تصوف

ایمان کے سورج

یہی وہ لو گ ہیں جو خدا اور اُس کی مخلوق سے حقیقی پیا ر کر تے ہیں۔ یہ دلوں کو جو ڑنے والے ہو تے ہیں با دشاہ وقت اکثر اِن خاک نشینوں کے در پر دامن مراد پھیلا تے نظر آتے ہیں، لیکن انہوں نے کبھی مڑ کر بھی قصر مر مر کی طرف نہیں دیکھا۔ ولی وہ نہیں جسے لوگ ولی مانیں بلکہ ولی وہ ہو تا ہے، جسے مالک کائنات اپنا دوست قرار دے۔ بہت بڑے اہل حق با یزید بسطامی ؒ کہا کر تے تھے مر نے کے بعد جب قبر میں منکر نکیر پو چھیں گے کہ بتا ئو تمہا را خدا کون ہے، تو میں صرف ایک با ت کہوں گا کہ پہلے میرے خدا سے پو چھو کہ وہ مجھے اپنا بند ہ قرار دیتا ہے کہ نہیں۔ میرے ربی اللہ کہہ دینے سے تو کچھ نہیں ہو گا۔ یہی ہیں وہ ایمان کے سورج جن کی روشنی سے قیا مت تک لوگ ایمان کی روشنی پا تے رہیں گے ۔

مزید پڑھیں >>

روحانیت سے بدل سکتی ہے انسانی وسماجی زندگی

راجستھان۔آبوروڈ سروہی ضلع کے شانتی ون میں چار روزہ بین الاقوامی کانفرنس مائونٹ آبو کو روحانی شہر بنائے جانے کی قرار داد کے ساتھ اختتام پذیر ہوئی۔ کانفرنس کاانعقاد پرجاپتی برہما کماری ایشوریہ وشوودیالیہ نے اپنی 80 ویں سالگرہ کے موقع پر کیا تھا۔ اس میں ملک بیرون ملک کے 25 ہزار سے زیادہ برہما کماری کے ممبران نے شرکت کی۔ برہما کماری اکیلا ادارہ ہے جو خواتین کے ذریعہ چلایا جاتا ہے۔ اس کی منتظمہ راج یوگنی دادی جانکی102 سال کی ہیں ۔ برہما کماری کے 135 ممالک میں 8500 سے زیادہ مراکز کام کررہے ہیں ۔ دس لاکھ سے زیادہ لوگ اس سے فائدہ اٹھارہے ہیں ۔

مزید پڑھیں >>

ہندوستان کی دینی جماعتوں کاالگ الگ نصب العین؟

شکرخاص طورپرہمارے اوپراس لئے واجب ہے کہ خداہی نے فرشتوں کوحکم دیاکہ وہ آدم کوسجدہ کریں ۔ اس موقع پرشیطان نے جوکرداراداکیاوہ یہ تھاکہ اس نے تکبّراورخودپسندی کی بناپرخداکاحکم نہ مانااورآدم کوسجدہ نہ کیا۔ اب ہم نمازکوترک کردیں توہمارایہ کفرشیطان کے کفرسے تین لحاظ سے زیادہ ہوگا۔ ایک اس لئے کہ نمازہی ہماری فطرت ہے ۔ دوسرے اس لئے کہ ہم نے خداسے اس کی عبادت کرنے کاعہدکررکھاہے ۔اورتیسرے اس لئے کہ خداکاشکراداکرنا ہمارے اوپراس لئے واجب ہے کہ اس نے ہمیں فرشتوں سے سجدہ کروایا۔‘‘

مزید پڑھیں >>

صوفیانہ زندگی کا ایک ورق

عبادات اور ذکر و اذکار پر مداومت کا عمل بھی قرآن و سنت سے ماخوذ ہے، خانقاہی زندگی کیلئے ارباب سلوک کی خاطر جو دس آداب مقرر کئے گئے ہیں ان میں سے ہر ادب قرآن کی ایک ایک آیت سے ماخوذ ہے اور ہر ادب کیلئے قرآن کی متعلقہ آیت نقل بھی کی گئی ہے۔

مزید پڑھیں >>

تصوف

تصوف اوررہبانیت میں فرق یہ ہے کہ راہبانیت میں انسان دنیاکو مستقل طورپرچھوڑ کر پہاڑوں یاجنگلوں میں جاکرالگ تھلگ عبادت میں مصروف ہوجاتاہے ۔تصوف دنیا چھوڑنے کی اجازت نہیں دیتابلکہ دنیاکے سارے معاملات کوطے کرنے کے ساتھ ساتھ اﷲتعالی اور اس کے رسولﷺ کے حقوق بھی پورے کرنے کی تاکید کرتاہے۔

مزید پڑھیں >>

صوفی خواتین کا تذکرہ : ایک تعارف ( آخری قسظ)

(یعنی ابو عبد الرحمن السلمیؒ کی کتاب ذکر النسوۃ المتعبدات الصوفیات پر ایک نظر) ڈاکٹر مفتی محمد مشتاق تجاروی حضرت رابعہ بصریہ پر مستقل کتابیں موجود ہیں۔ اردو، عربی اور انگریزی میں کئی تحقیقی کتابیں لکھی گئیں ۔ لیکن ان …

مزید پڑھیں >>

صوفی خواتین کا تذکرہ : ایک تعارف ( دوسری قسط)

(یعنی ابو عبد الرحمن السلمیؒ کی کتاب ذکر النسوۃ المتعبدات الصوفیات پر ایک نظر) ڈاکٹر مفتی محمد مشتاق تجاروی صوفی خواتین کی خدمات کا ایک خاص پہلو ان کا وعظ و نصیحت اور درس و تدریس رہاہے۔سلمیؒ نے ایسی متعدد …

مزید پڑھیں >>

صوفی خواتین کا تذکرہ : ایک تعارف ( پہلی قسط)

(یعنی ابو عبد الرحمن السلمیؒ کی کتاب ذکر النسوۃ المتعبدات الصوفیات پر ایک نظر) ڈاکٹر مفتی محمد مشتاق تجاروی ایک مشہور صوفی کا قول ہے کہ ـــ’’پہلے تصوف ایک بے نام حقیقت تھا، مگر آج حقیقت سے خالی محض ایک …

مزید پڑھیں >>

مجدد الف ثانی اور تصوف

اسامہ شعیب علیگ شیخ احمد سرہندی نے جس عہد میں آنکھیں کھولیں،اس وقت ہندوستان میں اگرچہ مسلمانوں کی حکومت تھی اور اکبر بادشاہ تھا لیکن مسلمان اسلام سے دور،اللہ تعالی کے احکام و شریعت سے غافل تھے۔اسی دوران اکبر نے …

مزید پڑھیں >>