آئینۂ عالم

اے خدا! انسان کی تقسیم در تقسیم دیکھ

ایران میں شاید ہی کوئی ایسا گھر ہو جس کا کوئی نہ کوئی فرد اس جنگ میں ہلاک نہ ہوا ہو۔ اس کا سب سے بڑا ثبوت تہران میں واقع، 400 ہیکٹررقبے پر پھیلا ہوا "بہشت زہرا" نامی وہ قبرستان ہے جہا ں اس جنگ میں ہلاک ہونے والے بے شمار ایرانیوں کی قبریں موجود ہیں۔1988 کی جنگ بندی کے  بعدبھی  دونوں ملکوں کے عوام کے دلوں میں بد اعتمادی اور رنجشیں موجود رہیں۔ جس طرح ایران میں اسلامی انقلاب کے بعد عراق نے معزول ایرانی بادشاہ رضاپہلوی کو کچھ عرصے کے لئے اپنے ہاں پناہ دی تھی، اسی طرح  ایران نے بھی بغداد حکومت کے مخالفین، اور خاص کر شیعہ اور کرد شخصیات کو اپنے ہاں پناہ دی ۔

مزید پڑھیں >>

ترکی: اسلام دشمنی کے خلاف کامیابی پر شادمانی کا یہ منظر

حال ہی میں ہیکروں کےایک گروپ "گلوبل لیکس" نےامریکہ میں متعین متحدہ عرب امارات کے سفیر یوسف القتیبہ کے ای میل اکاؤنٹ کو ہیک کرکے ان کے ای میلس کو انٹر سپٹ، ہفنگٹن پوسٹ اور ڈیلی بیسٹ کو ارسال کردیا تھا۔ ان  میں دیگر باتوں کے علاوہ یہ بات بھی سامنے آئی کہ ترکی میں ہونے والی ناکام  بغاوت میں تعاون کرنے پر جان ہنَّا(اسرائیل نواز Foundation for Defense of Democracies (FDD) نام کے ایک تھنک ٹینک کے کاؤنسلر) نے اپنے ایک میل میں یوسف القتیبہ کا شکریہ ادا کیا ہے۔

مزید پڑھیں >>

بیرونی مداخلت کے سبب قطر تنازع کے مزید طول پکڑنے کا اندیشہ!

قطر کا بائیکاٹ کرنے والے چار عرب ممالک سعودی عرب، بحرین، مصر اور متحدہ عرب امارات نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں دوحہ کی جانب سے اپنے مطالبات مسترد کیے جانے پر اس پر عائد پابندیوں کو جاری رکھنے کے ساتھ ساتھ مزید سیاسی ، اقتصادی اور قانونی اقدامات کرنے کا اعلان کیا ہے۔یہ اقدامات کس نوعیت کے ہوں گے اس کی تفصیل نہیں بتائی گئی۔

مزید پڑھیں >>

فلسطین دہشت گرد ہے تو ہم کیا ہیں؟

فلسطین کو دہشت گرد ملک کا تمغہ دینے سے قبل اسرائیل کی بربریت اور دہشت گردی کی تاریخ پر غائرانہ نظر ڈالنے کی زحمت کرلی جاتی۔ناممکن ہے کہ میڈیا کے ذمہ دار افراد فلسطینیوں کی مزاحمت اور اسرائیلی جارحیت کی تاریخ کا علم نہ رکھتے ہوں مگر پھر بھی ہمیں ان سے حسن ظن ہے ۔

مزید پڑھیں >>

انتفاضہ فسلطین اور مسلمانان عالم

اب وقت آچکا ہے کہ تمام عالم اسلام کو چاہئے کہ بیت المقدس کے تحفظ اور مسلمانوں کے قبلہ اول کی بازیابی کے لئے قوم و ملت مذہب و مسلک کی سطح سے بلند ہوکر ایک آواز کے ساتھ اٹھ کھڑے ہوں اور امریکہ اسرائیل اور ان کے ایجنڈوں کو یہ بتا دیں کہ مسلمان بیدار ہوچکے ہیں ۔کا ش ایسا ہوجاتا تو کتنا اچھا ہوتا۔لیکن ابھی تعصب و نفرت اور مسلکی منافرت کی دھند اتنی تیز ہے کہ اس میں ہماری اصل شناخت کھوچکی ہے۔

مزید پڑھیں >>

یمن کی تباہی کا ذمہ دار کون؟

یمن کی تشویشناک صورتحال پر عالمی برادری کی خاموشی اور سعودی عرب کی دہشت گردی پر اقوام متحدہ کا غیر ذمہ دارانہ رویہ دنیا کو تباہی کی طرف لے جارہاہے ۔اگر ایسے عالمی ادارے ہی عالمی دہشت گردی پر اپنے مؤقف کی وضاحت نہیں کریں گے تو دہشت گردی کا خاتمہ نا ممکن ہے ۔

مزید پڑھیں >>

قطر کی ناکہ بندی اسلامی اقدار کے خلاف!

صدر ترکی طیب اردوگان نے سعودی عرب اور ان کے دوست ممالک جو اپنے آپ کو مسلم ممالک کی فہرست میں شامل کرتے ہیں ان کے بارے میں کہا ہے کہ ان ممالک نے اسلامی اقدار کی ذرا بھی پرواہ نہیں کی۔ رمضان جیسے مقدس مہینہ میں قطر کی ہر طرح سے ناکہ بندی کر دی تاکہ قطر کی حکومت اور اس کے شہری پریشان ہوجائیں ۔

مزید پڑھیں >>

کیا امریکہ سے سعودی بادشاہ کی دوستی راس آئے گی؟

اس وقت سعودی عرب کے بادشاہ اسی راستے پر گامزن ہیں جس راستہ پر کبھی رضا شاہ پہلوی گامزن تھے اور کبھی صدام حسین نے خراماں خراماں چل رہے تھے اور تباہی و بربادی کی منزل پر پہنچے۔ ایران آج بھی انقلاب کی وجہ سے صحیح سلامت ہے مگر عراق آج بھی ان حالات کا شکار ہے جس کو صدام نے اپنی نادانی سے پیدا کئے تھے۔

مزید پڑھیں >>

‘بسنتی’ ناچے گی!

میں نے جس عنوان کا انتخاب کیا ہے وہ بڑا دلچسپ ہے ۔لیکن اس عنوان کے لئے منتخب کیا جانے والا جملہ بڑا سطحی قسم کا ہے۔ اس کا تعلق اردوزبان کی تہذیب و تمدن کے منافی ہے۔اہل زبان کے نزدیک یہ ایک سوقیانہ جملہ ہے۔لیکن یہ جملہ اپنے مقتضائے حال کے مطابق(بسنتی ناچے گی) معنوی اعتبار سے بڑا بلیغ ہے۔ چونکہ اسے یہاں ایک تلمیحی استعارے کے طور پر استعمال کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں >>

قطر کا بائیکاٹ اور سعودی موقف پر بعض علماء کا قابل افسوس رویہ!

رمضان المبارک کے مہینے میں قطر کا بری، بحری اور فضائی حدود کا مقاطعہ اپنے آپ میں ایک غیر اخلاقی و غیر انسانی رویہ ہے. افسوس اس بات کا ہے کہ ہمیشہ کی طرح اس مسئلے کو بھی مسلکی رنگ میں رنگے کی کوشش کی جارہی ہے. اس پر طرفہ تماشا یہ کہ اپنے مسلک کی برتری ثابت کرنے کے لیے بے بنیاد الزامات تراشے جارہے ہیں جب کہ حقائق سے ان کا دور تک بھی علاقہ نہیں .

مزید پڑھیں >>