متفرقات

گھریلو مسائل مرد کو ذہنی دباؤ میں مبتلا کر دیتے ہیں!

جو والدین اپنی بیٹی کو یہ تعلیم دیتے ہیں کہ تم اپنی الگ دنیا بسا کو اور ایک والدین کو اس کے بیٹے سے دور کرتے ہیں وہ یہ بھول جاتے ہیں کی کل آپ کا بھی بیٹا آپ کے ساتھ ایسا کرے تو، آپ بھی کسی بیٹے کے ماں باپ ہیں آپ اپنی بیٹی کا گھر بسانے کے لئے ایک والدین سے ان کی دنیا چھین رہے ہیں یہ بات ہمیشہ دونوں پہلو کو مدنظر رکھتے ہوئے سوچنا چاہیے کہ آج جو آپ دوسروں کے ساتھ کر رہے ہیں کل آپ کے ساتھ بھی ہو سکتا ہے

مزید پڑھیں >>

میرے والد، میرے دوست

     والد ماجد نے غیر اختیاری سنتِ نبوی کی پیروی میں تقریباً تریسٹھ سال کی عمر میں قفسِ عنصری سے پرواز کی اور پس ماندگان میں بہ شمول میرے چار اولادیں اور میری والدہ ماجدہ کو چھوڑا، جب کہ ایک بیٹے یعنی میرے بڑے بھائی خالد انصاری نے ان کی زندگی ہی میں اپنی جان جانِ آفریں کے سپرد کر دی تھی۔

مزید پڑھیں >>

شعبۂ عربی جامعہ راجوری میں پروفیسر محسن عثمانی ندوی کا فکر انگیز خطاب

آج ہم دینی مدارس کی تشکیل جدید کے لیے تیار نہیں ۔ آج ہم نصاب تعلیم میں تبدیلی کے لیے تیار نہیں ۔آج ہم اپنے اندر کسی تبدیلی کے لیے تیار نہیں لیکن اگر ہمیں اپنے آپ کو اور امت کو بچانا ہے تو ہمیں اپنے اندر تبدیلی لانی ہوگی۔ کشادہ دلی پیدا کرنی ہوگی۔ دینی تقاضوں کی فہم پیدا کرنا ہوگی۔ دوربینی ودور اندیشی پیدا کرنی ہوگی۔ مستقبل کے خطرات سے آشنا ہوکر اس کا علاج کرنا ہوکا۔

مزید پڑھیں >>

مسلم معاشرہ برائیوں کی دلدل میں: ذمہ دار کون؟

مسلم علمائے کرام اور دانشوان قوم و اساتذہ کرام اور والدین کو اس جانب توجہ دینے کی اشد ضرورت ہے۔ خصوصی طور پر میں امارت شرعیہ ، جمعیۃ علمائے ہند اور مدارس کے ذمہ داران سے گذارش کروں گاکہ وہ نقباء،محلہ کے بااثر شخصیات،اور سیاسی لوگوں کی ایک میٹنگ طلب کریں اور محلہ وار کمیٹیاں تشکیل دیں اور انہیں ہدایت دیں کہ وہ اپنے اپنے علاقہ میں معاشرہ میں سدھار کے تعلق سے مختلف میٹنگیں طلب کریں ۔

مزید پڑھیں >>

خود نمائی اور کرپشن کا ناسور

خود نمائی ایک نفسیاتی و روحانی بیماری ہے یہ افراد کو ریا کاری کی طرف بھی لے جاتی ہے۔ریا کاری گناہ ہے بلکہ یہ ایک ایسا عمل ہے جو تمام اعمال کو ضائع کرنے کا باعث بن جاتا ہے۔ خود نمائی اور ریا کاری میں بہت معمولی فرق ہے۔خود نمائی اپنی کسی خوبی، صلاحیت، دولت، عہدہ، اختیار، عمل و فعل اور مقام و مرتبت کو نمایاں کرنے کے لیے بڑھا چڑھا کر بیان کرنے کو کہتے ہیں۔

مزید پڑھیں >>

کرب ایک حقیقت کا!

وہ خاموش ہوکر کچھ دیر جیسے خلا میں کچھ دیکھتی رہی پھر بولی۔ ’’تم ہم کو بہت اچھا لگا۔ مسلم لوگ ہم کو بہت اچھا لگتا ہے۔ آخر ہمارا پیارا باپ بھی تو مسلم ہی تھا نا۔ ہم کو یہ سلوار اور شرٹ بھی اچھا لگتا ہے۔ مگر ہم اِس کو اِدھر پہن نہیں سکتا۔ اور پھر اِس نوکری میں یہ ڈریس کیسے چلے گا ؟ ‘‘

مزید پڑھیں >>

عہدے امانت ہیں ان میں خیانت نہ کریں!

آخرت میں صرف وہ لوگ سرخرو ہوں گے جنہوں نے دنیا میں اپنے منصب اور عہدوں کو امانت سمجھ کر اس کی ذمہ داریوں کوعدل و احسان کے ساتھ انجام دیا ہوگا جو کہ آسان کام نہیں ہے اور جس نے اپنی ذمہ داریوں میں خیانت کی ہوگی وہ وہاں رسوا اور ذلیل کیا جائے گا اور جہنم اس کا ٹھکانہ ہوگا۔ اس لئے اول درجہ میں تو ہمیں جاہ طلبی کے مرض سے ہی چھٹکارا حاصل کرنا چاہیے کہ اکثر اوقات یہ دنیا میں بھی آزمائش اور رسوائی کا سبب ہوجاتا ہے جیسا کہ آج کل عام طور پر دیکھنے کو ملتا ہے اور آخرت کا معاملہ تو فرائض کی انجام دہی میں کوتاہی کی صورت میں اور بھی سنگین ہے۔

مزید پڑھیں >>

مولانا سلطان احمد اصلاحیؒ کی علمی وفکری جہات پر دو روزہ سیمینار کا انعقاد

انجمن طلبہ قدیم شاخ علی گڑھ کے ذریعہ منعقدہ دو روزہ سیمینار میں حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر اشتیاق احمد ظلی نے فرمایا کہ موضوع کے انتخاب میں جدت وندرت مولانا سلطان احمد اصلاحی کے ابتکاری ذہن کا غماز ہیں ۔ آپ نے ادارہ علوم القرآن سے مولانا کے تعلق پر جذباتی انداز میں روشنی ڈالی۔

مزید پڑھیں >>

صنفی توازن کی اسلامی تشریح: مولانا سلطان احمد اصلاحی کے حوالے سے

   مولانا سلطان احمد اصلاحی نے ا پنی تحریروں کے ذریعہ ہر طرح صنفی عدم  توازن کے خلاف آواز بلند کی اور معاشرے کے اس اہم مسئلے کا اسلامی حل پیش کیا،یہ بات دیگر ہے کہ بعض اوقات ان کے یہاں فکری توسع کے عناصر کچھ زیادہ ہی ہوجاتے ہیں ،جس سے ان کا قاری کچھ دیر کے لیے حیرتی ہوجاتا ہے۔  

مزید پڑھیں >>