نقطہ نظر

پاکستان فرنٹ فٹ پر!

غور طلب بات یہ ہے کہ پاکستان کا پورے کا پورا مزاج جارحانہ دیکھائی دے رہا ہے ۔ پاکستان اب فرنٹ فٹ (اگلے قدم) پر کھیل رہا ہے اور اس انداز سے کھیلتے ہوئے دنیا میں اپنی کھویا ہوا مقام پانے کی کوشش بھی کر رہا ہے امید کی جاسکتی ہے کہ مثبت حکمت عملی کے ساتھ جارحانہ مزاج لے کر آگے چلیں تو کسی کو گیدڑ بھپکی دینے سے پہلے سو دفع سوچنا پڑے گا اور انشاء اللہ پاکستان بہت جلد ناصرف اپنے پیروں پر کھڑا ہوتا دیکھائی دیگا بلکہ خطے میں اپنا اثر و رسوخ بھی منوا لے گا۔

مزید پڑھیں >>

آر ایس ایس انگریزوں کا وارث!

بھارت میں دنگے فسادات برپا کرنے میں اس تنظیم کا نام سر فہرت ہے۔ 1927ء کا ناگپور فساد ان میں اہم اور اول ہے۔ 1948ء کو اس تنظیم کے ایک رکن ناتھورام ونائک گوڑسے نے مہاتما گاندھی کو قتل کر دیا۔ 1969ء کو احمد آباد فساد ، 1971ء کو تلشیری فساد اور 1979ء کو بہار کے جمشید پور فرقہ وارانہ فساد میں ملوث رہی۔ 6 دسمبر 1992ء کو اس تنظیم کے اراکین (کارسیوک) نے بابری مسجد میں گھس کر اس کو منہدم کر دی۔

مزید پڑھیں >>

ایک اور کلین چٹ

آخر کب یہ طے کیا جائے گا کہ ہماری اس حالت کے ذمے دار کون ہیں ؟ہم کب مل بیٹھ کر اپنی آئندہ حکمت عملی طے کریں گے؟ ہم بھی متعدد بار لکھ چکے ہیں اور دیگر لکھاری بھی کہ آج کا دور میڈیا کادور ہے۔ اب جنگیں میدان جنگ میں کم اور میڈیا میں زیادہ  لڑی جاتی ہیں۔ ہندی اور انگریزی میں ہمارے اخبارات اور ٹی وی چینل کیوں نہیں ہیں ؟

مزید پڑھیں >>

نئے سال کی آمد سرد مہری کی نذر!

وقت کے گزرنے، سورج چاند کے گردش کرنے اور روز و شب کے مسلسل سفر کرنے نے، ایک اور سال کی مسافت طے کرلی اور ماہ "ذی الحجہ" کو عبور کرتے ہی ہم 1438ھ  سے 1439ھ میں داخل ہوگئے؛ لیکن نا تو کسی نے مبارکبادی پیش کرنے میں سخاوت دکھائی، نا ہی ”ہیپی نیو ایئر“ کی صدا کاری میں گرم جوشی کا مظاہرہ کیا؛ نا تو کسی کو سالِ نو کی آمد کے انتظار میں بے چین و بے قرار  پایا اور نا ہی کسی کی پیشانی پر وہ شوخی نظر آئی؛ جو عموما عیسوی سال نو کے موقع پر دیکھی جاتی ہے ـ

مزید پڑھیں >>

ہندوستان میں بڑھتی اور پاکستان میں کم ہوتی شدت پسندی

پاکستان دھیرے دھیرے ہی سہی، اپنی شدت پسندی کی شناخت سے ابھرنے کی سعی کررہا ہے ۔اسے اب بھی ایک طویل سفر درکار ہے لیکن اس بات میں اب شک نہیں رہا کہ پاکستان کو شدت پسندی کے نقصانات کا مکمل نہیں تو، کافی حد تک ادراک بہر حال ہوچکا ہے ۔ دوسری طرف ہمارے ملک میںگزشتہ تین سال سےسماج میں شدت پسندی اپنی گرفت مضبوط کر رہی ہے ۔ 

مزید پڑھیں >>

مذہب پر سیاست کی سواری

اب اگر جس دن عید ہے اسی دن دیوالی آجائے تو کسی کو کیا فرق پڑے گا؟ یہ تو ایسے ہی ہے جیسے ایک ہی سڑک پر دو باراتیں آرہی ہیں یا جارہی ہیں ان میں ایک ہندو کی ہے دوسری مسلمان کی تو دونوں میں کبھی ٹکرائو کی بات سننے میں نہیں آئی کیونکہ ایک دوسرے کی شادی سے کسی کو کیا تکلیف ہے؟

مزید پڑھیں >>

رویش جی! آپ کو کیا چیز ڈراتی ہے؟

ان دِنوں رویش کمار (پیدائش 5 دسمبر 1974ء ) مشرقی چمپارن بہار سے تعلق رکھنے والے این ڈی ٹی وی سے وابستہ معروف صحافی اور ٹی وی اینکر کو دھمکی دی جا رہی ہے، کہ وہ سیکولرازم کی بقا، اقلیتوں اور پچھڑے طبقات، جن کے بارے میں کوئی بات نہیں کرتا، کی آواز اٹھاتے ہیں۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ رویش کمار فی زمانہ ایک حق گو اور بے باک صحافی کے طور پر سامنے آئے ہیں۔

مزید پڑھیں >>

پھونک پھونک کر قدم رکھنا ہوگا!

اس وقت سوشل میڈیا پر تقریباً70 فیصد وقت محض حرام، لغو اور فضول امور کیلئے مختص ہے۔ عورتوں میں بے راہ روی کو عام کرنے کیلئے مقابلہ حسن، بچوں کے ذہنوں کو متاثر کرنے کیلئے کارٹون‘ فلمیں اور گیمس۔برائیوں کو مزید فروغ دینے کیلئے فلمی ستاروں کو آشکار اور بہترین ادا کاری کے ایوارڈ‘ اسی طرح کھیل عام کرنے کیلئے بڑی بڑی انعامات وغیرہ پیش کئے جاتے ہیں ,یہ یہود و نصاریٰ کی شرارتیں تھیں غرضیکہ ذرائع ابلاغ فکرِ اسلامی ہی نہیں بل کہ انسان کو ہلاک و برباد کرنے کیلئے، اس وقت ’بہترین آلہ ‘ہے اور ہر طرح کے ذرائع ابلاغ پر مکمل رسوخ یہود و نصاریٰ کو حاصل ہے۔

مزید پڑھیں >>

بدھ ازم کا زوال!

آج برما لبرل ریاست ہے اور اس کو دین و مذہب سے کوئی سروکار نہیں لیکن اگر یہ ملک بدھ ازم کی ریاست بن گیا تو تم اس ملک میں غیر محفوظ ہوجائو گے تمہارا کاروبار اور مان و دولت اور عزت و عصمت سب کچھ چھن جائے گا اور اس وقت آپ کی مدد کرنے کو کوئی تیار نہ ہوگا

مزید پڑھیں >>

اہل امریکہ کومبارک ہو

مسلمان دہشتگردنہیں مظلوم ہیں، برماکی صورتحال دنیاکے سامنے ہے کس طرح مسلمانوں کوکاٹاجارہاہے، بے ضمیرنام نہاد انسانی حقوق کے ترجمان مسلمانوں پرہوتاظلم دیکھ خاموش ہے تودوسرے جانب مظلوم مسلمانوں ہی کودہشتگردثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے۔ آخرمیں اہل امریکہ کوایک جاہل کوصدر منتخب کرنے پرایک بار پھرمبارکباد پیش کرتاہوں  

مزید پڑھیں >>