اختیار کرنے کی ضرورت ہے۔ ایک طرف ان فکری چیلنجز کا مقابلہ کرناہے جو مابعد جدیدیت نے پیش کیے ہیں اور دوسری طرف تحریک کی …

مزید پڑھیں >>

ما بعد جدیدیت کا چیلنج اور تحریکِ اسلامی (2/4)

انجینیئرسید سعادت اللہ حسینی سچائی کی اضافت کا نظریہ         پوسٹ ماڈرن ازم کا خیال ہے کہ دنیا میں کسی آفاقی سچائی کا وجود نہیں ہے۔ بلکہ آفاقی سچائی کا تصور ان کے نزدیک محض ایک خیالی تصور (Utopia) ہے۔ …

مزید پڑھیں >>