مشرف عالم ذوقی

مشرف عالم ذوقی
ڈاکٹر مشرف عالم ذوقی اردو کے معروف نقاد، ادیب اور فکشن نگار ہیں۔ موصوف کم و بیش تین درجن کتابوں کے مصنف ہیں۔

طلاق ثلاثہ، بابری مسجداور جلا وطن مسلمان: یہ کس مقام پر ہم کو حیات لائی ہے 

ہندوستانی سر زمین پر مستقبل کے جو مناظر میں دیکھ رہا ہوں ، وہ شاید ملی تنظیمیں ابھی بھی دیکھ نہیں رہی ہیں ..یا وہ اس خوش فہمی کی شکار ہیں کہ حالات اس سے زیادہ خراب نہیں ہو سکتے ...اب تک نشانے پر مسلمان تھے اب مذھب بھی نشانے پر آ گیا ہے ...اور مستقبل کے نام پر آئندہ جس تماشے کی شروعات ہو چکی  ہے، اس کی دہشت کو نظر انداز کرنا اپنی بربادی کو دعوت دینے جیسا ہے ..ہم ایک ایسے وائرس کا شکار ہو چکے ہیں ، جو ہمارا نام صفحۂ ہندوستان سے مٹا دینا چاہتا ہے.

مزید پڑھیں >>

مسلم مخالفت کے پردے کا اصلی کھیل کیا ہے؟

مسلمان نہ بھولیں کہ آج بھی بڑا اکثریتی طبقہ انکے ساتھ ہے . یہ وقت ہوشیاری اور دور اندیشی سے کام لینے کا ہے .ملک کے تحفظ کی ذمہ داری صرف اکثریتی طبقہ پر نہیں ڈالی جا سکتی .راجستھان اور مغربی بنگال کے انتخاب نے بہت کچھ کہہ دیا ہے ...ہم وقت کا انتظار کریں کہ وقت ہی زخموں پر مرہم رکھتا ہے ..وقت ہی فضاء سازگار بناتا ہے . وقت ہی تانا شاہوں کے قصوں کو بھولا بسرا افسانہ بنا دیتا ہے۔

مزید پڑھیں >>

30 جنوری: آج ایک مخصوص نظریہ کی حکومت نے گاندھی کو مار ڈالا 

گاندھی کے نظریات و افکار کی ایک دنیا معترف ہے .ایک وقت تھا جب ان نظریات نے عالمی سیاست کو متاثر کیا ..پھر ہم ایک ایسے عھد سے وابستہ ہو گئے جہاں ان نظریات کی چنداں ضرورت نہ تھی .گاندھی کے عھد میں بھی پہلی اور دوسری جنگ عظیم نے انسانی معاشرہ اور تھذیب و ثقافت کو داغدار کیا لیکن جنگ اور تشدد سے پیدا شدہ تباہیوں سے گاندھی نے یہ سیکھا کہ آزادی کے لئے عدم تشدد کا فلسفہ لے کر آ گئے اور حکومت برطانیہ کے ساتھ عالمی سیاست کو بھی حیران ہونا پڑا کہ وہ قیادت کی اس نیی رسم سے واقف نہیں تھی .

مزید پڑھیں >>

جمہوریت کا قتل کرنے والوں کو یوم جمہوریہ منانے کا حق نہیں 

آشرم سے نکلنے والے بلاتکاری جیلوں میں بھی عیش  کی زندگی گزارتے رہے .رام پال کو پکڑنے کے لئے پولیس کا دستہ آیا تو ایک بار پھر پورا شہر آگ کی لپٹوں میں نظر آیا .لاکھوں کروڑوں کی جاےداد اس بار بھی پھونک دی گیی -- مگر یہ لوگ زہریلے نہیں تھے .انکے جرم آتنکوادیوں جیسے نہیں تھے ..آتنک وادی تو مسلمان ہوتا ہے .جو خاموشی سے گھر میں ہوتا ہے اور اس پر مصلحت کی بندوق تان دی جاتی ہے .

مزید پڑھیں >>

کیا سپریم کورٹ کے چار جج جمہوریت کی حفاظت کر سکیں گے؟

سوال ہے، کیا ملک کے حالات، دلت اور مسلمانوں کے حالات سے ہمارے جج آگاہ نہیں ؟ کیا صرف چارجج ہی ضمیر کی عدالت میں پیش ہوئے ہیں ؟ جیسا میڈیا ہنگامہ کر رہی ہے ...یہ حقیقت ہے کہ انصاف بھی تقسیم ہوا لیکن مکمل انصاف کبھی تقسیم نہی ہو سکتا ..مسلمانوں اور دلتوں کے لئے اب انصاف ہی واحد سہارا ہے .ممکن ہے .لوہیا کیس سے امیت شاہ کو کوئی فرق نہیں پڑے لیکن یہ حقیقت ہے کہ انصاف کی چیخ سننے کے لئے ہمارے کان ترس گئے تھے۔

مزید پڑھیں >>

بابری مسجد، شری شری روی شنکر اور نیی ڈیل 

فیصلہ جو بھی ہو لیکن اس حال میں شری شری روی شنکر، آرٹ آف لیونگ کے بانی کا سہ روزہ پروگرام یاد آتا ہے، جب پروگرام کے خاتمے کے بعد دلی کا وہ حصّہ کوڑے کے ڈھیر میں تبدیل ہو گیا تھا ...اب وہ مہربان ہیں تو آگے کیا کیا ہوگا، ابھی سے سوچ کر آپکو پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے .

مزید پڑھیں >>

اندھوں کا مقبرہ، شاہی بیان اور سچ کو دفن کرنے کی تیاری 

سچ کو دفن کرنے کی خبر چھتیس گڑھ سے آی ہے .سینئر صحافی ونود ورما کو انکے گھر غازی آباد سے اس لئے گرفتار کیا گیا کہ انکے پاس چھتیس گڑھ حکومت کے وزیر راجیش مونت کی سیکس سی ڈی تھی .یہاں بھی اندھی نگری چوپٹ راجا کی مثال دی جا سکتی ہے، جس نے جرم کیا، اسے مسیحا بنایا جا رہا ہے .

مزید پڑھیں >>

محبّت اور تبلیغ کا یہ رنگ ہم ہندوستانیوں کے لئے نیا ہے!

آر ایس ایس نے مسلمانوں کو جوڑنے کی تیاری کر لی .مسلم مورچہ بھی بن گیا .ٹوپی لگاہے کچھ مسلمانوں کا ساتھ بھی مل گیا .لیکن اس لوک کہانی کا سچ اپنی جگہ ہے .دلوں کو جوڑنے والے ، ہاتھوں میں لٹھ لئے کھڑے ہیں .ان میں کویی اجمیر دھماکے کا مجرم ،کویی سمجھوتا ایکسپریس کا مجرم .ابھی یہ سارے سفید کالر والے ہیں اور ان پر ہی مسلمانوں کو قریب لانے کی ذمہ داری دی گیی ہے .ان کے جواب پہلے سے تیار ہیں .یہ وہ ہیں ،جن کی نفرت اسلام سے ہے .

مزید پڑھیں >>

یہ آخری کارواں نہیں ہے

ایک وقت اے گا جب ہماری نسل سے بیشتر نام نہیں ہونگے .کیونکہ موت ایک حقیقت ہے .لیکن لکھنے والوں کا کارواں موجود ہوگا .فیس بک ایک بڑی حقیقت ہے . فیس بک پر اچھے رسائل کا سلسلہ بھی شروع ہو چکا ہے .سبین علی اور نقاط کے مدیر نے اچھی روایت شروع کی ہے .اس سلسلے میں اہم نام ابرار مجیب کا بھی ہے .ابرار کو بھی سخت رویہ اپنانا ہوگا .تنازعات کا سلسلہ چلتا رہیگا ..لیکن اب ان نیے ناموں پر سنجیدگی سے گفتگو کرنے کا وقت آ چکا ہے ..

مزید پڑھیں >>

کیا  ہندوستان کا ہر دوسرا مسلمان طلاق ثلاثہ کا غلط استعمال کر رہا ہے؟

ابھی ضرورت یہ بیان جاری کرنے کی تھی کہ حکومت طلاق ثلاثہ کے نام پر جھوٹ پھیلانے کا سوانگ رچ رہی ہے . طلاق کا فیصد ہندوؤں میں زیادہ ہے .طلاق ثلاثہ کے بہانے حکومت مسلمانوں کو تقسیم کرنا چاہتی ہے .لیکن ایک ایسا بیان جاری ہوا جو حکومت کے منشا کے مطابق تھا .اور حکومت نے خاموشی سے ہنستے ہنستے اس بیان پر مہر لگا دی .

مزید پڑھیں >>